ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

درخت کاٹنے کے دوران بندروں نے 35 سے زائد افراد کے ساتھ کر ڈالا کچھ ایسا، دیکھ کر سبھی کے اڑے ہوش

ایک بندر نے ایک دو نہیں بلکہ 35 سے زیادہ افراد کو شدید زخمی کردیا ، بندر نے اس طرح سے لوگوں کو زخمی کردیا کہ سب لوگوں کو علاج کے لئے اسپتال جانا پڑا ۔

  • Share this:
درخت کاٹنے کے دوران بندروں  نے 35 سے زائد افراد کے ساتھ کر ڈالا کچھ ایسا، دیکھ کر سبھی کے اڑے ہوش
ایک بندر نے ایک دو نہیں بلکہ 35 سے زیادہ افراد کو شدید زخمی کردیا ، بندر نے اس طرح سے لوگوں کو زخمی کردیا کہ سب لوگوں کو علاج کے لئے اسپتال جانا پڑا ۔

ایک بندر نے ایک دو نہیں بلکہ 35 سے زیادہ افراد کو شدید زخمی کردیا ، بندر نے اس طرح سے لوگوں کو زخمی کردیا کہ سب لوگوں کو علاج کے لئے اسپتال جانا پڑا ۔ بندروں نے جس طرح سے حملہ کیا ہے اس کو دیکھ کر آپ تصور بھی نہیں کرسکتے ہیں کہ یہ حملہ کتنا شدید تھا۔ در اصل ممبئی کے مرول علاقے میں آرے روڈ پر میٹرو 3 کا کام جاری ہے اور اس کام کے تحت 9 ماہ قبل میٹرو میں کام کرنے والے ملازمین کی جانب سے آرے میں کچھ درخت کاٹے گئے تھے۔ انہیں درختوں پر بندر رہا کر تے تھے۔


دراصل چار بندروں کی ٹولی تھی جیسے ہی درخت کاٹے گئے بندروں کی ٹولی اچانک میٹرو ملازمین پر حملہ کر دیا۔ خاص طور پر جے سی بی چلانے والے ڈرائیور زد میں آ گیا۔ بندر ٹوپی پہنے نظر آنے والے ملازم پر حملہ کر دیتےہیں۔ خاص طور پر ممبئی کا سبر بن علاقہ اندھری ایم آئی ڈی سی، مرول ، سا کی ناکہ اور چکالہ کے علاقوں میں ان بندروں نے دہشت پیدا کر دی ہے۔ ان میں سے ایک بندر کو 16 مارچ کو پکڑا گیا تھا اس بندر کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ بندروں کا سردار ہے۔ بندر بوریولی نیشنل پارک وائلڈ لائف ریسکیو ٹیم کے قبضے میں ہے۔




گزشتہ 9 مہینوں سے بندروں کی دہشت بنی ہوئی تھی جو لوگوں کو مستقل طور پر زخمی کررہے تھے ، جس بندر کو پکڑا گیا ہے معلومات کے مطابق اس بندر کو فٹنس سرٹیفکیٹ ملنے کے بعد جنگل میں چھوڑا جائے گا اس وقت تک پنجرے میں رکھا گیا ہے۔ بوریولی نیشنل پارک کی ٹیم کے ساتھ ساتھ ممبئی کے مانخورد کے علاقے وائلڈ لائف اینیمل پروٹیکشن اینڈ ریسکیو ایسوسی ایشن کی ٹیم گذشتہ 9 ماہ سے اس بندر کی تلاش کررہی تھی۔
Published by: Sana Naeem
First published: Mar 21, 2021 02:46 PM IST