ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

سلیبریٹیز کے ٹویٹس کی جانچ میں بی جے پی آئی ٹی سیل چیف سمیت 13 بااثر افراد کے نام آئے سامنے : مہاراشٹر حکومت

مہاراشٹر کے وزیر داخلہ انل دیشمکھ نے کہا کہ مشہور ہستیوں کے ٹویٹ کے بارے میں میرا پہلے والا بیان غلط طریقہ سے پیش کیا گیا تھا ۔ میرا کبھی یہ مطلب نہیں تھا کہ مشہور ہستیوں سے پوچھ گچھ ہوگی ۔ لتا منگیشکر ہمارے کیلئے بھگوان کی طرح ہیں اور ملک کا ہر باشندہ سچن تیندولکر کا احترام کرتا ہے ۔ ان سے پوچھ گچھ کا کوئی سوال ہی نہیں پیدا ہوتا ہے ۔

  • Share this:
سلیبریٹیز کے ٹویٹس کی جانچ میں بی جے پی آئی ٹی سیل چیف سمیت 13 بااثر افراد کے نام آئے سامنے : مہاراشٹر حکومت
سلیبریٹیز کے ٹویٹس کی جانچ میں بی جے پی آئی ٹی سیل چیف سمیت 13 بااثر افراد کے نام آئے سامنے : مہاراشٹر حکومت

مہاراشٹر کے وزیر داخلہ انل دیشمکھ نے کہا کہ مشہور شخصیات کے ٹویٹ کی ابتدائی جانچ میں بی جے پی کے آئی ٹی سیل کے سربراہ اور بارہ با اثر لوگوں کے نام سامنے آئے ہیں ۔ کسان آندولن میں گزشتہ دنوں امریکی پاپ اسٹار ریحانہ اور ماحولیاتی کارکن گریٹا تھنبرگ کی حمایت ملنے کے بعد کئی ہندوستانی ہستیوں نے ٹویٹ کیا تھا ۔ مہاراشٹر حکومت انہیں ٹویٹس کی جانچ کررہی ہے کہ کہیں ان سلیبریٹیز پر ٹویٹس کرنے کیلئے کوئی دباو تو نہیں ڈالا گیا ۔


کورونا وائرس سے شفایاب ہونے کے بعد پہلی پریس کانفرنس میں دیشمکھ نے کہا کہ مشہور ہستیوں کے ٹویٹ کے بارے میں میرا پہلے والا بیان غلط طریقہ سے پیش کیا گیا تھا ۔ میرا کبھی یہ مطلب نہیں تھا کہ مشہور ہستیوں سے پوچھ گچھ ہوگی ۔ لتا منگیشکر ہمارے کیلئے بھگوان کی طرح ہیں اور ملک کا ہر باشندہ سچن تیندولکر کا احترام کرتا ہے ۔ ان سے پوچھ گچھ کا کوئی سوال ہی نہیں پیدا ہوتا ہے ۔ میرے کہنے کا مطلب یہ تھا کہ جانچ بی جے پی کی آئی ٹی سیل کے کردار کی ہوگی ۔ ابتدائی جانچ میں بی جے پی آئی ٹی سیل کے سربراہ اور بارہ بااثر لوگوں کے نام سامنے آئے ہیں اور معاملہ میں آگے کی جانچ جاری ہے ۔


پوجا چوہان کی خودکشی معاملہ پر بھی بولے دیشمکھ


وہیں شیوسینا کے وزیر سنجے راٹھور اور ماڈل پوجا چوہان کی مبینہ خودکشی کے تنازع کے بارے میں دیشمکھ نے کہا کہ وزیر اعلی ادھو ٹھاکرے نے یہ واضح کردیا ہے کہ قوانین کے مطابق جانچ کی جائے گی اور سرکار پوچھ گچھ کے بعد لوگوں کو معاملہ کی سچائی بتائے گی ۔ یہ پوچھنے پر کہ راٹھوڑ کیوں لاپتہ ہوگئے ہیں ، دیشمکھ نے کہا کہ وہ کہاں ہیں ، ان کا ذاتی معاملہ ہے ۔

دیشمکھ نے اس بات سے انکار کیا کہ معاملہ میں ریاستی حکومت پر کوئی دباو تھا ۔ انہوں نے کہا کہ دباو کا سوال کوئی نہیں ہے ۔ اپوزیشن کے ذریعہ لگائے گئے الزامات میں کوئی سچائی نہیں ہے ۔ دیشمکھ نے کہا کہ پونے پولیس صحیح طریقہ سے جانچ کررہی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Feb 16, 2021 09:12 AM IST