ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

لاک ڈاؤن کے دوران سائبر جرائم کے معاملات میں اضافہ 

  • Share this:
لاک ڈاؤن کے دوران سائبر جرائم کے معاملات میں اضافہ 
Representative image. (Photo: Getty Images)

ممبئی: ریاست میں لاک ڈاؤن کے دوران مہاراشٹر سائبر سیل نے اب تک 201 معاملات درج کئے ہیں جبکہ صرف بیڑ ضلع میں 26 معاملات درج کئے گئے ہیں اس قسم کی اطلاع آج یہاں سائبر محکمہ کے آئی جی نے دی ہے ریاست میں سائبر سیل نے ایسے افراد اور سماج دشمن عناصر اور نفرت انگیزی کا مظاہرہ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی ہے جو لاک ڈاؤن کے دوران افواہ پھیلانے  کے ساتھ معاشرے میں تفریق پیدا کرنے کی سازش کر تے ہوئے پائے گئے ہیں۔ مہاراشٹر سائبر سیل نے فیس بک ٹوئیٹر اور دیگر سوشل میڈیا ذرائع کے غیر ضروری استعمال پر یہ کارروائی کی  ہے ریاست میں مختلف پولیس اسٹیشن میں 201 معاملات 14  اپریل 2020  تک درج کئے گئے ہیں۔

اس میں سب سے زیادہ بیڑ میں 26 معاملات درج کئے گئے ہیں۔ کولہاپور میں 15 جلگاؤں میں 13 پونہ دیہی میں 11 ممبئی 10 سانگلی 10 جالنہ 9 ناسک دیہی 8 ستارہ 7 ناندیڑ 7 پربھنی 7 ناسک شہر 6 ناگپور شہر 5 سندھو درگ 5 تھانہ شہر 5 بلڈھانہ 4 پونہ شہر 4 لاتور 4  گوندیا 4  شولاپور دیہی 5 شولاپور شہر 3 نئی ممبئی 2 عثمان آباد 2  تھانہ دیہی 1 دھولیہ 1 معاملات شامل ہیں ان اضلاع اور ریاستوں میں سوشل میڈیا ذرائع پر یہ معاملات درج کئے گئے ہیں تاکہ افواہ پھیلانے والوں پر کارروائی ہو اس لئے انتظامیہ نے بھی یہ واضح کیا ہے کہ سوشل میڈیا پر اشتعال انگیز اور دیگر مشمولات کو شئیر کر نے سے گریز کیا جائے کیونکہ لاک ڈاؤن کے دوران مذہبی منافرت پھیلانے کی کوشش شروع کر دی گئی ہے۔


زیادہ تر جرائم میں وہاٹس اپ پیغامات کو شیئر کر نے کیلئے استعمال کیا گیا ہے  اس قسم کے معاملات 99  صرف وہاٹس اپ میں سامنے آئے ہیں۔ جبکہ فیس بک پر 66  پوسٹ شیئر کئے گئے ہیں جس پر معاملات درج کئے گئے ہیں اسی طرح ٹک ٹاک ویڈیو کے تین معاملات ٹوئیٹر پر متنازع مشمولات شائع کر نے کے تین معاملات سوشل میڈیا کی ویڈیو کلپ اور دیگر ذرائع کے معاملات جس میں یو ٹیوپ کل 37 معاملات سامنے آئے ہیں جس کے بعد کیس درج کر کے 37 ملزمین کو گرفتار بھی کر لیا ہے۔

نئی ممبئی کے کوپر کھیرنار ایک شخص نے ہندوستان کی توہین کا ارتکاب کیا تھا اور ہندوستانی پرچم کی توہین کی تھی جسے اس نے انسٹا گرام پر اپ لوڈ کیا تھا اس پر کوپر کھیر نار پولیس نے معاملہ درج کر لیا ہے۔ کرونا کی وبا ء کے دوران ریزرو بینک آف انڈیا نے آفت کی وجہ سے تین ماہ تک بینک کے قرض اور دیگر معاملات میں سہولت دینے کا اعلان کیا ہے اس دوران سماج دشمن  عناصر اس کا فائدہ اٹھا کر اپنے مفاد کیلئے ایس ایم ایس کر کے بینک اکاؤنٹ کو جدید بنانے کی آڑ میں او ٹی پی نمبر اور دیگر تفصیلات حاصل کر نے کی کوشش کر رہے ہیں ان سے بھی محتاط رہنے کی ضرورت ہے اس لئے او ٹی پی یا کسی بھی قسم کی کوئی کریڈیٹ ڈیبٹ کارڈ اور دیگر نمبر ایسے افراد کو فراہم نہ کیا جائے اگر آپ اوٹی پی نمبر فراہم کرتے ہیں تو آپ کے اکاؤنٹ سے کچھ ہی منٹوں میں رقم نکال لی جائے گی سائبر سیل نے تمام عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ بینک اکاؤنٹ کی تفصیلات یا دیگر اہم تفصیلات کسی بھی قیمت پر کسی نامعلوم فون کالز پر فراہم نہ کریں کیونکہ بینک کے پاس آپ کی تفصیلات پہلے سے ہی موجود ہے اگر کوئی اس قسم کا کوئی فون کر تا ہے تو اپنے بینک کا مطلع کریں اگر کوئی دھوکہ دہی کا شکار ہوتا ہے تو وہ www.cybercrime.gov.in اس ویب سائٹ پر اس کی شکایت کرسکتا ہے۔

First published: Apr 16, 2020 11:52 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading