ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

مہاراشٹر میں بیف کھانے کی آزادی، کاٹنا جرم: ہائی کورٹ

ممبئی۔ مہاراشٹر میں بیف پر پابندی جاری رہے گی۔

  • IBN Khabar
  • Last Updated: May 06, 2016 12:52 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
مہاراشٹر میں بیف کھانے کی آزادی، کاٹنا جرم:  ہائی کورٹ
ممبئی۔ مہاراشٹر میں بیف پر پابندی جاری رہے گی۔

ممبئی۔ مہاراشٹر میں بیف پر پابندی جاری رہے گی۔ بامبے ہائی کورٹ نے ریاستی حکومت کے بیف بین پر لگی روک کو ہٹانے سے انکار کر دیا ہے۔ ریاست میں حکومت کے نئے قانون کے خلاف بامبے ہائی کورٹ میں عرضی داخل کی گئی تھی۔ کورٹ نے کہا ہے کہ مہاراشٹر حکومت نے ریاست میں جانوروں کے تحفظ ایکٹ کے تحت بیف پر پابندی لگا دی تھی۔ اس کے خلاف دائر درخواست پر سماعت کرتے ہوئے ہائی کورٹ نے پابندی پر روک لگانے سے انکار کر دیا۔


کورٹ کے فیصلے کے مطابق ریاست میں گائے اور بیل کے کاٹنے پر لگائی گئی ریاستی حکومت کی پابندی جاری رہے گی لیکن گائے کے گوشت کی تجارت (اگر مہاراشٹر سے باہر سے لایا جاتا ہے، جن ریاستوں میں اس کی اجازت ہے) جرم کے زمرے میں نہیں ہو گی۔ تاہم دوسری ریاستوں سے آنے والے تاجروں کے پاس بیف کے پورے قانونی دستاویزات ہونے چاہئیں۔


اگر کسی تاجر یا انسان کو اس بات کی جانکاری ہے کہ بیف مہاراشٹر میں کاٹا گیا ہے اور پھر اس کا کاروبار کیا جائے یا پھر وہ کسی انسان کے پاس پایا جائے تو اس کے اوپر قانونی کارروائی کی جائے گی۔ ایم آئی ایم کے رہنما رافت حسین نے کہا کہ اس فیصلے سے تھوڑی مایوسی ضرور ہوئی ہے لیکن راحت کی بات یہ ہے کے بیف پائے جانے پر جو قانونی کارروائی کی جاتی تھی اس پر اب روک لگا دی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس فیصلے کے خلاف ہم سپریم کورٹ میں اپیل دائر کریں گے۔ بیف پابندی کی وجہ سے لاکھوں کسان اور قصاب پریشان ہیں، ہم اپنی لڑائی جاری رکھیں گے۔

First published: May 06, 2016 12:52 PM IST