ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

مہاراشٹر: راجیہ سبھا میں شہریت ترمیمی بل منظور، مخالفت میں آئی جی پی عبدالرحمٰن نے استعفیٰ دیا

آئی پی ایس افسر عبدالرحمٰن نےٹوئٹ کرکے کہا کہ"ہاں میں نے اپنے عہدہ سےاستعفیٰ دے دیا ہے اور اپنے مکتوب میں استعفیٰ دینےکا سبب بھی بتا دیا ہے۔ آئی پی ایس افسر نے بل کی مذمت کرتے ہوئےکہا کہ سماجی تفرقہ کے سبب میں نے یہ فیصلہ کردیا ہے اورجمعرات سے ڈیوٹی پرنہیں جاؤں گا۔

  • UNI
  • Last Updated: Dec 11, 2019 11:50 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
مہاراشٹر: راجیہ سبھا میں شہریت ترمیمی بل منظور، مخالفت میں آئی جی پی عبدالرحمٰن نے استعفیٰ دیا
آئی پی ایس عبدالرحمن نےشہریت ترمیمی بل کی منظوری کے خلاف اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

ممبئی: شہریت ترمیمی بل کےخلاف بطوراحتجاج مہاراشٹرمیں ایک اعلی پولیس افسرآئی جی پی عبدالرحمن نےاپنے عہدہ سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ واضح رہے کہ شہریت ترمیمی بل لوک سبھا کے بعد آج راجیہ سبھا میں بھی منظورہوگیا ہے۔  انہوں نے کہا کہ "ہاں میں نےاپنےعہدہ سےاستعفیٰ دے دیا ہے اوراپنے مکتوب میں استعفیٰ دینےکا سبب بھی بتا دیا ہے۔ آئی پی ایس افسرنےبل کی مذمت کرتے ہوئےکہا کہ سماجی تفرقہ کے سبب میں نے یہ فیصلہ کردیا ہے اورجمعرات سے ڈیوٹی پرنہیں جاؤں گا۔


آئی جی پی عبدالرحمن نےاپیل کی کہ غریب اورپسماندہ طبقات بل کی مخالفت کریں۔ جبکہ جمہوری اقداراورسیکولرزم اورانصاف پسند ہندو بھی اس کی مخالفت کریں اور مذکورہ بل آرٹیکل 14،15،،25 کی سراسرخلاف ورزی ہے۔ کیونکہ جن شہریوں کو شہریت دینےکی بات کہی ہے، ان میں مسلمانوں کوشامل نہیں کیا گیا ہے۔ عبدالرحمن نےکہا کہ اس کا مقصد فرقوں میں تفریق پیدا کرنا ہے۔ انہوں نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ شہریت ترمیمی بل 2019 آئین کی بنیادی اقدارکے خلاف ہے۔ میں اس بل کی مذمت کرتا ہوں۔ میں نے کل سے دفترمیں موجود نہیں رہنے کا فیصلہ کیا ہے، میں آخرکارسروس چھوڑرہا ہوں۔


آئی پی ایس عبدالرحمن کا ٹوئٹ


واضح رہے کہ راجیہ سبھا میں اس بل کے حق میں کل 125 ووٹ پڑے جبکہ مخالفت میں 105 ووٹ پڑے۔ وزیرداخلہ امت شاہ نے بدھ کو شہریت ترمیمی بل پربحث کے لئے راجیہ سبھا میں پیش کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان کے مسلمان ملک کے شہری تھے، ہیں اوربنے رہیں گے۔
First published: Dec 11, 2019 11:50 PM IST