உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شمشان گھاٹ سے دل دہلانے والا سنسنی خیز معاملہ، آخری رسوم کے دوران گیس ختم پھر ہوا کچھ ایسا۔۔۔

    شمشان گھاٹ کی بھٹی میں پڑی لاش اتن کے ایک آشرم میں رہنے والے شہری کی ہے۔

    شمشان گھاٹ کی بھٹی میں پڑی لاش اتن کے ایک آشرم میں رہنے والے شہری کی ہے۔

    شمشان گھاٹ کی بھٹی میں پڑی لاش اتن کے ایک آشرم میں رہنے والے شہری کی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
    بھائندر ویسٹ کے بھولا نگر کمپلیکس میں شمشان گھاٹ سے ایک دل دہلا دینے والا واقعہ سامنے آیا ہے۔ میونسپل ملازمین سے موصولہ اطلاع کے مطابق 62 سالہ موہن وسنت بھائی پٹیل کی لاش کو بھولا نگر کے شمشان گھاٹ میں تدفین کے لئے لایا گیا۔ جب آخری رسومات ادا کرنے کے لئے لاش کو گیس کی بھٹی میں ڈالا گیا تو کچھ دیر بعد گیس سلنڈر کے ختم ہونے کی وجہ سے آدھی لاش جلتی ہوئی حالت میں بھٹی کے اندر رہ گئی جب لاش جلانے والوں کو اس بات کا علم ہوا تو انہوں نے فوری طور پر اپنے سینئر افسران سے گیس سلنڈر کا مطالبہ کیا لیکن حکومتی عہدیداروں اور ملازمین کی بے حسی کی وجہ سے گیس سلنڈر ملنے میں وقت لگا اور لاش اندر موجود رہی۔ گیس نہ ملنے کی صورت میں تین دنوں تک لاش بھٹی میں پڑی رہی۔ جب مقامی رپوریِٹر کو بھائندر ویسٹ کے بھولا نگر احاطے میں شمشان گھاٹ کی بھٹی میں پڑی آدھی جلی ہوئی لاش کے بارے میں معلوم ہوا تو معاملے کی حقیقت جاننے کے لئے شمشان گھاٹ گئے اور پتہ چلا کہ واقعہ سچ ہے۔

    شمشان گھاٹ کی بھٹی میں پڑی لاش اتن کے ایک آشرم میں رہنے والے شہری کی ہے۔ جس کی موت کے بعد اس کی میت کو سنیچر کے روز شمشان گھاٹ لایا گیا تھا ، آخری رسومات کے لئے میت کو گیس کی بھٹی میں جلانے کے لئےرکھا گیا۔ شاید اس لئے کہ جو لوگ انتم سںنسکار میں آئے تھے گیس ختم ہونے کی وجہ سےاس کا پورا انتم سنسکار نہیں ہو پایااس پورے معاملے میں بی جےپی سابق کارپویٹر اوم پرکاش گڑودیا نے میونسپل انتظامیہ کے کام پر سوال اٹھاتے ہوئے کئی سنگین الزامات لگائے ہیں۔



    سٹی انجینئر شیواجی برکنڈ نے معاملے کی تحقیقات کی یقین دہانی کرائی اور کہا ہے کہ قصوروار لوگوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ اس معاملے میں میونسپل کارپوریشن کےسٹی انجینئر کے مطابق تحقیقات کے بعد قصورواروں کے خلاف کارروائی کی جائے گی لیکن قبرستان میں گیس سلنڈر سپلائی کرنے والے ٹھیکیدار نے کیمرے پر کچھ نہیں کہا لیکن موصولہ معلومات کے مطابق اس نے میونسپل پبلک ڈیم ورکس کے ایگزیکٹو انجینئر دیپک کھمبٹ کو 26 اگست کو ایک لکھا تھا ، جس میں انہیں آگاہ کیا تھا کہ اگلی سماعت تک شمشان گھاٹ میں گیس سلنڈر فراہم نہ کیا جائے لیکن ٹھیکیدار کو یہ نہیں بتایا گیا کہ سپلائی روکنے کی وجہ کیا ہے۔

    اگر ٹھیکیدار پر یقین کیا جائے تو وہ میرا بھائندر شہر کے تمام شمشان گھاٹوں کو گیس سلنڈر فراہم کرتا ہے۔ بھولا نگر شمشان گھاٹ میں ہر چوتھے دن 48 سلنڈر اور دوسرے شمشان گھاٹ میں ہر چوتھے دن 24 سلنڈر سپلائی کرتا ہے لیکن چونکہ بلدیہ نے اس طرح کے سلنڈر دینے سے انکار کر دیا ہے۔ اس لئے وہ گیس سلنڈر سپلائی نہیں کر رہی ہے۔ جب یہ معاملہ سامنے آیا تو اس کے بعد میونسپل کارپوریشن کے پبلک ڈیم ورکس کے ایگزیکٹو انجینئر دیپک کھمبٹ نے فوری طور پر گیس سلنڈر سپلائی کرنے کے لئےکہا ، جس کے بعد ٹھیکیدار نے انسانیت کے ناطے دیر رات گیس سلنڈر کی سپلائی کی۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: