உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یہ جگہ پاکستان بن گئی ہے، تم سب بھاگ جاؤ! کہہ کر دھمکانے والے وکیل کو راجکوٹ پولیس نے کیا گرفتار

     لوگوں نے احتجاج کیا تو مبینہ طور پر دھمکی دیتے ہوا کہا کہ یہ ملک پاکستان (Pakistan)  بن گیا ہے، تم سب یہاں سے بھاگ جاؤ۔ ہنگامہ آرائی کے بعد پولیس آئی تو انہوں نے پولیس اہلکار کے ساتھ بھی بدتمیزی کی۔

    لوگوں نے احتجاج کیا تو مبینہ طور پر دھمکی دیتے ہوا کہا کہ یہ ملک پاکستان (Pakistan) بن گیا ہے، تم سب یہاں سے بھاگ جاؤ۔ ہنگامہ آرائی کے بعد پولیس آئی تو انہوں نے پولیس اہلکار کے ساتھ بھی بدتمیزی کی۔

    لوگوں نے احتجاج کیا تو مبینہ طور پر دھمکی دیتے ہوا کہا کہ یہ ملک پاکستان (Pakistan) بن گیا ہے، تم سب یہاں سے بھاگ جاؤ۔ ہنگامہ آرائی کے بعد پولیس آئی تو انہوں نے پولیس اہلکار کے ساتھ بھی بدتمیزی کی۔

    • Share this:
      راجکوٹ: کرناٹک میں حجاب کے تنازع (hijab row)  سے گرمائے ماحول کے درمیان گجرات (Gujarat)  پولیس نے ایک وکیل کو گرفتار کر کیا ہے۔ ان پر مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچانے، ہنگامہ آرائی کرنے اور پولیس کے کام میں رکاوٹ ڈالنے کا الزام ہے۔ انہوں نے واٹس ایپ گروپ پر شیواجی مہاراج کے حوالے سے قابل اعتراض پوسٹ ڈالی تھی۔ لوگوں نے احتجاج کیا تو مبینہ طور پر دھمکی دیتے ہوا کہا کہ یہ ملک پاکستان (Pakistan)  بن گیا ہے، تم سب یہاں سے بھاگ جاؤ۔ ہنگامہ آرائی کے بعد پولیس آئی تو انہوں نے پولیس اہلکار کے ساتھ بھی بدتمیزی کی۔

      معاملہ راجکوٹ کے مونجکا میں شیاما پرساد مکھرجی نگر ہاؤسنگ سوسائٹی کا ہے۔ سہیل حسین مور نامی وکیل نے شیواجی جینتی کے دن سوسائٹی کے واٹس ایپ گروپ میں ایک پوسٹ ڈالی تھی۔ اس میں شیواجی مہاراج کے بارے میں قابل اعتراض باتیں لکھی گئی تھیں۔ سوسائٹی میں رہنے والی ایک خاتون سدھا نے اس بارے میں سمجھانے کے لیے سہیل کو فون کیا۔ لیکن سہیل اس سے بکواس کرنے لگا۔ انہوں نے کہا کہ یہ جگہ اب پاکستان بن چکی ہے، یہاں سب مسلمان ہیں اور تم سب یہاں سے بھاگ جاؤ۔ انہوں نے کہا کہ یہ پوسٹ میں نے ڈالی ہے میں اسے نہیں ہٹاؤں گا۔ خاتون نے یہ تمام باتیں ریکارڈ کرلیں۔

      نیوز 18 گجراتی نے خبر میں بتایا ہے کہ سہیل نے غصے میں سدھا سے کہا کہ اگر وہ بات کرنا چاہتی ہے تو اس کے یہاں آجاؤ۔ سدھا وکیل سے بات کرنے اس کے فلیٹ پہنچ گئی۔ الزام ہے کہ اس دوران سہیل نے اشتعال انگیز الفاظ کا استعمال کیا اور خاتون کو جان سے مارنے کی دھمکی بھی دی۔ ہنگامہ برپا کرتے ہوئے گنیش کی تصویر بھی توڑ دی گئی۔

      ہنگامہ بڑھتا دیکھ کر لوگوں نے پولیس کو اطلاع دے دی۔ ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق کانسٹیبل راوت ڈانگر نے سہیل کو سمجھانے کی کوشش کی لیکن سہیل نے مبینہ طور پر انہیں مارا پیٹا، گالیاں بھی دیں۔ اس کے بعد ڈانگر کی شکایت پر سہیل کے خلاف اتوار کی رات دفعہ 295، 295 (اے)، 504، 135،
      Published by:Sana Naeem
      First published: