உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    حکومت مسلم پرسنل لا بورڈ اور مسلمانوں پر لگاتار حملہ آورہے، ہمیں متحد ہوکر مقابلہ کرنے کی ضرورت : مولانا ولی رحمانی

     آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے جنرل سکریٹری مولانا ولی محمد رحمانی کا کہنا ہے کہ ہمارے ہر مسئلے کا حل قرآن میں موجود ہے، ہم شریعت کے پابند ہیں اور ہمارا ہر مسئلہ شریعت کے مطابق حل کیا جاتا ہے۔

    آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے جنرل سکریٹری مولانا ولی محمد رحمانی کا کہنا ہے کہ ہمارے ہر مسئلے کا حل قرآن میں موجود ہے، ہم شریعت کے پابند ہیں اور ہمارا ہر مسئلہ شریعت کے مطابق حل کیا جاتا ہے۔

    آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے جنرل سکریٹری مولانا ولی محمد رحمانی کا کہنا ہے کہ ہمارے ہر مسئلے کا حل قرآن میں موجود ہے، ہم شریعت کے پابند ہیں اور ہمارا ہر مسئلہ شریعت کے مطابق حل کیا جاتا ہے۔

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:
      مالیگاؤں : آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے جنرل سکریٹری مولانا ولی محمد رحمانی کا کہنا ہے کہ ہمارے ہر مسئلے کا حل قرآن میں موجود ہے، ہم شریعت کے پابند ہیں اور ہمارا ہر مسئلہ شریعت کے مطابق حل کیا جاتا ہے۔ جن لوگوں کے پاس شریعت نہیں ہے ، انہیں ہمیں سمجھانے کی ضرورت نہیں ہے۔ مالیگاؤں کے مشاورت چوک پر منعقدہ آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کی تحفظ شریعت کانفرنس میں مولانا محمد ولی رحمانی نے مزید کہا کہ حکومت آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ اور ہندوستان کے مسلمانوں پر لگاتار حملےکر رہی ہے، ہمیں ایسے وقت میں متحد ہوکراس کا مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے۔
      مولانا نے عوام سے خطاب کےد ورن قرآن کریم کی ایک آیت بھی تلاوت کی اور کہا کہ قرآن خود کہتا ہے کہ تیار ہوجاؤ، تیار ہونے سے مراد ایسے لوگ جو تمہارے مخالف ہیں اور شریعت اور قرآن کے مخالف ہیں ان لوگوں کا مقابلہ اتحاد کے ساتھ کیا جائے۔مولانا ولی رحمانی نے مزید کہا کہ شریعت کےتعلق سےدیگر مذاہب کےلوگوں کی غلط فہمیاں دورکرنا ضروری ہے۔
      خیال رہے کہ مالیگاؤں شہر میں آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈکی جانب سے خواتین اورعام لوگوں کے لئے دو الگ الگ اجلاس منعقد کئے گئے تھے۔ خواتین کے اجلاس میں تحریک پیامِ انسانیت کے سربراہ مولانا بلال ندوی نے خطاب کیا۔ جبکہ عام لوگوں کیلئے مشاورت چوک میں منعقد کئے گئےجلسہ عام میں مالیگاؤں شہرکےتمام مسلک کےعلما کرام نے شرکت کی۔بوہرہ سماج، بوہرہ روشن خیال، شیعہ برادران، صوفی برادران، بریلوی برادران، دیوبندی، دونوں جمعیت کے ذمہ داران ایک ہی اسٹیج پر ایک ساتھ تحفظ شریعت کے لئے نظر آئے ۔
      First published: