ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

 ممبئی: دھاراوی میں کوروناوائرس کے نئے 11 مریض پائے جانے سےخوف کا ماحول

ممبئی (mumbai ) کی سب سے بڑی جھوپڑپٹی دھاراوی میں کورونا وائرس کا قہر تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور یہاں مریضوں کی تعداد میں ہر روز اضافہ ہی درج کیا جارہا ہے آج بھی یہاں 11نئے مثبت مریض (Coronavirus Positive) پائے گئے ہیں جبکہ اب تک 8 اموات ہوچکی ہے ایسے میں دھاراوی (dharavi) سرکار و انتظامیہ اور ایم سی کیلئے چیلنج بن گیا ہے۔

  • Share this:

ممبئی (mumbai ) کی سب سے بڑی جھوپڑپٹی دھاراوی میں کورونا وائرس کا قہر تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور یہاں مریضوں کی تعداد میں ہر روز  اضافہ ہی درج کیا جارہا ہے آج بھی یہاں 11نئے مثبت مریض (Coronavirus Positive) پائے گئے ہیں جبکہ اب تک 8 اموات ہوچکی ہے ایسے میں دھاراوی (dharavi) سرکار و انتظامیہ اور ایم سی کیلئے چیلنج بن گیا ہے۔  دھاراوی ہندوستان ہی نہیں بلکہ ایشاء کی سب سے بڑی اور گنجان آبادی والی جھونپڑپٹی ہے۔ سب سے گنجان آبادی ہونے کے سبب یہاں پر کورونا کو قابو میں کرنا مشکل ترین عمل بنتا جارہا ہے۔


دھاراوی میں اب تک کرونا مثبت مریضوں کی تعداد 71 سے تجاوز  کر گئی ہے اور مسلسل اس میں اضافہ بھی درج کیا جارہا ہے دھاراوی کے مکند نگر میں آج چار مریض پائے گئے ہیں سوشل نگر میں دو مریض ملے ہیں جس میں ایک خاتون بھی شامل ہے۔

دھاراوی کے راجیو نگر میں دو سائی راج نگر, ٹرانزٹ کیمپ اور رام جی نگر میں فی کس ایک مریض پائے گئے ہیں۔ یہ علاقے پوری طرح سے سیل کر دئیے گئے ہیں اور ان کے اطراف کے علاقوں میں بھی طبی جانچ کا کام جاری ہے۔ دھاراوی کے مکند نگر میں اب تک 18 سوشل نگر میں 8 مسلم نگر, جنتا سوسائٹی فی کس 7 بالیگا نگر میں 5 کولی واڑہ راجیو گاندھی چال اور شاستری نگر میں فی کس چار ویبھو اپارٹمنٹ,مدینہ نگر, مرغن چال میں فی کس دو دھناوڑے چال,پی ایم جی کالونی, نہرو چال, اندرا چال, گلموہر, سائی راج,رام راج میں فی کس ایک مریض پائے گئے ہیں دھاراوی میں اب تک بالیگا نگر میں 3کولی واڑہ میں 2 سوشل نگر, مسلم نگر اور نہرو چال فی کس ایک کی اموات ہوچکی ہے۔ دھاراوی میں کرونا کے مثبت مریضوں کی تعداد میں بے تحاشہ اضافہ نے بی ایم سی کو فکر مند کر دیا ہے یہاں گھر گھر جاکر طبی جانچ اور بخار کلینک کا بھی آغازکر دیا گیا ہے۔

دھاراوی میں کرونا کا پھیلاؤ حالات بد سےبدترعوامی بیت الخلاء اور گنجان آبادی بھی کرونا وائرس کے پھیلاؤ کا سبب, یومیہ مزدور کے ساتھ اب متوسط طبقہ بھی پریشان حال, سرکار کی عدم توجہی اور سہولیات کے فقدان کے سبب مریضوں کی تعداد میں اضافہ درج کیا جارہاہے۔

First published: Apr 17, 2020 12:37 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading