உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پولیس نے ساڑھے تین کروڑ کی رقم ضبط کی، پولیس تفتیش میں مصروف

    پولیس نے ساڑھے تین کروڑ کی رقم ضبط کی، پولیس تفتیش میں مصروف

    ممبئی کے راجاپیٹھ پولیس نے فرشی اسٹاپ کے قریب دو اسکارپیو گاڑیوں کی تلاشی لی، جس میں تقریباً ساڑھے تین کروڑ روپئے ملے ہیں۔ دونوں گاڑیوں میں 4 افراد موجود تھے۔

    • Share this:
    ممبئی: مقامی راجاپیٹھ پولیس نے فرشی اسٹاپ کے قریب دو اسکارپیو گاڑیوں کی تلاشی لی، جس میں تقریباً ساڑھے تین کروڑ روپئے ملے ہیں۔ دونوں گاڑیوں میں 4 افراد موجود تھے، جن کے بتانے پر دیگر دو افراد کو بھی پوچھ گچھ کے لئے تحویل میں لیا گیا۔ جب پولیس نے ان سے اس رقم کے بارے میں پوچھ گچھ کی تو وہ کوئی تسلی بخش جواب نہیں دے سکے۔ گاڑی میں موجود لوگوں کے ذریعہ ٹھوس معلومات نہ دینے کی وجہ سے یہ پیسہ کس کا ہے اور کہاں سے لایا جا رہا ہے، اس کے بارے میں کچھ نہیں کہا جاسکتا۔ پولیس دونوں گاڑیاں اور ان میں موجود لوگوں کو تھانے لے آئی اور ان سے پوچھ گچھ کی۔ باقی دو افراد، جن میں 4 افراد شامل تھے۔ تقریباً تین گھنٹے تک ان سے پوچھ گچھ کی، تب پتہ چلا کہ یہ 6 افراد ریاست گجرات کے احمد آباد کے رہنے والے  ہیں اور امراوتی کے راستے اورنگ آباد جارہے تھے۔ راجا پیٹھ پولیس کے مطابق ضبط شدہ رقم تقریباً 30 کروڑ روپئے ہے۔

    ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق راجا پیٹھ پولیس کو اطلاع ملی تھی کہ دستور نگر کمپلیکس کے ایک اپارٹمنٹ سے رات کے وقت یہاں سے وہاں بڑی رقم ادھر ادھر بھیجی جا رہی ہے۔ اس اطلاع کی بنیاد پر راج پیٹھ کے تھانہ انچارج منیش ٹھاکرے نے دو بجے کے بعد ڈی بی اسکواڈ کے اہلکاروں اتل سمبھے، راہل ڈھینگیکر، دانش شیخ، دلارم دیوکر اور امول کھنڈے جھوڈ کو وہاں تعینات کیا گیا تھا۔

    مقامی راجاپیٹھ پولیس نے فرشی اسٹاپ کے قریب دو اسکارپیو گاڑیوں کی تلاشی لی، جس میں تقریباً ساڑھے تین کروڑ روپئے ملے ہیں۔
    مقامی راجاپیٹھ پولیس نے فرشی اسٹاپ کے قریب دو اسکارپیو گاڑیوں کی تلاشی لی، جس میں تقریباً ساڑھے تین کروڑ روپئے ملے ہیں۔


    پولیس کے یہ نوجوان رات کو اس راستے سے گزرنے والی ہر گاڑی کی تلاشی لے رہے تھے۔ صبح 5 بجے دو اسکارپیو گاڑیاں جو ایم ایچ 18 بی آر 1434 اور ایم ایچ 20 ڈی بی 5774 نمبر کی گاڑی فارسی اسٹاپ کے قریب پٹرول پمپ کے قریب آتے دیکھا گیا اور دونوں گاڑیوں کی تلاشی لی۔ ان دو اسکارپیو گاڑیوں میں دو ڈرائیوروں سمیت 4 افراد موجود تھے، جن کے نام ڈرائیور شیودت مہیندر گوہل 30، سمیر، تہہ اونا، ضلع گرسومنا، واگیلا سیلوجی جوراجی 49، وسئی، تحصیل چانسمن، ضلع پٹن)، کار ڈرائیور رام دیو بابادور سنگھ راٹھود (24، سمر، تحہ اونہ) ہیں۔ ضلع گیرسومنا اور نریندر دلیپ سنگھ گوہل 27، راجولا، ضلع امریلی)۔ ان کی پوچھ گچھ کی بنیاد پر نلیش بھرت بھائی پٹیل 27، سنتھال، ضلع مہسانا اور جیگنیش راجیش گری گوسوامی 26، مہسانا گجرات کے تمام رہائشی کو پولیس نے اپنی تحویل میں لے لیا ہے۔

