உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ویڈیو : کہیں مدرسہ کا زمین پر وجود ہی نہیں تو کہیں طلبہ صفر ، 732 مدرسوں کا رجسٹریشن منسوخ

    جے پور: راجستھان مدرسہ بورڈ کی جانب سے ریاست میں مدرسوں کے سلسلے میں ڈاٹا کیپچر رپورٹ تیار کرلی گئی ہے۔ رپورٹ میں اقلیتی امور کے محکمہ کو پیش کی گئی تجاویز میں طلبہ کی تعداد کم ہونے کی وجہ سے 732 مدرسوں پر گاج گری ہے ۔

    جے پور: راجستھان مدرسہ بورڈ کی جانب سے ریاست میں مدرسوں کے سلسلے میں ڈاٹا کیپچر رپورٹ تیار کرلی گئی ہے۔ رپورٹ میں اقلیتی امور کے محکمہ کو پیش کی گئی تجاویز میں طلبہ کی تعداد کم ہونے کی وجہ سے 732 مدرسوں پر گاج گری ہے ۔

    جے پور: راجستھان مدرسہ بورڈ کی جانب سے ریاست میں مدرسوں کے سلسلے میں ڈاٹا کیپچر رپورٹ تیار کرلی گئی ہے۔ رپورٹ میں اقلیتی امور کے محکمہ کو پیش کی گئی تجاویز میں طلبہ کی تعداد کم ہونے کی وجہ سے 732 مدرسوں پر گاج گری ہے ۔

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:

      جے پور: راجستھان مدرسہ بورڈ کی جانب سے ریاست میں مدرسوں کے سلسلے میں ڈاٹا کیپچر رپورٹ تیار کرلی گئی ہے۔ رپورٹ میں اقلیتی امور کے محکمہ کو پیش کی گئی تجاویز میں طلبہ کی تعداد کم ہونے کی وجہ سے 732 مدرسوں پر گاج گری ہے ۔


      تاہم رپورٹ کے خلاف مدرسہ تعلیم کو آپریٹو یونین نے ابھی سے اپنی آواز بلند کرنی شروع کر دی ہے ۔ یونین کا کہنا ہے بورڈ نے جو گائیڈ لائن طے کی تھی ، انہیں طاق پر رکھ کر یہ کارروائی کی گئی ہے ۔مدرسہ بورڈ کے چیئرمین کی تقرری نہ ہونے کی وجہ سے اساتذہ مزید پریشان ہیں کہ وہ اپنی فریاد کس کے پاس لے کر جائیں ۔


      کنٹریکٹ رینيو نہ ہوپانے سے اساتذہ تنخواہ کو لے کر پہلے سے ہی کافی پریشان ہیں او ر اس کاررائی سے ان کی پریشا نیاں مزید بڑھ گئی ہیں۔


      محکمہ اقلیتی امور کو بھیجی رپورٹ کے بعد تمام مدرسوں کی ایک لسٹ مدرسہ بورڈ کی ویب سائٹ پر یکم دسمبر کو جاری کر دی گئی ۔بورڈ نے کہا ہے کہ نامزدگی نہ ہونے یا ان میں پڑھائی نہیں ہونے کی وجہ سے کی وجہ سے 732 مدارس کے اندراج کو منسوخ کردیا گیا ہے۔یہی نہیں جوان مدرسوں میں خدمات دے رہے ہیں، ان کا وظیفہ بھی فوری طور پر روک دیا جائے۔اس رپورٹ میں 252 اساتذہ کو ان کے تجربے کی بنیاد پر کہیں اور ٹرانسفر کرنے کی بات بھی کہی گئی ہے۔


      خیال رہے کہ راجستھان میں تقریبا 3800 مدارس رجسٹرڈ ہیں۔ مدرسہ بورڈ کی جانب سے کئے گئے سروے کے بعد چونکانے والے اعداد و شمار سامنے آئے ہیں ، جس پر سخت ایکشن لیا گیا ہے۔ریاست کے تقریبا چار ہزار مدرسوں میں سے 148 مدرسوں کا تو زمینی وجود نہیں ہے ۔ جبکہ 507 مدرسوں میں طلبہ کی تعداد صفر ہے۔علاوہ ازیں228 مدراس ایسے پائے گئے ، جہاں طلبہ کی تعداد 20 سے بھی کم تھی۔ایسے میں 655 مدرسوں پر کارروائی کی جانی تھی ، لیکن اب کارروائی 732 مدرسوں پر کی گئی ہے ۔


      اب ان مدارس کے اساتذہ تو نکالے ہی جائیں گے ساتھ ہی ساتھ ان مدرسوں کو غذائی سہولت سمیت مدرسوں بورڈ کی طرف دی جا رہی تمام طرح کی مراعات بھی بند کر دی جائے گی ۔

      First published: