ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

پہلوخان کوملزم بنائے جانے پربیٹے نے کہا- اس سے اچھا حکومت ہمیں بھی مار دے

پہلو خان کے بیٹے نے کہا کہ کہ کانگریس حکومت نے بھی ان کے ساتھ دھوکہ کیا ہے۔ اگر حکومت ہمیں انصاف نہیں دے سکتی توبہترہوگا کہ ہمیں مارہی دے۔

  • Share this:
پہلوخان کوملزم بنائے جانے پربیٹے نے کہا- اس سے اچھا حکومت ہمیں بھی مار دے
پہلو خان کے بیٹے نےکہا ہےکہ کانگریس حکومت نے بھی ان کے ساتھ دھوکہ کیا ہے۔ اگرحکومت ہمیں انصاف نہیں دے سکتی تو ہمیں بھی ماردے۔ نیوز 18 کریٹیو۔

راجستھان کےالورمیں ہوئے پہلوخان موب لنچنگ معاملے میں داخل چارج شیٹ کولے کر بحث شروع ہوگئی ہے۔ چارج شیٹ میں پہلو خان اوران کے بیٹوں کوگایوں کی اسمگلنگ کا ملزم بنایا گیا ہے۔ چارج شیٹ میں انہیں ملزم بنائے جانے پرپہلو خان کے بیٹے نے حیرانی ظاہرکی ہے۔ پہلو خان کے بیٹےنےکہا 'کانگریس حکومت نے بھی ان کے ساتھ دھوکہ کیا ہے۔ اگرحکومت ہمیں انصاف نہیں دے سکتی تو بہترہوگا کہ ہمیں مارہی دے'۔


پہلو خان کے بیٹےارشاد اورعارف نےکہا کہ چارج شیٹ معاملے کے تقریباً 40 دن بعد داخل ہوجاتی ہے، لیکن اب کئی سال بعد راجستھان پولیس نےچارج شیٹ پیش کی، جس میں ہمیں قصوروارقراردیا گیا ہے۔ انہوں نےکہا کہ بی جے پی کی حکومت ہویا کانگریس کی حکومت ہو، سبھی ایک جیسی ہے۔ ارشاد نےکہا کہ دن دیکھنے سے پہلے وہ اپنے والد کے ساتھ مارے جاتےتوکم ازکم اتنی پریشانی اورذلت نہیں جھیلنی پڑتی۔ کل ملاکرراجستھان پولیس کی چارج شیٹ نے سال 2017 میں ہوا یہ حادثہ ایک بارپھرمیڈیا کی سرخیوں میں ہے۔


پہلو خان کو چارج شیٹ میں بتایا گیا گایوں کا اسمگلر


چارج شیٹ میں پہلو خان اوران کے بیٹوں کوگایوں کی اسمگلنگ کا ملزم بنایا گیا ہے۔ خبریہ ہےکہ جب پہلوخان کی موب لنچنگ کی گئی ہےاوراس کا معاملہ بھی عدالت میں چل رہا ہے تواسے گایوں کی اسمگلنگ کا ملزم کیوں بنایا گیا ہے۔ کیس کےاس پہلوکوجاننےکےلئےنیوز 18 ہندی نےبات کی سپریم کورٹ کے سینئروکیل محمد ارشاد سے۔  محمد ارشاد بتاتے ہیں 'جب کسی ایک حادثہ میں ایک یا دو سے زیادہ ایف آئی آردرج ہوتی ہے توالگ ہونےکے بعد بھی دونوں یا تینوں کی چارج شیٹ میں تعلق ہوتا ہے۔ جیسے پہلوخان کےمعاملے میں ایک ایف آئی آرگایوں کی اسمگلنگ کا الزام لگا کرپہلوخان کے قتل کئے جانے سے متعلق درج ہوئی ہے'۔

pahlu-khan-324

محمد ارشاد کہتے ہیں 'جب چارج شیٹ اورعدالت میں یہ سوال اٹھےگا کہ وہ کیا معاملہ تھا، جس کےلئےپہلو خان کا قتل کیا گیا۔ ایسے میں اس کیس کی ایف آئی آرکا حوالہ دیا جائےگا جو پہلو خان اوران کے بیٹے سمیت دیگرلوگوں پرگایوں کی اسمگلنگ کے الزام میں درج ہوئی ہے'۔ اس کے ساتھ ہی ارشاد کہتے ہیں 'یہ الگ بات ہےکہ گایوں کی اسمگلنگ کے الزام والی ایف آئی آرمیں پہلو خان کا نام لکھنے کےساتھ ہی اسے مردہ بتاتے ہوئےاس پرکسی بھی طرح کا کیس نہ چلانے اوربری کرنے کی بات کہی جائے گی'۔

وہیں دوسری طرف گایوں کی اسمگلنگ کےالزام والے معاملے کا کیس لڑ رہے ایڈوکیٹ اسد حیات کا کہنا ہے 'کئی مہینوں کی جانچ کے بعد چارج شیٹ داخل ہوئی ہے۔ چارج شیٹ میں پہلو خان کا نام ملزم کےطورپرضرورہے، لیکن وہ قانون کی تکنیکی ضرورتوں کےسبب لکھا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی اب کیس نہ چلانے اوربری کرنےکی بات بھی لکھی جاتی ہے'۔

pahlu-khan-434

یہ تھا معاملہ

واضح رہے کہ 2017 میں پہلو خان اپنے بیٹے اوردیگرلوگوں کے ساتھ گاڑی میں دودھ دینے والی گائے لے کرآرہے تھے۔ الورکے قریب کچھ مبینہ گئو رکشکوں نے سبھی کوبری طرح سے پیٹا اورگایوں کوچھین لیا تھا۔ پٹائی میں لگی خطرناک چوٹ کے سبب عمردرازپہلو خان نے دم توڑدیا تھا۔ جبکہ ارشاد اورعارف دونوں بیٹوں کےعلاوہ گاوں جے سنگھ پورکے محمد اعظم کوبھی سنگین چوٹیں آئی تھیں۔
First published: Jun 29, 2019 08:56 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading