உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہاتھی کے دانت بیچنے والے 2 اسمگلروں کو پولیس نے کیا گرفتار، 20 لاکھ روپے مالیت کے دانت برآمد

    مارکیٹ میں ہاتھی دانت کی قیمت تقریبا 20 لاکھ روپے ہے۔ دونوں ملزمین کے خلاف وائلڈ لائف پروٹیکشن ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کر کے گرفتار کیا ہے۔

    مارکیٹ میں ہاتھی دانت کی قیمت تقریبا 20 لاکھ روپے ہے۔ دونوں ملزمین کے خلاف وائلڈ لائف پروٹیکشن ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کر کے گرفتار کیا ہے۔

    مارکیٹ میں ہاتھی دانت کی قیمت تقریبا 20 لاکھ روپے ہے۔ دونوں ملزمین کے خلاف وائلڈ لائف پروٹیکشن ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کر کے گرفتار کیا ہے۔

    • Share this:
      پولیس نے گھاٹکوپرعلاقے میں ہاتھی کے دانت فروخت کرنے والے دو سمگلروں کو گرفتار کیا ہے۔ گرفتار ملزمین کے نام دیپک کمار پربھودیال ویشنو اور محمد فیروز حافظ شیخ ہیں۔ در اصل سب انسپکٹر مہیش شیلارکو اطلاع ملی تھی کہ دو افراد گھاٹکوپر ریلوے اسٹیشن کے قریب ہاتھی دانت فروخت کرنے آرہے ہیں۔ جس کے بعد پولیس نے جال بچھایا اور دونوں ملزمین کو گرفتار کرلیا۔ مارکیٹ میں ہاتھی دانت کی قیمت تقریبا 20 لاکھ روپے ہے۔ دونوں ملزمین کے خلاف وائلڈ لائف پروٹیکشن ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کر کے گرفتار کیا ہے۔

      اس بارے میں معلومات دیتے ہوئے جتیندر آگرکر (سینئر پولیس انسپکٹر گھاٹکوپر) نے کہا کہ ہم اس بات کی تحقیقات کر رہے ہیں کہ یہ دانت کہاں سے لائے گئے تھے اور کس کو بیچنے جا رہے تھے۔ کیا ملزم نے اس سے پہلے ایسا کوئی جرم کیا ہے۔ اس پورے کیس میں کتنے لوگ ملوث ہیں۔ وہ اس کی جڑ تلاش کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ یعنی پولیس نے اب ان کے مجرمانہ حساب کتاب کی تفتیش شروع کر دی ہے تاکہ اس کے بارے میں معلومات مل سکے کہ ہاتھی کے دانتوں کی اسمگلنگ میں مزید کتنے ملزم ملوث ہیں۔

      در اصل سب انسپکٹر مہیش شیلارکو اطلاع ملی تھی کہ دو افراد گھاٹکوپر ریلوے اسٹیشن کے قریب ہاتھی دانت فروخت کرنے آرہے ہیں۔


      ان شاطر ملزمین کو گھاٹکوپر پولیس اور محکمہ جنگلات کے عہدیداروں نے گرفتار کیا ہے ، محکمہ جنگلات نے اس معاملے میں اپنی تفتیش بھی تیز کر دی ہے تاکہ اس کے بارے میں معلومات حاصل کی جا سکے کہ ملزمین کیسے اور کہاں سے ہاتھی دانت لاتے تھے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: