ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

چوہے مارنے کی دوا سے کئے دانت صاف، 18 سالہ لڑکی کی دردناک موت

آپ سب سے گزارش ہے کہ وہ تمام کیڑے مار دوا یا پیسٹ ایسی جگہ پر رکھیں کہ خاندان کے افراد اسے چھو نہ سکیں۔ خاص طور پر بچے ، ورنہ یہ ایک بڑے حادثہ ہو سکتا ہے جس سے ہر ایک کو بچنا چاہئے۔

  • Share this:
چوہے مارنے کی دوا سے کئے دانت صاف، 18 سالہ لڑکی کی دردناک موت
آپ سب سے گزارش ہے کہ وہ تمام کیڑے مار دوا یا پیسٹ ایسی جگہ پر رکھیں کہ خاندان کے افراد اسے چھو نہ سکیں۔ خاص طور پر بچے ، ورنہ یہ ایک بڑے حادثہ ہو سکتا ہے جس سے ہر ایک کو بچنا چاہئے۔

ممبئی میں ایک چونکا دینے والا واقعہ سامنے آیا ہے جسے سن کر آپ حیران رہ جائیں گے کہ ایک نوجوان لڑکی دانت صاف کرتے ہوئے مر گئی۔ لڑکی نے چوہے کی دوا سے اپنے دانت صاف کئے تھے جس کے بعد اس کی صحت بگڑ گئی اور وہ بعد ازاں اہل خانہ نے اسے جے جے اسپتال میں داخل کرایا جہاں اتوار کی شام اس کی موت ہوگئی۔ اس معاملے میں دھاراوی پولیس اے ڈی آر درج کرکے واقعہ کی تحقیقات کررہی ہے۔


ایک 18 سالہ لڑکی نے چوہے مارنے والے پیسٹ (زہر) کو ٹوتھ پیسٹ کے طور پر برش کرنے کے بعد مر گئی۔ یہ واقعہ دھاراوی کا ہے۔ پولیس سے موصول ہونے والی معلومات کے مطابق مہلوک کا نام افسانہ خان ہے۔ جمعہ کے روز افسانہ نے اپنے گھر میں رکھے ہوئے چوہے کےزہر کو برش میں لگا کر صاف کیا۔ کچھ دنوں بعد اس کی طبیعت خراب ہونے لگی۔ جب ڈاکٹروں نے اس کی صحت کا معائنہ کیا تو پتہ چلا کہ اس نے اپنے دانتوں کو زہر سے صاف کیا ہے۔ اس دوران زہر کا کچھ حصہ اس کے پیٹ میں چلا گیا۔ حالانکہ افسانہ نے پیٹ میں درد ہونے پر کافی دیر وقت تک قے کی لیکن بہت دیر ہو چکی تھی۔


ایک 18 سالہ لڑکی نے چوہے مارنے والے پیسٹ (زہر) کو ٹوتھ پیسٹ کے طور پر برش کرنے کے بعد مر گئی۔


بگڑتی ہوئی صحت اور چکر آنے کی وجہ سے اہل خانہ نے افسانہ کو قریبی اسپتال میں داخل کرایا ، جہاں اس کی حالت بد سے بدتر ہوتی چلی گئی۔ افسانہ نے انجانے میں موت کو گلے لگا لیا۔ آپ سب سے گزارش ہے کہ وہ تمام کیڑے مار دوا یا پیسٹ ایسی جگہ پر رکھیں کہ خاندان کے افراد اسے چھو نہ سکیں۔ خاص طور پر بچے ، ورنہ یہ ایک بڑے حادثہ ہو سکتا ہے جس سے ہر ایک کو بچنا چاہئے۔
Published by: Sana Naeem
First published: Sep 15, 2021 11:12 PM IST