    اس وقت پکڑی جانے والی دو اسکارپیو گاڑیوں سے 3 کروڑ 50 لاکھ 9 ہزار 100 روپئے سمیت 50 ہزار روپئے مالیت کے پانچ اینڈرائڈ فون برآمد ہوئے ہیں۔ دوسری جانب وینا اپارٹمنٹ میں واقع فلیٹ سے دو گنتی کرنے والی مشینیں اور تین اینڈرائڈ موبائل برآمد ہوئے۔ نقد رقم، اینڈرائیڈ موبائل، ہیسے گرنے والی مشین اور دو اسکارپیو گاڑیاں سمیت مجموعی طور پر 3 کروڑ 72 لاکھ 69 ہزار 100 روپئے اس فلیٹ سےچھاپے کے دوران برآمد کئے گئے۔

    دو اسکارپیو گاڑیوں سے 3 کروڑ 50 لاکھ 9 ہزار 100 روپئے سمیت 50 ہزار روپئے مالیت کے پانچ اینڈرائڈ فون برآمد ہوئے ہیں۔
    دو اسکارپیو گاڑیوں سے 3 کروڑ 50 لاکھ 9 ہزار 100 روپئے سمیت 50 ہزار روپئے مالیت کے پانچ اینڈرائڈ فون برآمد ہوئے ہیں۔


    قابل ذکر ہے کہ ان دونوں گاڑیوں کے نچلے حصے میں پیسہ لے جانے کے لئے سیٹ کے نیچے پیسہ رکھنے کے لئے ایک بڑا خانہ بنایا گیا تھا، جس میں تقریباً ساڑھے تین کروڑ کی نقد رقم چھپائی گئی تھی۔ گاڑی میں موجود افراد نے نہ ہی پولیس کو اس رقم کے بارے میں ٹھوس ثبوت دیئے اور نہ ہی کوئی تفصیلی معلومات دی، جس کی وجہ سے راجا پیٹھ پولیس انسپکٹر منیش ٹھاکرگاڑیوں میں سوار چار افراد اور ان کے دو ساتھیوں کو راجاپیٹھ تھانے لایا اور اسے بندکرا دیا۔ ساتھ ہی فوری طور پر سٹی پولیس کمشنر ڈاکٹر آرتی سنگھ اور ڈپٹی کمشنر پولیس کمشنر ششی کامت ساتو کا بتائی۔

    پولیس نے ان دونوں اسکارپیو کو بھی اپنی گرفت میں لے لیا ہے۔
    پولیس نے ان دونوں اسکارپیو کو بھی اپنی گرفت میں لے لیا ہے۔


    اسی دوران راجاپیٹھ پولیس اسٹیشن میں نوٹ گنتی مشین  لائی گئی، جس کے ذریعے دونوں گاڑیوں سے برآمد شدہ رقم گننے کا کام شروع کیا گیا۔ اس کے ساتھ ہی سینئر پولیس افسران کی ہدایت پر معاملہ محکمہ انکم ٹیکس اور ٹریژری محکمہ کو دی، جس کے بعد محکمہ میالیات کے عہدیدار دوپہر 2 بجے راجایپتھ پولیس اسٹیشن پہنچے۔ اسی دوران، پولیس کی طرف سے مسلسل تفتیش کے دوران، ان تمام 6 افراد نے بتایا گیا کہ وہ ریاست گجرات کے احمد آباد شہر کے رہائشی ہیں اور اورنگ آباد جا رہے ہیں، لیکن کافی تفتیش کے بعد ان 6 افراد نے سرکاری طور پر اس بارے میں کوئی معلومات نہیں دی ہے کہ انہیں یہ رقم کہاں سے ملی ہے اور یہ رقم کہاں منتقل کی جانی والی تھی۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: