ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

داعش سے تعلق کے الزام میں اے ٹی ایس نے ہنگولی سے اردو ٹیچر کو حراست میں لیا‎

ہنگولی کے ضلع پریشد اردو اسکول میں تدریسی خدمات انجام دینے والے رئیس الدین صدیقی کو اے ٹی ایس اورنگ آباد کی ٹیم نے داعش سے تعلق کے الزام میں ہنگولی سے حراست میں لیا ہے ۔

  • ETV
  • Last Updated: Aug 09, 2016 08:26 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
داعش سے تعلق کے الزام میں اے ٹی ایس نے ہنگولی سے اردو ٹیچر کو حراست میں لیا‎
شیخ جنید ، ملزم شیخ اقبال کبیر کا بھائی

ناندیڑ۔ داعش کے ساتھ تعلق کے الزام میں پربھنی کے بعد اب ہنگولی سے بھی اے ٹی ایس نے ایک شخص کو حراست میں لیا ہے ۔ ہنگولی کے ضلع پریشد اردو اسکول میں تدریسی خدمات انجام دینے والے رئیس الدین صدیقی کو  اے ٹی ایس اورنگ آباد کی ٹیم نے ہنگولی سے حراست میں لیا ہے ۔اتوار کے روز ہی اے ٹی ایس نے پربھنی سے تیسری گرفتاری کے طورپر شیخ اقبال کبیر نامی نوجوان کو مدینہ پاٹی علاقے میں اس کے مکان سے گرفتار کیا تھا  ۔ داعش کے ساتھ تعلقات کے الزام میں مہاراشٹر میں حالیہ دنوں کی کارروائی کا یہ چوتھا معاملہ ہے ۔


اے ٹی ایس نے پربھنی سے تین اور ہنگولی سے ایک شخص کو اب تک حراست میں لیا ہے ۔ حراست میں لئے گئے نوجوانوں سے پوچھ گچھ  کے دوران کئی سنسنی خیز باتوں کے انکشافات کا دعویٰجانچ ایجنسیوں کی جانب سے کیا جا رہا ہے ۔ وہیں دوسری طرف اے ٹی ایس کی اس کارروائی سے مراٹھواڑہ کے مسلمانوں میں شدید بے چینی دیکھی جا رہی ہے ۔ مختلف سماجی حلقوں کی جانب سے یہ اندیشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ جانچ ایجنسیاں داعش سے تعلق کے بہانے جھوٹے الزامات لگا کر مسلم نوجوانوں کو نشانہ بنا رہی ہیں  ۔ پربھنی سے گرفتار کئے گئے شیخ اقبال کبیر کے بھائی جنید نے اپنے تاثرات ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ میرا بھائی بے قصور ہے اور اسے زبردستی پھنسایا جا رہا ہے ۔

First published: Aug 09, 2016 08:26 AM IST