உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    MVA Crisis: شیوسینا کے تیور سخت، سنجے راوت نے کہا : 24 گھنٹے میں اپنا عہدہ گنوادیں گے باغی وزرا

    MVA Crisis: سنجے راوت نے کہا : 24 گھنٹے میں اپنا عہدہ گنوادیں گے باغی وزرا ۔ فائل فوٹو ۔

    MVA Crisis: سنجے راوت نے کہا : 24 گھنٹے میں اپنا عہدہ گنوادیں گے باغی وزرا ۔ فائل فوٹو ۔

    MVA Crisis, Maharashtra Political Crisis : شیوسینا کے ممبر پارلیمنٹ سنجے راوت نے ہفتہ کو دعوی کیا کہ ایکناتھ شندے کے خیمے میں گئے مہاراشٹر کے باغی وزرا 24 گھنٹے میں اپنا عہدہ گنوا دیں گے ۔

    • Share this:
      ممبئی : شیوسینا کے ممبر پارلیمنٹ سنجے راوت نے ہفتہ کو دعوی کیا کہ ایکناتھ شندے کے خیمے میں گئے مہاراشٹر کے باغی وزرا 24 گھنٹے میں اپنا عہدہ گنوا دیں گے ۔ اس سے پہلے دن میں پارٹی کی قومی ایگزیکٹو کمیٹی نے شیوسینا صدر اور ریاست کے وزیر اعلی ادھو ٹھاکرے کو ریاست کے سینئر وزیر شندے کی قیادت والے باغی ممبران اسمبلی کے خلاف کارروائی کرنے کا اختیار دیا ہے ۔ شام کو ایک مراٹھی نیوز چینل سے راوت نے کہا کہ انہیں ہٹانے کی کارروائی جاری ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: 'کوئی بھی بالا صاحب ٹھاکرے اور پارٹی کے نام کا استعمال نہیں کرسکتا'، تین بڑی قراردادیں پاس


      انہوں نے کہا کہ گلاب راو پاٹل، دادا بھوسے ، سندیپن بھومرے جیسے وزرا کو شیوسینا کا وفادار کارکن مانا جاتا تھا، جنہیں ادھو ٹھاکرے نے کابینہ میں وزیر بنایا تھا ۔ پارٹی نے انہیں کافی کچھ دیا ہے ۔ انہوں نے غلط راستہ اپنایا ہے اور وہ 24 گھنٹے میں اپنا عہدہ گنوا دیں گے ۔ باغی گروپ کے دیگر وزرا شنبھوراج دیسائی، عبد الستار اور بچو کڈو ہیں۔ کڈو، پرہار جن شکتی پارٹی کے سربراہ ہیں جو شیوسینا کی قیادت والے حکمراں اتحاد کا حصہ ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: باغی ارکان اسمبلی کے دفتر میں توڑ۔پھوڑ، Shivsena workers نے کیا زبردست احتجاج


      راوت نے یہ بھی دعوی کیا کہ جب شیوسینا نے بی جے پی کے ساتھ اتحاد کیا تھا اور کہا تھا کہ وزیر اعلی کا عہدہ دونوں پارٹیوں کے پاس باری باری رہے گا تو ٹھاکرے کے ذہن میں اس اعلی عہدہ کیلئے شندے کا نام تھا ۔

      ریاست میں 2019 کے انتخابات کے بعد وزیر اعلی عہدہ باری باری سے رکھنے کے معاملہ کو لے کر دونوں ساتھیوں کے درمیان اتحاد ٹوٹ گیا، جس کے بعد شیوسینا نے کانگریس اور این سی پی سے ہاتھ ملایا ۔ راوت نے یہ بھی کہا کہ آدھے باغیوں کا ہندتوا سے کوئی لینا دینا نہیں ہے، لیکن وہ ای ڈی کی جانچ کا سامنا کررہے ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: