ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

اجیت پوار کو این سی پی قانون ساز پارٹی کے لیڈر کے عہدے سے ہٹایا گیا: ذرائع

بتایا جا رہا ہے کہ یہ فیصلہ این سی پی سربراہ شرد پوار اور پارٹی لیڈروں کی ایک میٹنگ کے دوران لیا گیا۔

  • Share this:
اجیت پوار کو این سی پی قانون ساز پارٹی کے لیڈر کے عہدے سے ہٹایا گیا: ذرائع
اجیت پوار: فائل فوٹو

نئی دہلی۔ مہاراشٹر سے اس وقت ایک بڑی خبر آ رہی ہے۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ این سی پی قانون ساز پارٹی کے لیڈر کے عہدے سے شرد پوار کے بھتیجے اجیت پوار کو ہٹا دیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی اجیت پوار کے حامی ارکان اسمبلی کو بھی پارٹی سے نکالنے کی خبر آ رہی ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ یہ فیصلہ این سی پی سربراہ شرد پوار اور پارٹی لیڈروں کی ایک میٹنگ کے دوران لیا گیا۔ اجیت پوار پر این سی پی نے الزام عائد کیا ہے کہ انھوں نے پارٹی کو دھوکہ دیتے ہوئے بی جے پی کو حمایت دینے کا اعلان کیا جس سے ریاست میں بی جے پی کی حکومت بن گئی۔


اس سے پہلے این سی پی کے قومی ترجمان نواب ملک نے مہاراشٹر میں بی جے پی کی حکومت سازی کو دھوکے کی حکومت قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ این سی پی کے سبھی اراکین اسمبلی ہمارے ساتھ ہیں اور اسمبلی میں اس حکومت کو شکست ملے گی۔ نواب ملک نے یہ بھی کہا کہ این سی پی کے سبھی اراکین اسمبلی کی حاضری دیکھنے کے مقصد سے لئے گئے دستخط کو اجیت پوار نے اراکین اسمبلی کی حمایت کہتے ہوئے گورنر بھگت سنگھ کوشیاری کے حوالے کیا ہے اور یہ دھوکہ ہے۔


وہیں، شیوسینا کے ترجمان سنجے راؤت نے مہاراشٹر میں نئے سیاسی ماحول پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ این سی پی لیڈر اجیت پوار نے بی جے پی سے ہاتھ ملا کر شرد پوار، ریاستی عوام اور چھترپتی شیواجی مہاراج کے ساتھ دھوکہ کیا ہے۔ سنجے راؤت نے کہا کہ رات تک اجیت پوار میٹنگ میں ہمارے ساتھ تھے اور پھر صبح جا کر نائب وزیر اعلیٰ کا حلف لے لیا، انہوں نے گناہ کیا ہے۔


First published: Nov 23, 2019 12:47 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading