ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

شرد پوار پر دیویندر فڑنویس کا پلٹ وار ، کہا : غیر جانبدارانہ جانچ کیلئے انل دیشمکھ کا استعفی ضروری

Maharashtra : بی جے پی لیڈر نے کہا کہ اس معاملہ میں تب تک غیر جانندارانہ جانچ نہیں ہوسکتی جب تک کہ مہاراشٹر کے وزیر داخلہ اپنے عہدہ پر برقرار رہیں گے ۔ انل دیشمکھ کو غیر جانبدارانہ جانچ کیلئے اپنے عہدہ سے استعفی دینا چاہئے ۔

  • Share this:
شرد پوار پر دیویندر فڑنویس کا پلٹ وار ، کہا : غیر جانبدارانہ جانچ کیلئے انل دیشمکھ کا استعفی ضروری
شرد پوار پر دیویندر فڑنویس کا پلٹ وار ، کہا : غیر جانبدارانہ جانچ کیلئے انل دیشمکھ کا استعفی ضروری

مہاراشٹر کی سیاست میں بی جے پی اور برسر اقتدار پارٹیوں کے لیڈروں کے درمیان بیان بازیوں کا دور جاری ہے ۔ مہاراشٹر اسمبلی میں اپوزیشن کے لیڈر دیویندر فڑنویس نے شرد پوار پر جوابی حملہ کرتے ہوئے کہا کہ شرد پوار نے اس سرکار کو بنایا ہے ، لہذا وہ اس کا دفاع کررہے ہیں ۔ وزیر اعلی اور وزیر داخلہ کے حکم پر سچن واجے کو سروس میں واپس لیا گیا ۔ پوار صاحب سچائی سے منہ موڑ رہے ہیں ۔ بی جے پی لیڈر نے کہا کہ اس معاملہ میں اس وقت تک غیر جانبدارانہ جانچ نہیں ہوسکتی ، جب تک کہ مہاراشٹر کے وزیر داخلہ اپنے عہدہ پر برقرار رہیں گے ۔ انل دیشمکھ کو غیر جانبدارانہ جانچ کیلئے اپنے عہدہ سے استعفی دینا چاہئے ۔


سابق وزیر اعلی نے اتوار کو کہا کہ پرمبیر سنگھ اور ڈی جی سبودھ جیسوال نے مہاراشٹر کے وزیر اعلی کو پولیس ٹرانسفر کے معاملہ میں بدعنوانی کو لے کر اپنی رپورٹ سونپی تھی ، لیکن وزیر اعلی نے کوئی کارروائی نہیں کی اور ڈی جی جیسوال کو اپنے عہدہ سے استعفی دینا پڑا ۔ بتادیں کہ منسکھ ہرین کی موت کے معاملہ میں مہاراشٹر اے ٹی ایس نے جن دو افراد کو حراست میں لیا تھا ، انہیں اب گرفتار کرلیا گیا ہے ۔


اس سے پہلے نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے سربراہ شرد پوار نے ممبئی میں سابق پولیس کمشنر پرمبیر سنگھ کے خط پر کہا کہ مہاراشٹر کے وزیر داخلہ کے خلاف لگائے گئے الزامات سنگین ہیں ۔ پوار نے کہا کہ مہاراشٹر کے وزیر اعلی کے پاس وزیر داخلہ پر عائد کئے گئے الزامات کی جانچ کرانے کی پوری طاقت ہے ۔


مہاراشٹر سرکار کو لاحق خطرے پر این سی پی سربراہ شرد پوار نے کہا کہ میں نہیں جانتا کہ سرکار گرانے کی کوشش ہورہی ہے یا نہیں ، لیکن میں صرف اتنا کہنا چاہتا ہوں کہ سرکار پر کوئی اثر نہیں ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 21, 2021 05:28 PM IST