ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

مہاراشٹر میں مذہبی مقامات کو دوبارہ شروع کرنے پر غور وفکر

مہاراشٹر میں آئندہ دنوں میں ریاستی حکومت محدود تعداد میں مذہبی مقامات اور ریستوراں کھولنے پر غور کررہی ہے اور جلد ہی اس پر فیصلہ کیا جاسکتا ہے ۔

  • Share this:
مہاراشٹر میں مذہبی مقامات کو دوبارہ شروع کرنے پر غور وفکر
مہاراشٹر میں مذہبی مقامات کو دوبارہ شروع کرنے پر غور وفکر

ممبئی : مہاراشٹر  میں آئندہ دنوں میں ریاستی حکومت محدود تعداد میں مذہبی مقامات اور ریستوراں کھولنے پر غور کررہی ہے اور جلد ہی اس پر فیصلہ کیا جاسکتا ہے ۔ کورونا کی وبا سے نمٹنے کے لئے بنائی گئی ٹاسک فورس کے اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا۔ ریاست میں مارچ مہینے سے بند مذہبی مقامات کو دوبارہ کھولنے کا مطالبہ گزشتہ کچھ دنوں سے مختلف سیاسی جماعتیں اور عقیدتمند کر رہے ہیں ۔ اب ریاستی حکومت اس موضوع پر جلد ہی فیصلہ کرسکتی ہے اور جلد ہی محدود تعداد کے ساتھ مذہبی مقامات کے کھلنے کی توقع  ہے ۔ ریاست میں ای درشن کے ذریعہ عقیدتمندوں کو بھگوان کے درشن کا موقع  ملے گا ۔ اسی طرح مندر میں جا کر درشن کےلئے بھی پہلے سے ٹائم سلاٹ بک کیا جاسکے گا ۔ اس طرح بھیڑ کو بڑھنے سے روکا جائے گا ۔


کووڈ ٹاسک فورس کے منعقدہ اجلاس میں تبادلہ خیال کے بعد  ریاستی سرکار کوئی فیصلہ لے گی ۔ ریاست کے محکمہ داخلہ نے اپنی تیاریاں شروع کردی ہیں ۔ ریاست کے بڑے اور اہم مندروں سے تفصیلات جمع  کی جارہی ہیں ۔ اہم مقامات جیسے شرڈی سائیں سنستھان ، سدھی ونائک ، پنڈھر پور وٹھل مندر جیسے اہم جگہوں کا جغرافیائی مطالعہ کیا جائے گا اور ایس او پی بنائی جائی گی ۔ عقیدتمندوں کے ہجوم کو کنٹرول کرنے ، صفائی گھر ، پرساد گھر اور پوجا پاٹھ جیسی ضروری چیزوں  کیلئے قواعد بنائے جائیں گے ۔


ابھی تک ریستوراں میں پارسل کی سہولت ہے ، لیکن اب یہاں بھی دس فیصد لوگوں کو بیٹھنے کی اجازت دینے پر غور کیا جارہا ہے ۔ اگرچہ مندروں اور ریستورانوں کو کھولنے کی باتیں منظرعام پر آرہی ہیں ، لیکن مقامی خدمت کی بحالی کے لئے ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں لیا گیا ہے ۔ جب تک ممبئی اور آس پاس کے علاقوں میں کورونا کا اثر کم نہیں ہوتا ہے، مقامی خدمات شروع کرنے کا امکان بہت کم ہے ۔


کووڈ ٹاسک فورس کے اجلاس میں اسکولوں کے کھولنے کے بارے میں بھی کوئی فیصلہ نہیں لیا گیا ہے ۔ لہذا مقامی ٹرینوں کی طرح اسکول بھی آنے والے کچھ وقت کے لئے بند رہیں گے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Sep 11, 2020 09:15 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading