உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مودی حکومت پر کسانوں کو نہیں اعتبار، جب تک پارلیمنٹ میں بل واپس نہیں ہوگا، نہیں جائیں گے گھر: نانا پٹولے

    ممبئی میں کسان مہا پنچایت کی تیاریاں شروعکسان لیڈر راکیش ٹکیٹ کی آمد متوقعممبئی میں منعقد پریس کانفرنس میں  مہاراشٹر کانگریس صدر نانا پٹولے کا خطاب 

    ممبئی میں کسان مہا پنچایت کی تیاریاں شروعکسان لیڈر راکیش ٹکیٹ کی آمد متوقعممبئی میں منعقد پریس کانفرنس میں  مہاراشٹر کانگریس صدر نانا پٹولے کا خطاب 

    ممبئی میں کسان مہا پنچایت کی تیاریاں شروعکسان لیڈر راکیش ٹکیٹ کی آمد متوقعممبئی میں منعقد پریس کانفرنس میں  مہاراشٹر کانگریس صدر نانا پٹولے کا خطاب 

    • Share this:
    ممبئی مرکزی سرکار پرکسانوں کا ہی نہیں عوام کا بھی اعتماد متزلزل ہوگیا ہے کسانوں کے خلاف سیاہ قانون کی واپسی کے بعد بھی مودی سرکار کے وزراء اور رکن پارلیمان متضاد بیان دے کر کسانوں کا مذاق اڑا رہے ہیں۔ اس لئے اب کسانوں کا اعتبار مودی سرکار نے کھو دیا ہے   جب تک پارلیمنٹ سے بل واپسی نہیں ہوتی کسان اپنےگھروں پر نہیں جائیں گے۔ اس قسم کا اظہار خیالات آج یہاں مراٹھی پترکار سنگھ میں سینکت مورچہ کسان مورچہ کی پریس کانفرنس میں مہاراشٹر کانگریس کے صدر ناناپٹولے نے کیا اور مودی سرکار پر سخت الفاظ میں تنقید کرتے ہوئے اسے ملک بیچنے  والی سرکار قرار دی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی بی جے پی سرکار نے کسانوں اور عوام کی جو حالت کی اس سے سب وقف ہے کسانوں کے خلاف سیاہ قانون تیار کرکے کسانوں کودلی میں داخلہ نہ ہو اس لئے سڑکوں پر کیل لگایا گیا لکھیم پور میں کسانوں کو وزیر کے فرزند نے کار سے کچل دیا اب تک وزیر کا استعفی نہیں  لیا گیا ان شہیدوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے ان  کی استھی مہاراشٹر میں لائی جارہی ہے ۔

    28  نومبر کے کسان تحریک میں مہاوکاس اگھاڑی  میں تمام پارٹیاں اور تنظیمیں شریک ہے سیاہ قانون واپسی کے بعد بھی کسان اپنےگھر واپس اس لئے نہیں جارہے ہیں کیونکہ کسانوں اور عوام کا اعتماد سرکار اورمودی جی سے اٹھ گیا ہے بی جے پی پر تنقید کرتےہوئے نانا پٹولے نے کہا کہ بی جے پی ملک کو فروخت کر ر ہی ہے اس ملک کی حفاظت کے لئے کسان سڑکوں پر ہے کسانوں نے اس کے لئے قربانیاں ی ہیں جو رائیگاں نہیں جائے گی  ۔ وزیر اقلیتی امور نواب ملک نے کہا کہ کسانوں کا احتجاج جاری تھا اس وقت لال قلعہ کا حادثہ کی آڑ میں حالات خراب کرنا اور کسانوں پر مظالم اور تشدد برپاکرناکسانوں کو کچلنا ہرطرح کے ہتھکنڈے سرکار نے استعمال کئے لیکن وہ ناکام رہی اورکسانوں کی فتح ہوئی ہے لکھیم پور کھیری میں جو حادثہ ہوا وہ خوفناک تھا۔

    اس لئے اس سانحہ میں شہید  کسانوں کی استھیوں کو مہاراشٹر اور ممبئی میں  لایا جائے گا انہوں نے کہا کہ کسان آندولن نے پہلی مرتبہ مودی سرکارکو گھٹنےٹیکنے پر مجبور کیا الیکشن قریب ہے اس لئے مودی جی نے اس قانون کو واپس لینے کا اعلان کیا ہے کسانوں کا مکمل مطالبہ اب تک پورانہیں ہوا ہے ایم ایس پی پر قانون تیار نہیں کیا گیا  شہید کسانوں کو فی کس ایک کروڑ وپے سرکار ہرجانہ و معاوضہ اداکرے سرکار اگر پہلے روز ہی یہ بل  سرکار واپس لیتی تو کسان شہید نہیں ہوتے لکھیم پورکھیری سانحہ پر وزیر کو مستعفی کیا جائے بھارتیہ جنتا پارٹی کسانوں کو لوٹ مار کرنے والی پارٹی ہے کسانوں کے مال کو لوٹ مار کرنے والوں کے ساتھ بی جے پی ہے اس پر ریاستی سرکار مزدوراورکسانوں کے حق  کے لئے آواز بلند کر رہی ہے ۔  نواب ملک نے مودی سرکار کو ہدف تنقیدبناتے ہوئے کہا کہ کسانوں کے خلاف مودی سرکار کا سیاہ قانون جس کی مخالفت پورا ملک کر رہا تھا۔

    اس میں مودی جی اور ان کے رفقا گمراہ کن بیان دےکر یہ کہتے ہیں کہ کچھ کسانوں کو اس بل کا فائدہ سمجھانے میں وہ ناکام رہے ہیں وہ کچھ کسان کون ہے جبکہ پورا ملک جانتا ہے کہ کسان نے اس قانون کی مشترکہ مخالفت کی ہے۔ کسان مزدور تنظیم کے لیڈر پرکاش ریڈی نے بتایا کہ کسان مشترکہ مورچہ کا انعقاد کیا گیا ممبئی کے آزاد میدان میں کسان لیڈر راکیش ٹکیٹ اس مورچہ کی سربراہی کریں گے جبکہ یہ خالص کسان تنظیموں کا احتجاج اور مہا پنچایت ہے اس مورچہ میں ریاست بھر سے کسانوں کی شرکت متوقع ہے۔ اس دو روزہ 27-28 نومبر 27نومبر کو کلش یاترااور آزاد میدان میں مشترکہ کسان مورچہ جلسہ کا انعقاد ہو گا اس میں لکھیم پور کھیری میں شہید کسان کے استھی کلش یاترا کا انعقاد ہوگا اس یاترا میں ریاست بھر سے کسان اور تنظیمیں شریک ہو گی 27 کو شیواجی پارک سے استھی کلش یاترانکالی جائے گی اور مختلف علاقوں میں گشت کرے گی ۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: