ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

منشیات کے جھوٹے معاملے میں پھنسے شوہر۔بیوی بچی کے ساتھ اپنے گھر ممبئی پہنچے

ممبئی کے اونیبہ قریشی اور شارق دو سال بعد قطر سے ممبئی اپنے گھر پہنچے۔ یہ جوڑا اپنی چھوٹی سی بچی کو لے کر ممبئی ایئر پورٹ پر پہنچا۔

  • Share this:
منشیات کے جھوٹے معاملے میں پھنسے شوہر۔بیوی بچی کے ساتھ اپنے گھر ممبئی پہنچے
ممبئی کے اونیبہ قریشی اور شارق دو سال بعد قطر سے ممبئی اپنے گھر پہنچے۔ یہ جوڑا اپنی چھوٹی سی بچی کو لے کر ممبئی ایئر پورٹ پر پہنچا۔

ممبئی: قطر میں ہنی مون منانے کے لئے گئے اور مشیات کے معاملے میں بلی کابکرا بن گئے۔ ممبئی کے اونیبہ قریشی اور شارق دو سال بعد قطر سے ممبئی اپنے گھر پہنچے۔ یہ جوڑا اپنی چھوٹی سی بچی کو لے کر ممبئی ایئر پورٹ پر پہنچا۔ جولائی 2019 میں اس جوڑے کو حماد انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر 4.1 کلوگرام منشیات کے ساتھ گرفتار کیا تھا۔ این سی بی کی کوششوں کے بعد یہ بات سامنے آئی کہ شارق کی خالہ تبسم قریشی نے انہیں منشیات کی اسمگلنگ کے لئے استعمال کیا تھا۔ تبسم نے ہی ان کے سفر کابندو بست کیا تھا۔


اس واقعہ کے وقت شارق ایک جاپان کی کمپنی میں ملازمت کر رہا تھا اور اسی دوران اونیبہ کو اپنے حاملہ ہونے کا پتہ چلا۔ اونیبہ نے پچھلے سال فروری میں جیل میں بیٹی آیت کو جنم دیا تھا۔ اس جوڑے کے اہل خانہ نے ہندوستانی حکومت سے رجوع کیا اور اس معاملے میں مداخلت کرنے کی مانگ کی تھی۔ اس کے بعد این سی بی نے قطر میں حکام سے رابطہ کیا۔ جوڑے نے نچلی عدالت کے فیصلے کو چیلنج کیا۔ آخر میں ان کو تمام الزامات سے بری کردیا گیا۔ قطر میں ہنی مون پر جانے کا تجربہ اتنا بھیانک ہوگا اونیبہ اور شارق نے کبھی اس کا تصور بھی نہیں کیا ہوگا۔ نارکوٹیکس کنٹرول بیورو کی کوششوں کے بعد تین فروری کودونوں کو بے گناہ چھوڑ دیا گیا۔




این سی بی نے پوری چھان بین کرنے کے بعد جو ثبوت ملے تھے اس کو قطر کی عدالت کے سامنے رکھےجس کے بعد قطر کی عدالت نے دونوں کو بےگناہ تسلیم کیااور انہیں جیل سے رہا کرنے کا حکم دیا۔



واضح رہے کہ جولائی 2019 میں ممبئی کے ایک جوڑے کو فریب کے جال میں پھنسا کر ہنی مون پیکیج کے نام پر قطر بھیجا گیا تھا۔ اسے ایک بیگ دیا گیا جس میں منشیات تھی لیکن وہ منشیات کے بارے میں لا علم تھے جب یہ جوڑا قطر ائیرپورٹ پہنچا تو انہیں منشیات کے ساتھ گرفتار کیا گیا۔ ان کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا۔ مقدمہ چلا اور قطر کی عدالت نے 10 سال قید کی سزا اور جرمانہ عائد کیا تھا۔ یہاں ہندوستان میں کپل کے اہل خانہ نے نارکوٹکس کنٹرول بیورو (NCB ) سے رجوع کیا۔ جب نارکوٹکس کنٹرول بیورو نے مقدمہ درج کرکے اس معاملے کی تفتیش کی تو یہ بات واضح ہوگئی کہ یہ دونوں بے قصور ہیں اور انھیں اس کیس میں جھوٹے طور پر پھنسایا گیا تھا۔
Published by: Sana Naeem
First published: Apr 15, 2021 08:46 PM IST