ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

کورونا کے بعد ہندستان میں آئی ایک اور خطرناک بیماری، گجرات میں ملا پہلا کیس

اس بیماری کے کیس یوروپ اور امریکہ سے آ رہے تھے۔ لیکن اب اس بیماری کا پہلا معاملہ گجرات کے سورت سے سامنے آیا ہے۔

  • Share this:
کورونا کے بعد ہندستان میں آئی ایک اور خطرناک بیماری، گجرات میں ملا پہلا کیس
علامتی تصویر

سورت۔ ملک بھر کے لوگ ان دنوں کورونا وائرس (Coronavirus) سے پریشان ہیں۔ پچھلے کچھ دنوں سے ہر روز اوسطا چالیس ہزار سے زیادہ کورونا کے نئے معاملے سامنے آ رہے ہیں۔ اب تک اس خطرناک وائرس نے بارہ لاکھ سے زیادہ لوگوں کو اپنی زد میں لے لیا ہے۔ جبکہ تقریبا 29 ہزار لوگوں کی موت ہو چکی ہے۔ اس بیچ ایک نئی بیماری نے ہندستان میں دستک دے دی ہے۔ اس کا نام ہے ملٹی سسٹم انفلیمیٹری سنڈروم (Multisystem Inflammatory Syndrome)۔ اسے MIS-C بھی کہتے ہیں۔


ہندستان میں پہلا معاملہ


MIS-C کے کیس یوروپ اور امریکہ سے آ رہے تھے۔ لیکن اب اس بیماری کا پہلا معاملہ گجرات کے سورت سے سامنے آیا ہے۔ میڈیا رپورٹوں کے مطابق، دس سال کے بچے میں اس بیماری کی علامت دیکھی گئی۔ کنبہ والوں کے مطابق، بچے کو پہلے الٹی، کھانسی اور پھر دست ہوئی۔ اس کے بعد بچے کو اسپتال میں بھرتی کرایا گیا۔ بعد میں بچے کی آنکھوں اور ہونٹ پر لالی پڑنے لگی۔


کیا کہا ڈاکٹر نے؟

ڈاکٹر آشیش گوٹی کے مطابق، بچے کے جسم میں ملٹی سسٹم انفلیمیٹری سنڈروم کی علامت پائی گئی۔ بعد میں ڈاکٹروں نے یہ بھی کہا کہ بچے کے ہارٹ میں خون بھی 30 فیصد ہی پمپ ہو رہا تھا۔ اس کے علاوہ نسوں میں بھی سوجن آ گئی تھی۔ راحت کی بات یہ ہے کہ سات دنوں کے بعد بچے کو اسپتال سے چھٹی دے دی گئی۔

ملٹی سسٹم انفلیمیٹری سنڈروم کے بارے میں دنیا بھر کے ڈاکٹروں کو زیادہ پتہ نہیں ہے۔ اس کو لے کر فی الحال تحقیق چل رہی ہے۔ اس سال مئی کے مہینے میں عالمی صحت تنظیم نے لوگوں کو آگاہ کیا تھا۔ آئیے ایک نظر ڈالتے ہیں اس بیماری کی کچھ علامات پر۔

0-19 سال کے بچے میں تین دن سے زیادہ بخار

جسم پر دانے آنا، پیولولینٹ (مواد کے ساتھ) منھ، ہاتھ اور پیر میں سوجن

بلڈ پریشر کا کم ہونا

ڈائیریا، پیٹ میں درد، پیٹ کے نچلے حصے میں درد

ایسا ہونے پر فورا ڈاکٹروں سے رجوع کرنا چاہئے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Jul 24, 2020 09:13 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading