உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ممبئی میں ذاکر نائیک کے آئی آر ایف کے جنوبی شہرمیں واقع دفاتر پر پہنچی پولیس کی ٹیم

    گزشتہ روز ہی حکومت مہاراشٹر نے ادارے کی نگرانی میں جنوبی ممبئی میں واقع اسلامک انٹرنیشنل اسکول پر قبضہ کرنے اور ایڈمنسٹر کو بیٹھانے کے منصوبے پر عمل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

    گزشتہ روز ہی حکومت مہاراشٹر نے ادارے کی نگرانی میں جنوبی ممبئی میں واقع اسلامک انٹرنیشنل اسکول پر قبضہ کرنے اور ایڈمنسٹر کو بیٹھانے کے منصوبے پر عمل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

    گزشتہ روز ہی حکومت مہاراشٹر نے ادارے کی نگرانی میں جنوبی ممبئی میں واقع اسلامک انٹرنیشنل اسکول پر قبضہ کرنے اور ایڈمنسٹر کو بیٹھانے کے منصوبے پر عمل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      ممبئی۔ ممبئی میں واقع اسلامی اسکالر ڈاکٹر ذاکر نائیک کی غیر سرکاری (این جی او) تنظیم  اسلامک  ریسرچ فاونڈیشن (آئی آر ایف)کے جنوبی شہرمیں واقع دفاتر پر پولیس کی ایک ٹیم پہنچ چکی ہے۔ چند روز قبل مرکزی حکومت نے آئی آر ایف پر پانچ سال کی پابندی عائد کرنے کا اعلان کیا تھا۔ گزشتہ روز ہی حکومت مہاراشٹر نے ادارے کی نگرانی میں جنوبی ممبئی میں واقع اسلامک انٹرنیشنل اسکول پر قبضہ کرنے اور ایڈمنسٹر کو بیٹھانے کے منصوبے پر عمل کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اسے اپنی تحویل میں لینے کا اعلان کیا ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ پولیس آئی آر ایف کے ڈونگر ی علاقہ میں واقع چار دفاتر میں پہنچ چکی ہے اور تمام  دستاویزات اور دیگر امور کا جائزہ اور جانچ کے بعد ان دفاتر کو سیل کراجاسکتا ہے۔


      گزشتہ روز مہاراشٹر کے وزیر برائے اسکول اور اعلیٰ تعلیم ونود تاوڑے نے کہا تھا کہ ریاستی سرکارکو مرکزی حکومت سے ایک بارنوٹیفکیشن موصول ہوجائے اور اس کے بعد محکمہ تعلیم اس ضمن میں اقدامات کرے گا اور پابندی کے بارے میں رائج اصولوں اور ضوابط کے تحت کارروائی کی جائے گی اور اس کا بات کا مکمل خیال رکھاجائے گا کہ طلباء اور اساتذہ متاثر نہ ہوں۔اسکول کو کس طرح حاصل کیا جائے گا اس کے بارے میں بعد میں فیصلہ ہوگا۔ ذرائع کے مطابق منگل کو پابندی کے باوجود جنوبی ممبئی میں واقع آئی آر ایف کے صدر دفتر اور اسکول میں سرگرمیاں معمول کے مطابق جاری ہیں۔ کیونکہ اب تک مرکزی حکومت کا نوٹیفکیشن جاری نہیں ہوا ہے۔


      واضح رہے کہ کئی ریاستوں اور ممبئی پولیس کمشنر کی رپورٹوں کے بعد مرکزی کابینہ نے گزشتہ منگل کو آئی آرایف پر اس کے بانی ذاکر نائیک کی متنازع اور قابل اعتراض تقاریر اور مواد کے پیش نظر مجرمانہ معاملات داخل کیے ہیں ،اس این جی او کے ممبئی ،سندھو درگ کوکن اور جنوبی ریاست کیرالا میں واقع مراکز کے ممبران کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ آئی آر ایف نے اس پابندی کو ٹریبونل میں چیلنج کرنے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔

      First published: