ہوم » نیوز » No Category

میری بیٹی بے قصور تھی ، اسے قتل کیا گیا : شمیمہ کوثر

ممبرا : میری بیٹی بے قصور تھی ، اسے قتل کیا گیا، یہ بات واضح ہوچکی ہے اور کورٹ نے اس سلسلے میں اپنا فیصلہ بھی دیدیا ہے ۔ مجھے ہیڈلی کے بیان سے کوئی واسطہ نہیں ۔وہ تو خود ہی دہشت گرد تنظیم کا ایک ایجنٹ ہے۔ مجھے ہیڈلی پر نہیں ملک کی عدلیہ پر بھروسہ ہے ۔

  • ETV
  • Last Updated: Feb 11, 2016 11:23 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
میری بیٹی بے قصور تھی ، اسے قتل کیا گیا : شمیمہ کوثر
ممبرا : میری بیٹی بے قصور تھی ، اسے قتل کیا گیا، یہ بات واضح ہوچکی ہے اور کورٹ نے اس سلسلے میں اپنا فیصلہ بھی دیدیا ہے ۔ مجھے ہیڈلی کے بیان سے کوئی واسطہ نہیں ۔وہ تو خود ہی دہشت گرد تنظیم کا ایک ایجنٹ ہے۔ مجھے ہیڈلی پر نہیں ملک کی عدلیہ پر بھروسہ ہے ۔

ممبرا : میری بیٹی بے قصور تھی ، اسے قتل کیا گیا، یہ بات واضح ہوچکی ہے اور کورٹ نے اس سلسلے میں اپنا فیصلہ بھی دیدیا ہے ۔ مجھے ہیڈلی کے بیان سے کوئی واسطہ نہیں ۔وہ تو خود ہی دہشت گرد تنظیم کا ایک ایجنٹ ہے۔ مجھے ہیڈلی پر نہیں ملک کی عدلیہ پر بھروسہ ہے ۔


یہ بیان ممبرا کی عشرت جہاں کی والدہ شمیمہ کوثر نے اس وقت دیا ، جب ہیڈلی نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ بتایا کہ عشرت جہاں خود کش بمبار تھی اور اس کا تعلق دہشت گرد تنظیم لشکر طیبہ سے تھا۔ عشرت جہاں معاملہ میں بی جے پی کے صدر امت شاہ سمیت کئی بڑی شخصیات پھنسی ہیں۔


علاوہ ازیں عشرت جہاں کے کیس کی پیروی کرنے والی تنظیم برائے ممبرا فاؤنڈیشن کے صدر عبد الرؤف لالہ اور ممبرا کے ایم ایل اے جتیندر اوہاڈ نے بھی ہیڈلی کے بیان کی پرزور الفاظ میں تردید کی ہے ۔

First published: Feb 11, 2016 11:23 PM IST