ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

سال 2021 کیلئے حج عمل کا اکتوبر یا نومبر سے باقاعدہ آغاز ہوگا : مختار عباس نقوی

مختار عباس نقوی نے بتایا کہ حج کمیٹی آف انڈیا نے سو فیصد ڈیجیٹل حج کیا ہے ، جس سے کافی آسانیاں پیدا ہوئی ہیں اور یہی وجہ ہے کہ ہم عازمین کے پیسوں کی واپسی کو ممکن بنا چکے ہیں اور تمام عازمین کی رقومات واپس کی جاچکی ہے۔

  • Share this:
سال 2021 کیلئے حج عمل کا اکتوبر یا نومبر سے باقاعدہ آغاز ہوگا : مختار عباس نقوی
سال 2021 کیلئے حج عمل کا اکتوبر یا نومبر سے باقاعدہ آغاز ہوگا : مختار عباس نقوی

ممبئی : ہندوستان میں آئندہ سال کیلئے حج کے عمل کا اکتوبر یا نومبر سے باقاعدہ آغازہوگا کیونکہ امسال کورونا وائرس کے  سبب مسلمان حج کی سعادت سے محروم رہ گئے تھے لیکن آئندہ سال یہ سعادت ضرور حاصل ہوگی اور اس کیلئے ہندوستانی سرکار اور اقلیتی امور نے تیاریاں بھی شروع کر رکھی ہیں ۔ آئندہ سال کے حج کے آپریشن کے طو رپر حجاج کرام کا فارم پر کرنا اور دیگر مرحلہ وار کاموں کا آغاز کر دیا جائے گا ۔ یہ خوشخبری آج یہاں حج ہاؤس میں منعقدہ افسران کی ایک اہم نشست میں مرکزی وزیر اقلیتی امور مختار عباس نقوی نے دی ہے ۔


انہوں نے کہا کہ کورونا وبا کے سبب پورے عالم کے مسلمان سفر حج سے قاصر رہے تھے اور ہندوستان بھی اس میں شامل تھا ، لیکن سفر حج منسوخ ہونے کے بعد عازمین حج کی رقومات کی ادائیگی ڈیجیٹل طریقے سے کی گئی ہے ۔ حج کمیٹی آف انڈیا نے عازمین حج کے 21 سو کروڑ روپے سے زائد رقومات واپس کر دی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ نظام حج کو ڈیجیٹل بنانے کی وجہ سے یہ فائدہ ہوا ہے کہ آن لائن رقومات کی منتقلی کا عمل آسان ہوا اور عازمین کو اپنی رقومات جلد از جلد واپس مل گئی ہے۔ ہم نے گزشتہ تین برسوں میں سعودی سرکار سے حج کی بقایا رقومات اور کورونا کے سبب حج کی منسوخی پر علاحدہ چارج و دیگر مد میں صرف ہونے والی رقومات کو آن لائن منتقلی کے  توسط سے واپس کی ہے۔ سعودی سرکار نے تقریبا 100 کروڑ روپئے واپسی کی درخواست کو قبول کی ہے اور اسے بھی آن لائن منتقل کیا جائیگا کیونکہ یہ رقم لازمی طور پر نقل و حمل و دیگر اخراجات کیلئے سعودی انتظامیہ وصول کرتی تھی ۔ لیکن امسال حج نہیں ہوسکا ، اس لئے یہ رقم بھی واپس کی جائے گی ۔


مختار عباس نقوی نے بتایا کہ حج کمیٹی آف انڈیا نے سو فیصد ڈیجیٹل حج کیا ہے ، جس سے کافی آسانیاں پیدا ہوئی ہیں اور یہی وجہ ہے کہ ہم عازمین کے پیسوں کی واپسی کو ممکن بنا چکے ہیں اور تمام عازمین کی رقومات واپس کی جاچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نئی ممبئی میں نیا ہوائی اڈہ تیار ہوا ہے اس لئے حج کمیٹی آف انڈیا کیلئے وزارت اقلیتی امور نے مہاراشٹر سرکار سے سفارش کی تھی کہ اس حج ہاؤس کی تعمیر کیلئے زمین مہیا کروائی جائے جس پر مہاراشٹر سرکار محکمہ ترقیات و تعمیر نے 3 ہزار اسکوائر میٹر جگہ فراہم کی ہے ، جس پر عالیشان حج ہاؤس کی تعمیر ہوگی اور اس میں عازمین کے قیام و طعام کے نظم کے ساتھ قومی یکجہتی اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی تقریبات کیلئے اس کا استعمال ہوگا۔


حج کمیٹی آف انڈیا نے عازمین حج کے 21 سو کروڑ روپے سے زائد رقومات واپس کر دی ہیں ۔
حج کمیٹی آف انڈیا نے عازمین حج کے 21 سو کروڑ روپے سے زائد رقومات واپس کر دی ہیں ۔


حج سبسڈی کے خاتمہ کا تذکرہ کر تے ہوئے مختار عباس نقوی نے ایک مرتبہ پھر حج سبسڈی کو ایک دھوکہ اور بدنامی قرار دیا اور کہا کہ حج سبسڈی کے خاتمہ کے بعد بھی عازمین پر کوئی اضافی بوجھ نہیں پڑا ۔ بلکہ حج سستا ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے حج پر سے غیر ضروری اخراجات کو ختم کیا جس کی وجہ سے حج سستا ہوا ہے۔  مختار عباس نقوی نے یہاں ممبئی میں حج کمیٹی آف انڈیا  میں حج آپریشن سے متعلق تیاریوں کا بھی جائزہ لیا اور ساتھ ہی افسران سے میٹنگ کی ۔ انہوں نے کہا کہ جلد ہی آئندہ سال کے حج آپریشن سے متعلق ایک اہم میٹنگ بھی دلی میں منعقد ہوگی،  جس میں آئندہ کے لائحہ عمل اور تیاریوں سے متعلق فیصلہ لیا جائیگا۔

وزیر اقلیتی امور نے یہ واضح کیا ہے کہ آئندہ سال سفر حج کے کیا رہنما اصول مرتب کئے جائیں گے ، یہ سعودی انتظامیہ ہی طے کرے گی اور اب تک یہ طے نہیں کیا گیا ہے کہ آئندہ سال کتنے عازمین حج سفرحج پر جاسکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی سرکار اور وزیر حج عمرہ کا آغاز کر رہے ہیں ، اس لئے حج سے متعلق بھی ان سے گفتگو جاری ہے ۔ اس کے علاوہ سعودی کے سفیروں کے ساتھ بھی ہماری گفت و شنید ہوئی ہے آن لائن حج فارم پر کرنے کا آغاز باضابطہ طور پر اکتوبر یا نومبر میں ہوگا اس کیلئے تمام ریاستی حج کمیٹیوں کے افسران سے بھی میٹنگ ہوچکی ہے۔ انہوں نے حج کمیٹی کے سی ای او مقصود خان کی کارگزاریوں کی بھی ستائش کی اور کہا کہ ان کی کاوشوں کے سبب ڈیجیٹل حج کی سہولت میں کافی مدد ملی ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Sep 26, 2020 11:59 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading