உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مہاراشٹر کی سیاست نے لیا ڈرامائی موڑ، Shivsena اپنے 11 ممبران اسمبلی سے نہیں کرپارہی ہے رابطہ

    Youtube Video

    hivsena MLAs: بتایا جا رہا ہے کہ شندے اور دیگر ایم ایل اے سورت کے ایک 5 اسٹار ہوٹل میں ٹھہرے ہوئے ہیں۔ ذرائع کی مانیں تو یہ تمام ایم ایل اے MLAs پیر کی شام سات بجے چارٹرڈ فلائٹ سے سورت کے لیے روانہ ہوئے تھے۔

    • Share this:
      Maharashtra Politics: مہاراشٹر میں شیوسینا Shiv sena اور ادھو ٹھاکرے کی حکومت کو بڑا جھٹکا لگا ہے۔ مہا وکاس اگھاڑی MVA حکومت میں پارٹی ہائی کمان شہری ترقی کے وزیر ایکناتھ شندے سمیت شیوسینا کے 11 ایم ایل ایز سے رابطہ کرنے سے قاصر ہے۔ یہ واقعہ مہاراشٹرا قانون ساز اسمبلی کے انتخابات کے ایک دن بعد ہوئی ہے، جس میں بی جے پی نے حکمراں شیو سینا-این سی پی-کانگریس اتحاد کو ایک بڑا جھٹکا دیکر پانچویں سیٹ پر جیت درج کری۔

      بتایا جا رہا ہے کہ شندے اور دیگر ایم ایل اے سورت کے ایک 5 اسٹار ہوٹل میں ٹھہرے ہوئے ہیں۔ ذرائع کی مانیں تو یہ تمام ایم ایل اے MLAs پیر کی شام سات بجے چارٹرڈ فلائٹ سے سورت کے لیے روانہ ہوئے تھے۔ یہاں، ایم ایل سی انتخابات میں مشکوک کراس ووٹنگ کے بعد، سی ایم ادھو ٹھاکرے نے آج دوپہر 12 بجے شیوسینا کے تمام ایم ایل ایز کی فوری میٹنگ بلائی ہے۔ تمام ممبران اسمبلی کو سختی سے کہا گیا ہے کہ وہ میٹنگ میں موجود رہیں۔ ایم وی اے حلقہ کانگریس کے امیدوار چندرکانت ہنڈور کو ایم ایل سی الیکشن میں ہار گئے تھے۔




      10 جون کو راجیہ سبھا کے انتخابات کے بعد ایم ایل سی الیکشن ریاست میں مہاراشٹر وکاس اگھاڑی اتحاد کے لیے ایک اور چونکا دینے والا واقعہ ثابت ہوا۔ کیونکہ اہم اپوزیشن بی جے پی نے کانگریس کے پہلی ترجیحی امیدوار چندرکانت ہنڈور کو پچھاڑتے ہوئے قانون ساز کونسل میں اپنا اضافی امیدوار لانے میں کامیاب ہوگئی۔ آپ کو بتا دیں کہ راجیہ سبھا انتخابات میں بھی بی جے پی نے مہا وکاس اگھاڑی اتحاد کو حیران کرتے ہوئے اپنے تیسرے امیدوار دھننجے مہادک کی جیت کو یقینی بنایا تھا۔ شیوسینا کے سنجے پوار کو ہار کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ این سی پی کے سربراہ شرد پوار نے اسے دیویندر فڑنویس کا کرشمہ قرار دیا تھا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: