ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

مہاراشٹر میں کورونا کے فعال کیسز 72000 سے متجاوز، ادھوٹھاکرے حکومت نے اٹھایا سخت قدم

ملک میں کورونا وبا سے سب سے زیادہ سنگین طور پر متاثر مہاراشٹر گذشتہ 24 گھنٹوں میں ایک بار پھر سے 8000 سے زیادہ نئے کیسز سامنے آئے اور فعال کیسز میں 4،900 سے زیادہ کا اضافہ درج کیا گیا جو ملک میں سب سے زیادہ ہے۔

  • Share this:
مہاراشٹر میں کورونا کے فعال کیسز 72000 سے متجاوز، ادھوٹھاکرے حکومت نے اٹھایا سخت قدم
مہاراشٹر میں کورونا کے فعال کیسز 72000 سے متجاوز، ادھوٹھاکرے حکومت نے اٹھایا سخت قدم

ممبئی: ملک میں کورونا وبا سے سب سے زیادہ سنگین طور پر متاثر مہاراشٹر گذشتہ 24 گھنٹوں میں ایک بار پھر سے 8000 سے زیادہ نئے کیسز سامنے آئے اور فعال کیسز میں 4،900 سے زیادہ کا اضافہ درج کیا گیا جو ملک میں سب سے زیادہ ہے۔ اس دوران فعال کسیز میں 4,922 کا مزید اضافہ ہونے کی وجہ سے ان کی تعداد ہفتے کے روز بڑھ کر 72530 تک پہنچ گئی۔

ریاست میں اس دوران وائرس کے سب سے زیادہ (پورے ملک میں) 8623 نئے کیسز کے سامنے آنے سے متاثرین کی کل تعداد بڑھ کر 2146777 ہو گئی ہے۔ قبل ازیں جمعہ کے روز 8333 جمعرات کو 8702، بدھ کے روز 8807، منگل کے روز 6318 نئے کیسز، پیر کے روز 5210 کیسز، اتوار کو 6971 کیسز، ہفتے کے روز 6281 نئے کیسز اور جمعہ کے روز 6112 کیسز سامنے آئے تھے۔

سرکاری ذرائع کے مطابق دریں اثناء 3648 مریضوں کے صحتیاب ہونے سے کورونا وائرس سے نجات پانے والوں کی تعداد بڑھ کر 2020951 ہو گئی ہے اور سب سے زیادہ 81 مریضوں کی موت سے ہلاکتوں کے اعداد و شمار 52092 تک پہنچ گئی۔ ریاست میں مریضوں کے صحتیاب ہونے کی شرح جزوی طور پر کم ہونے کے ساتھ 94.13 فیصد ہو گئی جبکہ شرح اموات 2.45 فیصد ہے۔ غور طلب ہے کہ مہاراشٹر ملک میں کورونا وائرس کی زد میں آنے کے بعد کل صحتیاب ہونے والے اور اس وائرس سے ہونے والی اموات کے کیسز میں پہلے مقام پر ہے۔


یکم مارچ سے بدل رہے ہیں کورونا ویکسینیشن کے ضوابط


اس درمیان بڑھتے معاملوں کے پیش نظر مرکزی حکومت نے کورونا ویکسینیشن کے ضوابط میں تبدیلی کی ہے۔ وزارت نے کہا ہے کہ ’یکم مارچ سے ملک گیر ٹیکہ کاری کی بڑے پر توسیع کی جا رہی ہے، جس سے کہ 60 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں اور پہلے سے ہی کسی دیگر بیماری سے متاثر 45 سے زیادہ عمرک ے لوگوں کو اس میں شامل کیا جاسکے‘۔ حکومت کی کوشش ہے کہ تیزی سے ویکسینیشن کا دائرہ بڑھاکر انفیکشن کی چین توڑنے کی کوشش کو رفتار دی جائے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Feb 27, 2021 11:51 PM IST