உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ادھو ٹھاکرے نے ٹھکرایا اسد الدین اویسی کی پارٹی AIMIM کا آفر، ہندتوا ایجنڈہ پر بی جے پی کو گھیرا

    ادھو ٹھاکرے نے ٹھکرایا اسد الدین اویسی کی پارٹی AIMIM کا آفر، ہندتوا ایجنڈہ پر بی جے پی کو گھیرا

    ادھو ٹھاکرے نے ٹھکرایا اسد الدین اویسی کی پارٹی AIMIM کا آفر، ہندتوا ایجنڈہ پر بی جے پی کو گھیرا

    Uddhav Thackeray AIMIM BJP News: شیوسینا کے ایک ہندتوادی پارٹی ہونے کا تذکرہ کرتے ہوئے مہاراشٹر کے وزیر اعلی ادھو ٹھاکرے نے اتحاد کیلئے اے آئی ایم آئی ایم کی پیش کش کو اتوار کو مسترد کردیا ۔ ساتھ ہی اس کو مہاوکاس اگھاڑی سرکار کی قیادت کررہی پارٹی ( شیوسینا) کو بدنام کرنے کی بی جے پی کی سازش قرار دیا ۔

    • Share this:
      ممبئی : شیوسینا کے ایک ہندتوادی پارٹی ہونے کا تذکرہ کرتے ہوئے مہاراشٹر کے وزیر اعلی ادھو ٹھاکرے نے اتحاد کیلئے اے آئی ایم آئی ایم کی پیش کش کو اتوار کو مسترد کردیا ۔ ساتھ ہی اس کو مہاوکاس اگھاڑی سرکار کی قیادت کررہی پارٹی ( شیوسینا) کو بدنام کرنے کی بی جے پی کی سازش قرار دیا ۔ شیوسینا کی قیادت کررہے ٹھاکرے نے یہاں پارٹی کے ممبران پارلیمنٹ اور عہدیداروں کی ایک میٹنگ میں ڈیجیٹل ذریعہ سے خطاب کیا ، جس میں انہوں نے ہندتوا اور دیگر معاملات کو لے کر سابق ساتھی بی جے پی کی تنقید کی ۔

       

      یہ بھی پڑھئے:  ماریپول میں بھیانک تباہی، یوروپ کا سب سے بڑا اسٹیل پلانٹ تباہ، اسکول میں چھپے 400 لوگوں پر برسے بم


      شیوسیان ممبر پارلیمنٹ سنجے راوت نے ٹھاکرے کا حوالہ دیتے ہوئے صحافیوں سے کہا کہ بھلا کس نے اے آئی ایم آئی ایم سے اتحاد کرنے کا مطالبہ کیا ہے؟ یہ بی جے پی کا ایک گیم پلان اور سازش ہے ۔ اے آئی ایم آئی ایم اور بی جے پی کے درمیان تال میل ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی نے اے آئی ایم آئی ایم کو شیوسینا کو بدنام کرنے ، شیوسینا کے ہندوتوا  پر سوال اٹھانے کو کہا ہے ۔ اسی پر عمل کرتے ہوئے اے آئی ایم آئی ایم لیڈر اتحاد کی پیش کش کررہے ہیں ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: اگلے 5 سالوں میں ہندوستان میں 3.2 لاکھ کروڑ روپے کی سرمایہ کاری کرے گا جاپان، PM مودی نے کہا : اقتصادی رشتے ہوں گے مضبوط


      قابل ذکر ہے کہ ہفتہ کو اے آئی ایم آئی ایم کے ممبر پارلیمنٹ امتیاز جلیل نے کہا تھا کہ بی جے پی کو اقتدار میں آنے سے روکنے کیلئے ان کی پارٹی شیوسینا کی زیر قیادت ایم وی اے کے ساتھ گٹھ جوڑ کرسکتی ہے ۔ اس پر شیوسینا نے سخت رد عمل کا اظہار کیا ۔ ایم وی اے میں شامل دیگر پارٹی این سی پی اور کانگریس ہے ۔

      راجیہ سبھا رکن راوت نے کہا کہ شیوسینا ٹھاکرے کے حکم پر 22 مارچ کو ریاست کے ودربھ اور مراٹھواڑہ علاقہ کے 19 اضلاع میں ایک عوامی رابطہ پروگرام شروع کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ اس کا مقصد اس افواہ کو دور کرنا ہے ، جو بی جے پی مختلف معاملات پر شیوسینا کے بارے میں پیدا کرنے کی کوشش کررہی ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: