உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مہاراشٹر: Eknath Shinde نے لکھا گورنر اور ڈپٹی اسپیکر کو لکھا خط

    Youtube Video

    ایکناتھ شندے کے باغیانہ تیور کے بعد،شیو سینا کو کئی محاُذ پھر امتحان کا سامنا ہے۔ شیو سینا کی قیادت میں مہاوکاس اگھاڑی حکومت کو مشکل سے نکالنے کے ساتھ ساتھ نگرپالیکا اور ضلعی سطح پر بھی پارٹی کو ٹوٹ پھوٹ سے بچانے کی جدوجہد اعلیٰ قیادت کررہی ہے۔

    • Share this:
      مہاراشٹر کا سیاسی بحران جاری ہے۔ وزیراعلیٰ ادھو ٹھاکرے کے جذباتی کارڈ کا کوئی اثرباغیوں کے تیور پرپڑتا دکھائی نہیں دے رہا ہے۔ انھیں مزید چارآزاد ارکان اسمبلی کی تائید حاصل ہونے کی خبرہے۔۔یعنی باغی اپنے موقف پرسختی سے قائم ہیں۔ذرائع کے مطابق شندے گروپ آج اپنی حمایت واپس لے سکتا ہے۔ ایکناتھ شندے نے اڑتالیس ارکان اسمبلی کی تائید کا دعویٰ کیا ہے۔ مزید سات باغی ارکان آج گوہاٹی پہنچے ہیں۔ذرائع کے مطابق گوہاٹی میں شیوسینا کے اکتالیس ارکان اسمبلی ہیں۔ اب مہاراشٹر کے ڈپٹی ڈپٹی اسپیکر  اور گورنر  کو خط لکھا ہے۔

      شیوسینا کی مشکلیں کم ہوتی دکھائی نہیں دے رہی ہیں۔ارکان اسمبلی کے سخت تیورکے درمیان اب ارکان پارلیمان کی صفوں میں بھی ہلچل دیکھی جارہی ہے۔ تھانے سے لوک سبھا رکن پارلیمان راجن وچارے اور کلیان لوک سبھا حلقے سے رکن شریکانت شندے،ایکناتھ شندے کی حمایت میں ہیں۔

      ادھر،وزیراعلیٰ ادھو ٹھاکرے نے آج پارٹی لیڈروں کی اہم میٹنگ بلائی ہے۔اس میٹنگ میں آئندہ کی حکمت عملی مرتب کی جائے گی ۔ ایکناتھ شندے کے باغیانہ تیور کے بعد،شیو سینا کو کئی محاُذ پھر امتحان کا سامنا ہے۔ شیو سینا کی قیادت میں مہاوکاس اگھاڑی حکومت کو مشکل سے نکالنے کے ساتھ ساتھ نگرپالیکا اور ضلعی سطح پر بھی پارٹی کو ٹوٹ پھوٹ سے بچانے کی جدوجہد اعلیٰ قیادت کررہی ہے۔ اسی سلسلے میں میٹنگوں کا سلسلہ جاری ہے۔ اب سے کچھ ہی دیگر بعد وزیراعلیٰ ادھو ٹھاکرے نے شیوسینا کے سبھی ضلع صدوراور رابطہ سربراہوں کی میٹنگ بلائی ہے۔ اس کے بعد آج ہی شام میں ممبئی مہا نگر پالیکا کے کارپوریٹروں کی بھی ہنگامی میٹنگ طلب کی گئی ہے۔

      واضح رہے کہبدھ کے روز اپنے خطاب میں ادھو ٹھاکرے نے باغیوں سے دو بدو بیٹھ کر بات کرنے پیشکش کی تھی۔انھوں نے وزارت اعلیٰ کا عہدہ چھوڑنے کی بات بھی کہی تھی۔

      مہاراشٹر کے سیاسی بحران کا معاملہ سپریم کورٹ پہنچ گیا ہے۔ ریاست کے سیاسی صورتحال پر سوال اٹھاتے ہوئے عدالت میں عرضی داخل کی گئی ہے۔ عرضی گزار نے دل بدل قانون کے تحت باغی ارکان اسمبلی کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔مدھیہ پردیش مہیلا کانگریس کی صدر وجیہ ٹھاکر نے سپریم کورٹ میں یہ عرضی داخل کی ہے ۔ عرضی میں نااہل اور استعفیٰ دینے والے ارکان اسمبلی کو چناؤ لڑنے سے روکنے اوران پر پانچ سال کی پابندی لگانے کا مطالبہ بھی کیا گیا ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: