ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

پورن فلم ریکیٹ سے جڑا ساکی ناکا پولیس اسٹیشن 'اورل سیکس اسکینڈل' کا لنک : رپورٹ

Porn Film Racket : تنویر ہاشمی کو گجرات کے سورت سے ممبئی پولیس اشٹیشن کی کرائم برانچ نے گرفتار کیا تھا ۔ اس معاملہ میں اداکارہ گہنا وششٹھ سمیت اب تک 9 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے ۔

  • Share this:
پورن فلم ریکیٹ سے جڑا ساکی ناکا پولیس اسٹیشن 'اورل سیکس اسکینڈل' کا لنک : رپورٹ
پورن فلم ریکیٹ سے جڑا ساکی ناکا پولیس اسٹیشن 'اورل سیکس اسکینڈل' کا لنک : رپورٹ

ممبئی میں پکڑے گئے پورن فلم انڈسٹری ریکیٹ کی جانچ میں مسلسل نئے نئے انکشافات ہورہے ہیں ۔ بتایا جارہا ہے کہ پولیس نے گزشتہ دنوں جس تنویر ہاشمی کو گرفتار کیا تھا ، اس کے تار ساکی ناکا پولیس اسٹیشن اورل سیکس اسکینڈل سے جڑے ہوئے ہیں ۔ بتادیں کہ تنویر ہاشمی کو گجرات کے سورت سے ممبئی پولیس اشٹیشن کی کرائم برانچ نے گرفتار کیا تھا ۔ اس معاملہ میں اداکارہ گہنا وششٹھ سمیت اب تک 9 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے ۔


تنوری ہاشمی کو پیرکو قلعہ کورٹ میں پیش کیا گیا ۔ ہاشمی کے علاوہ اداکارہ و ماڈل گہنا وششٹھ ، ایک کمپنی کے مینیجنگ ڈٓائریکٹر امیش کامت اور شان بنرجی عرف دیپانکر کھاسنویس کی بھی عدالت میں پیشی ہوئی ۔ سبھی ملزمین کو 17 فروری تک کرائم برانچ کی تحویل میں بھیج دیا گیا ہے ۔


کیا ہے ساکی ناکا اورل سیکس اسکینڈل؟


تقریبا چھ سال پہلے سال 2015 میں ساکی ناکا پولیس اسٹیشن میں ایک سنسنی خیز سیکس اسکینڈل کا انکشاف ہوا تھا ۔ ایک ماڈل نے الزام لگایا تھا کہ اس کے ساتھ تھانے میں پولیس انسپکٹر نے زبردستی اورل سیکس کیا تھا ۔ ساکی ناکا اسکینڈل میں ایک ٹی وی سیریل کا پروڈیوسر بھی پکڑا گیا تھا ۔ اس پروڈیوسر پر الزام لگا تھا کہ اس نے تنویر ہاشمی کے نام سے اپنے کریڈٹ کارڈ سے ادائیگی کرکے اندھیری کے فائیو اسٹار ہوٹل میں اپریل 2015 میں کمرہ بک کیا تھا ۔ اس کمرے میں ایک ماڈل کو سائننگ اماونٹ کے بہانے بلایا گیا تھا ، لیکن آخری وقت پر اس نے کمرہ میں جانے سے انکار کردیا تھا ۔

پولیس پر ماڈل کو اغوا کرنے کا الزام

اس کے بعد ماڈل کا بوائے فرینڈ جیسے ہی اپنی بائیک پر اس کو لے جانے لگا ، تو ساکی ناکا پولیس نے ان دونوں کا اغوا کرلیا تھا ۔ اس کے بعد ماڈل نے الزام لگایا تھا کہ ایک انسپکٹر نے اس کے ساتھ پولیس اسٹیشن میں اورل سیکس کیا تھا ۔ اس وقت ان الزامات کی جانچ بھی ہوئی تھی اور ملزم پولیس اہلکار کے خلاف کارروائی بھی کی گئی تھی ۔

پورن ویڈیو اپ لوڈ کرتا تھا ہاشمی

ممبئی پولیس کی کرائم برانچ کے ذرائع نے اس سلسلہ میں جانکاری دی ہے کہ سورت سے گرفتار تنویر ہاشمی پورن فلموں کو الگ الگ او ٹی ٹی ایپس یعنی آن لائن ایپس پر اپ لوڈ کرنے کا کام کرتا تھا ۔

بتادیں کہ اس کیس میں پہلی ایف آئی آر گزشتہ ہفتہ اس وقت درج ہوئی تھی ، جب سینئر انسپکٹر کیداری پوار اور لکشمی کانت سالونکھے نے ملاڈ کے مڈ آئی لینڈ میں چھاپہ ماری کرکے وہاں سے پانچ لوگوں کو گرفتار کیا تھا ۔ بعد میں اس کیس میں اداکارہ و ماڈل گہنا وششٹھ ، ایک مینیجنگ ڈائریکٹر امیش کامت اور شان بنرجی عرف دیوانکر کھاسنویس کو گرفتار کیا گیا تھا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Feb 16, 2021 10:16 AM IST