ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

کورونا وائرس کی آڑ میں مدھیہ پردیش میں کانگریس اور بی جے پی میں سیاسی گھمسان

مدھیہ پردیش میں کورونا وائرس کے مریضوں کی بڑھتی تعداد اور اموات کے لئے کانگریس میڈیا سیل کے انچارج و سابق وزیر جیتو پٹواری نے سی ایم شیوراج سنگھ کی ناقص حکمت عملی کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے ۔

  • Share this:
کورونا وائرس کی آڑ میں مدھیہ پردیش میں کانگریس اور بی جے پی میں سیاسی گھمسان
کورونا وائرس کی آڑ میں مدھیہ پردیش میں کانگریس اور بی جے پی میں سیاسی گھمسان

مدھیہ پردیش میں ایک طرف جہاں کورونا وائرس کے خطرات ہر دن بڑھتے جا رہے ہیں ، وہیں صوبہ میں سیاسی پارٹیوں کے بیچ کورونا وائرس کی آڑ میں ایک دوسرے پر حملہ اور جوابی حملہ بھی جاری ہے ۔ صوبہ میں کورونا وائرس جہاں اکیس اضلاع میں دستک دے چکا ہے ، وہیں مدھیہ پردیش میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد بڑھ کر چار سو چھیاسی ہو گئی ہے ۔ یہی نہیں کورونا وائرس سے ابتک صوبہ میں چالیس لوگوں کی موت بھی ہو چکی ہے ۔ کورونا وائرس سے سب زدیاہ مدھیہ پردیش کا اندور شہر متاثر ہے ۔ یہاں پر کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد بڑھ کر دو سو انچاس تک پہنچ گئی ہے ۔ وہیں اندور میں کورونا وائرس سے ابتک تیس لوگوں کی موت ہوچکی ہے ۔ اندور میں گزشتہ دو دنوں میں کورونا وائرس سے دو ڈاکٹروں کی بھی موت ہو چکی ہے ۔

مدھیہ پردیش میں کورونا وائرس کے مریضوں کی بڑھتی تعداد اور اموات کے لئے کانگریس میڈیا سیل کے انچارج و سابق وزیر جیتو پٹواری نے سی ایم شیوراج سنگھ کی ناقص حکمت عملی کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے ۔ جیتو پٹواری کا کہنا ہے کہ شیوراج سنگھ  صرف سرخیوں میں رہنا چاہتے ہیں ، لیکن زمینی سطح پر کام نہیں کرنا چاہتے ہیں ۔ کانگریس میڈیا سیل کے انچارج جیتو پٹواری کا یہ بھی الزام ہے کہ سی ایم شیوراج سنگھ نے کورونا وائرس کے خطرات سے لڑنے کے نام پر ابتک کئی مرتبہ عوامی نمائندوں سے بات کی ہے ، لیکن ان کی بات صرف بی جے پی ممبران اسمبلی تک ہی محدود ہے ۔ انہوں نے آج تک کسی کانگریس ممبر اسمبلی سے نہ تو بات کی اور نہ ہی اس مہلک بیماری سے نجات پانے پر کانگریس اور دوسری پارٹیوں سے کسی  طرح کا تعاون مانگا ۔ جبکہ مشکل کی اس گھڑی میں سبھی لوگ سرکار کے ساتھ کھڑے ہیں ۔

وہیں کانگریس کے الزام پر بی جے پی نے بھی جوابی حملہ کیا ہے ۔ ریاستی بی جے پی کے نائب صدر اور بھوپال حضور اسمبلی سیٹ سے بی جے پی کے رکن اسمبلی رامیشور شرما نے ایم پی میں کورونا وائرس کے مریضوں کی بڑھتی تعداد کے لئے کمل ناتھ حکومت کی عدم توجہی کو ذمہ دار ٹھہرایا ۔ رامیشور شرما کا کہنا ہے کہ اگر کمل ناتھ حکومت نے ٹرانسفر انڈسٹری سے ہٹ کر وقت رہتے اس جانب دھیان دیا ہوتا ، تو مدھیہ پردیش میں کورونا وائرس کے مریضوں کی اتنی بڑی تعداد نہیں ہوتی ۔ کانگریس کے کاموں کی سزا ہم اور مدھیہ پردیش کے عوام بھگت رہے ہیں ۔

بی جے پی اور کانگریس کی سیاست اور ایک دوسرے پر حملہ اور جوابی حملہ سے الگ ہٹ کر دیکھیں تو یہ سچ ہے کہ مدھیہ پردیش کے اسپتالوں میں نہ صرف سہولیات کا فقدان ہے ، بلکہ پی پی ای کٹ بھی ضرورت کے مطابق موجود نہیں ہے ۔ یہی وجہ ہے کہ اندور میں آشا کارکنان نے پی پی ای کٹ کے فقدان سبب اندور میں سروے کرنے سے انکار کردیا تھا ۔ کورونا وائرس کے بڑھتے خطرات کے درمیان جہاں حکومت کو طبی سہولیات مہیا کرنے پر اپنی توجہ مرکوز کرنی چاہیئے وہیں کانگریس کو بھی اپنے سیاسی مفاد سے اوپر اٹھ کر انسانیت کے تحفظ کے لئے قدم اٹھانا چاہیئے تاکہ مدھیہ پردیش سے کورونا وائرس کا خاتمہ کیا جا سکے ۔

First published: Apr 11, 2020 10:18 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading