உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستانی ایجنسی ISI کی 2 حسیناؤں کے عشق کے جال میں پھنسا فوجی اہلکار گرفتار، جانئے پورا معاملہ

    Indian army soldier honeytrap:  خود کو ملٹری انجینئرنگ سروس اور نرسنگ سروس میں بتا کر انہوں نے شانتی موئے رانا سے دوستی کی تھی۔ ان ایجنٹوں نے اپنے نام گرنور کور عرف انکیتا اور نشا بتائے تھے۔

    Indian army soldier honeytrap: خود کو ملٹری انجینئرنگ سروس اور نرسنگ سروس میں بتا کر انہوں نے شانتی موئے رانا سے دوستی کی تھی۔ ان ایجنٹوں نے اپنے نام گرنور کور عرف انکیتا اور نشا بتائے تھے۔

    Indian army soldier honeytrap: خود کو ملٹری انجینئرنگ سروس اور نرسنگ سروس میں بتا کر انہوں نے شانتی موئے رانا سے دوستی کی تھی۔ ان ایجنٹوں نے اپنے نام گرنور کور عرف انکیتا اور نشا بتائے تھے۔

    • Share this:
      ہندستانی فوج (Indian Army) کا ایک اور سپاہی پاکستانی خاتون جاسوس کے ہنی ٹریپ (Honeytrap) کا نشانہ بن گیا۔ جے پور انٹیلی جنس یونٹ کی پولیس نے پاکستان کے لیے جاسوسی کرنے والے اس فوجی کو گرفتار کیا ہے۔ یہ فوجی اہلکار سوشل میڈیا کے ذریعے ہندستانی فوج کی خفیہ معلومات اکٹھا کر رہا تھا اور پاکستانی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی کی خواتین ایجنٹس کے لیے جاسوسی کر رہا تھا۔ پکڑے جانے والے فوجی اہلکار کا نام شانتی موئے رانا ہے۔ وہ مغربی بنگال کا رہنے والا ہے۔ اس نے مارچ 2018 میں ہندوستانی فوج میں شمولیت اختیار کی تھی۔ اس کے بعد ان کی پوسٹنگ راجستھان میں ہو گئی۔

      جے پور انٹیلی جنس یونٹ کی پولیس کے مطابق شانتی موئے رانا گزشتہ چند ماہ سے سوشل میڈیا کے ذریعے پاکستان کی دو خواتین ایجنٹوں سے رابطے میں تھا۔ خود کو ملٹری انجینئرنگ سروس اور نرسنگ سروس میں بتا کر انہوں نے شانتی موئے رانا سے دوستی کی تھی۔ ان ایجنٹوں نے اپنے نام گرنور کور عرف انکیتا اور نشا بتائے تھے۔

      خفیہ دستاویزات کی تصاویر اور ہتھکنڈوں کی ویڈیوز مانگنے لگی
      ان میں ایک ایجنٹ نے خود کو اتر پردیش کا رہنے والا اور ملٹری انجینئرنگ سروس میں ہونا بتایا۔ وہیں دوسری ایجنٹ نے خود کو ملٹری نرسنگ سروس میں ہونا بتایا۔ اس طرح ان دونوں نے فوجی جوان شانتی موئے کو ہنی ٹریپ میں پھنسا لیا۔ اسے پیسے اور محبت کے لالچ میں پھنسانے کے بعد، انہوں نے بھارتی فوج سے متعلق خفیہ دستاویزات کی تصاویر اور ہتھکنڈوں کی ویڈیوز مانگنا شروع کر دیں۔

      یہ مہم آپریشن سرحد کے نام سے چلائی جا رہی ہے۔
      ڈی جی انٹیلی جنس امیش مشرا نے کہا کہ آپریشن سرحد کے نام سے چلائے جانے والے آپریشن کے تحت پاکستانی خفیہ ایجنسیوں کی جاسوسی کی سرگرمیوں پر نظر رکھی جاتی ہے۔ اس میں فوجی اہلکار شانتی موئے رانا کے پاکستانی خواتین ایجنٹوں کے ساتھ رابطے میں ہونے کی اطلاع ملی تھی۔ اس پر شانتی موئے کو 25 جولائی کو حراست میں لیا گیا تھا۔ اسے پوچھ گچھ کے بعد گرفتار کر لیا گیا ہے۔ اس سے پوچھ گچھ جاری ہے۔

      جلد آرہی ہےShoaib Akhtarکی راولپنڈی ایکسپریس، پاکستانی کھلاڑی ہر پہلی ہوگی غیر ملکی فلم


      کولگام میں 2سے 3دہشت گردوں کے چھپے ہونے کا اندیشہ، 1جوان زخمی، انکاؤنٹر جاری



      پہلے بھی کئی پاکستانی خواتین جاسوس ہنی ٹریپ کر چکی ہیں۔
      قابل ذکر ہے کہ اس سے قبل بھی کئی پاکستانی خواتین جاسوس ہندستانی فوج کے اہلکاروں اور ملازمین کو اپنے جال میں پھنسا کر انہیں ہنی ٹریپ کر چکی ہیں۔ ان کی فہرست کافی لمبی ہے۔ ہنی ٹریپ میں پھنسے کئی جوان پہلے بھی پکڑے جا چکے ہیں۔ یہ سارا کام سوشل میڈیا کے ذریعے ہوتا ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: