உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مہاراشٹر : بائیک ایمبولینس کے ذریعہ کورونا مریضوں کو پہنچایا جارہا اسپتال ، جانئے کچھ خاص باتیں

    مہاراشٹر : بائیک ایمبولینس کے ذریعہ کورونا مریضوں کو پہنچایا جارہا اسپتال ، جانئے کچھ خاص باتیں

    مہاراشٹر : بائیک ایمبولینس کے ذریعہ کورونا مریضوں کو پہنچایا جارہا اسپتال ، جانئے کچھ خاص باتیں

    یہ ایمبولینس الرٹ سٹیزن فورم کے ذریعہ تیار کی گئی ہے ۔ اس موٹرسائیکل ایمبولینس میں سائڈ کار کھلتی ہے ۔ اس میں لائٹ ، پنکھا ، ریسکیو اسٹریچر ، سلائن اسٹینڈ ، آکسیجن سلنڈر رکھنے کی جگہ ہے ۔

    • Share this:
    پال گھر : ممبئی سے متصل پال گھر ضلع میں کورونا مریضوں کو اسپتال پہنچا نے کے لئے بائیک ایمبولینس سروس شروع کی گئی ہے ۔ یہ ایمبولینس اسٹریچر ، آکسیجن کٹ ، لائٹ ، فین ، آئی لو لیشن کیبن جیسی سہولیات سے آراستہ ہے۔ اس موٹر سائیکل ایمبولینس کا نام فرسٹ ریسپانڈر رکھا گیا ہے۔ دراصل کورونا مریض گاؤں سے شہر پہنچنے تک سے دم توڑ دیتے ہیں اور اس کی ایک وجہ ایمبولنس کی عدم دستیابی ہے۔ شہر سے ایمبولینس بلانے میں کافی محنت کرنی پڑتی ہے۔ اگر آپ کو ایمبولنس مل جاتی ہے تو سڑکیں اتنی خراب ہیں کہ اسپتال تک پہنچنے میں کافی وقت لگ جاتا ہے۔ ایسی صورت میں پال گھر کے دیہی علاقوں کے مریضوں کو اسپتال پہنچانے کیلئے موٹرسائیکل ایمبولینس کا استعمال کیا جارہا ہے ۔

    یہ ایمبولینس الرٹ سٹیزن فورم کے ذریعہ تیار کی گئی ہے ۔ اس موٹرسائیکل ایمبولینس میں سائڈ کار کھلتی ہے ۔ اس میں لائٹ ، پنکھا ، ریسکیو اسٹریچر ، سلائن اسٹینڈ ، آکسیجن سلنڈر رکھنے کی جگہ ہے ۔ اتنا ہی نہیں مریض کے رشتے دار بھی چاہیں تو اس میں بیٹھ سکتے ہیں ۔ ایمبولینس میں خاص طور پر وینٹیلیشن کو مدنظر رکھتے ہوئے کھڑکیاں بنائی گئی ہیں ۔ اگر موٹرکی مین بیٹری ناکام ہوجاتی ہے ، تو اس صورت میں ایڈیشنل بیٹری کا بھی بندوبست کیا گیا ہے ۔

    موٹرسائیکل کا ڈرائیور پیرامیڈک رضاکار ہے ، جنہیں ایمرجنسی کی صورت میں مریضوں کو سنبھالنے کی تربیت دی گئی ہے۔ اس کے ڈرائیور کو پی پی ای کٹ پہننے کی بھی ضرورت نہیں ہے ۔ مریض کو اسپتال چھوڑنے کے بعد موٹرسائیکل ایمبولینس کی صفائی کردی جاتی ہے ۔ اس ایمبولینس موٹر سائیکل کو فی الحال پالگھر ضلع انتظامیہ کے حوالے کیا گیا ہے۔ آنے والے دنوں میں انتظامیہ کو موٹرسائیکل کی مزید 23 ایمبولینس فراہم کرنے کا منصوبہ ہے۔

    اس طرح کی موٹر سائیکل ایمبولینس تیار کرنے میں تقریبا 2.80 لاکھ روپے کی لاگت آتی ہے اور اس میں لگ بھگ ایک مہینے کا وقت لگتا ہے ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: