ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

سنسنی خیز! پونے میں بارہویں پاس شخص چلا رہا تھا اسپتال ، کورونا مریضوں کیلئے بنا رکھا تھا الگ وارڈ , جانئے کیسے کھلا راز

پونے کے شیرور تعلقہ میں یہ معاملہ سامنے آیا ہے ۔ یہاں ایک کمپاؤنڈر فرضی ڈاکٹر بن کر دو سال سے 22 بیڈوں پر مشتمل ایک اسپتال چلا رہا تھا ۔ اتنا ہی نہیں ملزم نے کووڈ مریضوں کے لئے ایک الگ وارڈ بھی بنا رکھا تھا ، جس میں مریضوں کا علاج کیا جارہا تھا ۔ پولیس کے مطابق ملزم ڈاکٹرفرضی ڈگری اور غلط نام سے اسپتال چلا رہا تھا ۔

  • Share this:
سنسنی خیز! پونے میں بارہویں پاس شخص چلا رہا تھا اسپتال ، کورونا مریضوں کیلئے بنا رکھا تھا الگ وارڈ , جانئے کیسے کھلا راز
سنسنی خیز! پونے میں بارہویں پاس شخص چلا رہا تھا اسپتال ، کورونا مریضوں کیلئے بنا رکھا تھا الگ وارڈ , جانئے کیسے کھلا راز

پونے : پونے شہر میں ایک ایسا معاملہ سامنے آیا ہے ، جس نے ہر کسی کو حیران کردیا ہے ۔ ایک بارہویں پاس شخص اسپتال چلا رہا تھا اور  پیسہ کمانے کے لئے لوگوں کی زندگیوں سے کھلواڑ کررہا تھا ۔ اس فرضی ڈاکٹر کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے ۔ کورونا جیسی مہلک بیماری سے لوگوں کی جانیں جا رہی ہیں اور ایسے حالات میں فرضی ڈاکٹر نے کورونا مریضوں کے لئے ایک الگ اسپتال بنا رکھا تھا۔


پونے کے شیرور تعلقہ میں یہ معاملہ سامنے آیا ہے ۔ یہاں ایک کمپاؤنڈر فرضی ڈاکٹر بن کر دو سال سے 22 بیڈوں پر مشتمل ایک اسپتال چلا رہا تھا ۔ اتنا ہی نہیں ملزم نے کووڈ مریضوں کے لئے ایک الگ وارڈ بھی بنا رکھا تھا ، جس میں مریضوں کا علاج کیا جارہا تھا ۔ پولیس کے مطابق ملزم  ڈاکٹرفرضی ڈگری اور غلط نام سے اسپتال چلا رہا تھا ۔


دراصل یہ معاملہ اس وقت سامنے آیا ، جب ملزم نے اسپتال چلانے کے لئے ایک شخص سے پارٹنر شپ کی ۔ پھر دونوں کے بیچ پیسے کو لے کر تنازع ہوا اور معاملہ پولیس اسٹیشن پہنچ گیا ۔ پولیس نے اس معاملہ کی سنجیدگی سے تحقیقات شروع کی تو سارا معاملہ کھل کر سامنے آگیا ۔ پولیس نے بتایا کہ ملزم کا نام محبوب شیخ ہے اور وہ ڈاکٹر مہیش پاٹل کے نام سے فرضی ڈگری کے ساتھ موریہ اسپتال چلا رہا تھا ۔ پولیس نے ملزم کو حراست میں لے لیا ہے اور جانچ میں مصروف ہوگئی ہے۔


بتایا جاتا ہے کہ فرضی ڈاکٹر ناندیڑ کا رہنے والا ہے ۔ پولیس ملزم کے خلاف فریب دہی اور مہاراشٹر میڈیکل ایکٹ کے تحت معاملہ درج کرکے معاملہ کی جانچ کر رہی ہے کہ اسپتال چلانے کیلئے ملزم نے جعلی سرٹیفکیٹ ، آدھار کارڈ اور دیگر کاغذات  کہاں سے بنوائے تھے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 14, 2021 07:33 PM IST