உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مہاراشٹر میں بیلٹ پیپر سے ہوں گے انتخابات! بجٹ سیشن میں پیش ہوسکتا ہے بل

    مہاراشٹر میں بیلٹ پیپر سے ہوں گے انتخابات! بجٹ سیشن میں پیش ہوسکتا ہے بل

    مہاراشٹر میں بیلٹ پیپر سے ہوں گے انتخابات! بجٹ سیشن میں پیش ہوسکتا ہے بل

    مخلوط حکومت کی تینوں پارٹیاں شیو سینا ، این سی پی اور کانگریس اس معاملہ پر ہم خیال مانی جارہی ہیں ۔ بتادیں کہ اگر بل پیش کیا جاتا ہے تو یہ صرف ریاستی اسمبلی انتخابات اور مقامی انتخابات کیلئے لاگو ہوگا ۔

    • Share this:
      مہاراشٹر حکومت الیکشن کرانے کیلئے بیلٹ پیپر کو پھر سے شروع کرنے پر غور کررہی ہے ۔ مانا جارہا ہے کہ مارچ میں ریاستی اسمبلی کے بجٹ سیشن میں اس سے وابستہ بل پیش کیا جاسکتا ہے ۔ نیوز 18 سے خاص بات بات چیت کرتے ہوئے اسمبلی اسپیکر نانا پٹولے نے کہا کہ انہوں نے ادھو ٹھاکرے سرکار کو ای وی ایم کے ساتھ بیلٹ پیپر پر الیکشن کرانے کیلئے ایک ڈرافٹ تیار کرنے کی ہدایت دی ہے ۔ پٹولے نے کہا کہ ڈرافٹ تیار ہے تو بل کو آنے والے بجٹ سیشن میں پیش کیا جاسکتا ہے ۔

      بتادیں کہ اگر بل پیش کیا جاتا ہے تو یہ صرف ریاستی اسمبلی انتخابات اور مقامی انتخابات کیلئے لاگو ہوگا ۔ اگر ٹھاکرے سرکار اس پر آگے بڑھتی ہے تو مہاراشٹر بیلٹ پیپر اور ای وی ایم سے ایک ساتھ الیکشن کیلئے اس طرح کا قانون بنانے والی ریاست ہوگی ۔

      مخلوط حکومت کی تینوں پارٹیاں شیو سینا ، این سی پی اور کانگریس اس معاملہ پر ہم خیال مانی جارہی ہیں ۔ ممکنہ بل کی قانونی حیثیت کے بارے میں پٹولے نے نیوز18 کو بتایا کہ ریاست میں الیکشن کیلئے ایسے قانون کو بنانے کیلئے آرٹیکل 328 میں اختیار دیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن کے افسران سمیت اس سے وابستہ کئی لوگوں کے ساتھ میٹنگ ہوچکی ہے ۔

      پٹولے نے کہا کہ آرٹیکل 328 ریاستی حکومت کو اس طرح کا قانون بنانے کا حق دیتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن ای وی ایم سے ہونا ہے یا بیلٹ پیپر سے یہ فیصلہ ریاست کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ جو لوگ جمہوریت میں اعتماد رکھتے ہیں ، جو لوگ بیلٹ پیپر میں یقین رکھتے ہیں ، وہ اس سے خوش ہوں گے ۔

      ادھر نیوز18 سے بات چیت کرتے ہوئے این سی پی لیڈر مجید میمن نے اس کی تصدیق کی اور کہا کہ ای وی ایم سے الیکشن کرانے میں غیرجانبداری کے سلسلہ میں کئی شکایات ملی ہیں ۔ میمن نے کہا کہ جو لوگ ووٹ ڈال رہے ہیں ، ان کا اعتماد اہم  ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: