உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    خاص اعداد کے نوٹ جمع کرنے والے نکھل ٹھاکرانی نوٹ بندی سے پریشان

     مہاراشٹر کے پرتواڑہ کے رہنے والے  نکھل ٹھاکرانی نے ایسے خاص اعداد کے نوٹ جمع کیے ہیں جو کسی کو بھی حیرت میں ڈال سکتے ہیں۔

    مہاراشٹر کے پرتواڑہ کے رہنے والے نکھل ٹھاکرانی نے ایسے خاص اعداد کے نوٹ جمع کیے ہیں جو کسی کو بھی حیرت میں ڈال سکتے ہیں۔

    مہاراشٹر کے پرتواڑہ کے رہنے والے نکھل ٹھاکرانی نے ایسے خاص اعداد کے نوٹ جمع کیے ہیں جو کسی کو بھی حیرت میں ڈال سکتے ہیں۔

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:

      امراوتی۔ کالا دھن جمع کرنے والوں پر تو نوٹ بندی کا فیصلہ  جیسے ایک عذاب بن کر آیا ہی  ہے تاہم  کچھ اسی طرح یہ فیصلہ ان شائقین کے لئے بھی پریشانی کا سبب بنا ہے جو نوٹوں کو جمع کرنے کا شوق رکھتے ہیں۔ ایسے ہی ایک نوٹوں کو جمع کرنے والے مہاراشٹر کے پرتواڑہ کے نکھل پریشانی میں مبتلا ہیں ۔


      حکومت کا نوٹ بندی کا فیصلہ کتنا صیح تھا یا غلط یہ تو آنے والا وقت بتائے گا۔ لیکن حکومت کے اس فیصلے نے کالادھن جمع کرنے والوں کی ننید ضرور اڑا رکھی ہے۔ اسی کے ساتھ  حکومت کے اس نئے فیصلے نے نوٹوں کو جمع کرنے والے شائقین کو بھی پریشانی میں ڈال رکھا ہے، جس میں حکومت نے پانچ سو اور ایک ہزار کے پرانے نوٹ رکھنے والوں پر قانونی کاروائی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ دنیا میں بہت سے ایسے لوگ ہوتے ہیں جن میں دوسروں سے کچھ الگ کرنے کا جذبہ ہوتا ہےلیکن کبھی کچھ الگ کرنا انسان کو پریشانی میں ڈال سکتا ہے۔ جیسا  کہ نکھل ٹھاکرانی کے ساتھ ہوا ۔


      دراصل مہاراشٹر کے پرتواڑہ کے رہنے والے  نکھل ٹھاکرانی نے ایسے خاص اعداد کے نوٹ جمع کیے ہیں جو کسی کو بھی حیرت میں ڈال سکتے ہیں۔ پان کی دکان چلانے والے  نکھل نے گذشتہ دس سالوں میں دس سے لیکر ایک ہزار کے کل پچپن ہزار روپیے کے نوٹ جمع کیے ہیں  اور  نکھل کا یہ شوق ان دنوں ان کے لئے  درد سر بن گیا ہے۔  نکھل معاشی اعتبار سے کمزور ہیں اور حکومت کے نئے فیصلے نے انکی پریشانی میں مزید اضافہ کر دیا ہے۔ اب وہ چاہتے ہیں کہ ان کے اس شوق کو مدنظر رکھتے ہوئے ان کے یہ تمام نوٹ بدلے جائیں۔


      nikhil


       نکھل ٹھاکرانی کے نوٹوں کو جمع کرنے کا شوق کافی دلچسپ ہے۔  نکھل نے ایسے نوٹ جمع کیے ہیں جن کے نمبر تک بندی  والے ہیں۔ان کے دوست سنتوش کہتے ہیں کہ  نوٹوں کو جمع  کرنے کا  نکھل کا شوق ایک حیرت انگیز کارنامہ ہے۔


      First published: