உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اسمبلی انتخابات 2018: مودی کے لئے بڑا چیلنج بن گئے ہیں راہل گاندھی، ہوسکتے ہیں وزیراعظم امیدوار: ہاردک پٹیل

    پاٹيدار ریزرویشن تحریک ( پاس ) کے لیڈر ہاردک پٹیل: فائل فوٹو۔

    پاٹيدار ریزرویشن تحریک ( پاس ) کے لیڈر ہاردک پٹیل: فائل فوٹو۔

    ہاردک پٹیل نے مدھیہ پردیش، چھتیس گڑھ اورراجستھان میں اکثریت کی طرف بڑھ رہی کانگریس پارٹی کے صدرراہل گاندھی کو وزیراعظم عہدے کا مضبوط چہرہ بتایا ہے۔

    • Share this:
      گجرات کے پاٹیداروں کے لیڈر ہاردک پٹیل نے مدھیہ پردیش، چھتیس گڑھ اورراجستھان میں اکثریت کی طرف بڑھ رہی کانگریس پارٹی کے صدرراہل گاندھی کو وزیراعظم عہدے کا مضبوط چہرہ بتایا ہے۔ پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات کے نتائج میں بی جے پی کی خراب کارکردگی کے بعد ہاردک پٹیل نے کہا کہ کانگریس ملک میں مضبوطی سے آگے بڑھ رہی ہے۔

      ہاردک پٹیل نے مزید کہا کہ وزیراعظم نریندرمودی کے سامنے راہل گاندھی اب ایک مضبوط چیلنج کے طورپرسامنے آئے ہیں۔ یہ نتائج 2019 کا سیمی فائنل ہیں اوراس کا اثرلوک سبھا الیکشن میں بھی ہوگا۔

      واضح رہے کہ ووٹوں کی گنتی ابھی جاری ہے اورمدھیہ پردیش میں دونوں پارٹیاں ایک دوسرے کو سخت ٹکردے رہی ہیں۔ ایسی 30 سیٹیں ہیں جن میں ٹاپ-2 امیدواروں کے درمیان ووٹوں کا فرق 1000 سے بھی کم ہے۔ ایسی 17 سیٹوں پرکانگریس آگے ہے جبکہ 13 سیٹوں پربی جے پی آگے چل رہی ہے۔ 36 ایسی سیٹوں پربی جے پی آگے چل رہی ہے، جہاں ووٹوں کا فرق 2000 سے بھی کم ہے جبکہ کانگریس بھی اتنے ہی فرق والی 30 سیٹوں پرآگے چل رہی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:  تلنگانہ اسمبلی انتخابات نتائج 2018: اکبرالدین اویسی مسلسل پانچویں بارپہنچے اسمبلی، اپنی تقریروں سے تنازعات کا ہوجاتے ہیں شکار

      یہ بھی پڑھیں:   مدھیہ پردیش: سماجوادی پارٹی کرے گی کانگریس کی حمایت: رام گوپال

      یہ بھی پڑھیں:  انتخابی نتائج کے رجحانات پر بولیں ممتا،’ سیمی فائنل‘ میں بی جے پی کہیں نہیں نظر آتی
      First published: