உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پروین توگڑیا کو"گئو سیوا" کے لئے ہندووں کی تلاش، نئی تنظیم کا اعلان جمعرات کو

     پروین توگڑیا نے نئی تنظیم کو بنانے کی شروعات کردی ہے، اس کے لئے انہوں نے کو ممبرشپ فارم بھی تقسیم کرنا شروع کردیا ہے، جس میں لوگوں سے ’گئو سیوا‘   (گائے کی خدمت) کرنے یا پھر ’ہندو ہیلپ لائن‘ میں کام کرنے کے لئے کہا جارہا ہے۔

    پروین توگڑیا نے نئی تنظیم کو بنانے کی شروعات کردی ہے، اس کے لئے انہوں نے کو ممبرشپ فارم بھی تقسیم کرنا شروع کردیا ہے، جس میں لوگوں سے ’گئو سیوا‘ (گائے کی خدمت) کرنے یا پھر ’ہندو ہیلپ لائن‘ میں کام کرنے کے لئے کہا جارہا ہے۔

    پروین توگڑیا نے نئی تنظیم کو بنانے کی شروعات کردی ہے، اس کے لئے انہوں نے کو ممبرشپ فارم بھی تقسیم کرنا شروع کردیا ہے، جس میں لوگوں سے ’گئو سیوا‘ (گائے کی خدمت) کرنے یا پھر ’ہندو ہیلپ لائن‘ میں کام کرنے کے لئے کہا جارہا ہے۔

    • Share this:
      گزشتہ ماہ وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی) کے بین الاقوامی کارگزار صدر کے عہدے سے ہٹائے جانے کے بعد پروین توگڑیا نے نئی تنظیم کو بنانے کی شروعات کردی ہے، اس کے لئے انہوں نے کو ممبرشپ فارم بھی تقسیم کرنا شروع کردیا ہے، جس میں لوگوں سے ’گئو سیوا‘   (گائے کی خدمت) کرنے یا پھر ’ہندو ہیلپ لائن‘ میں کام کرنے کے لئے کہا جارہا ہے۔

      توگڑیا جمعرات کو دہلی میں اپنی تنظیم کو باضابطہ لانچ کریں گے۔ یہ تنظیم وشو ہندو پریشد کی طرح ہی کام کرے گی۔ اپریل میں اپنے احتجاجی مظاہرہ کے دوران انہوں نے نئی تنظیم بنانے کی جانب اشارہ کیا تھا۔ ان کے احتجاجی مظاہرہ کے بینر میں بھی ’ہندو ہی آگے‘ احتجاج کی بات کی گئی تھی۔

      احمد آباد میں وی ایچ پی کے سابق عہدیدار راجو بھائی پٹیل نے کہا کہ تنظیم کا نام اور اس میں کئے جانے والے سبھی کاموں کے بارے میں ڈاکٹر توگڑیا جمعرات کو دہلی میں اعلان کریں گے۔ ہندوتوا کے لئے کام کررہے  تقریباً 5000 کرکنان اس میں شامل ہوں گے۔ یہ ایسی تنظیم ہوگی جو ہندووں کے لئے صرف باتیں نہیں بلکہ اصل میں کام بھی کرے گی۔

      گزشتہ کچھ دنوں سے توگڑیا اور ان کی ٹیم فیس بک، واٹس اپ کے ذریعہ لوگوں کو پیغام بھیج رہی ہے اور  ’ہندو ہی آگے‘  احتجاج سے منسلک ہونے کا مطالبہ کیا جارہا ہے۔ اس کے ساتھ ہی ایک فارم بھی تقسیم کیاجارہا ہے جسے بھر کر واٹس اپ کے ذریعہ بھیجنے کے لئے کہا جارہا ہے۔ اس میں لوگوں سے ان کا نام ، پتہ، فون نمبر، ضلع، ریاست، ای میل آئی ڈی اور عمر پوچھا جارہا ہے۔ اس کے علاوہ لوگوں سے اس میں اپنا پورا وقت  ’ہندو ہی آگے‘  تحریک کو وقف کرنے یا اپنے کام کو کرتے ہوئے اس  تحریک میں حمایت دینے کے بارے میں پوچھا جارہا ہے۔

      اس میں حمایت دینے والے لوگوں کو 13 کاموں میں سے اپنی پسند کے کام چننے کی بھی بات کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ شخص ایک یا اس سے زیادہ یا پھر سبھی کاموں جیسے عام ہندو تنظیم، یوا ہندو سنگٹھن، کسان آندولن، ہندو ہیلپ لائن، ہندو ایڈوکیٹ فورم، گیو سیوا یا دیگر کاموں کو منتخب کرسکتا ہے۔

       
      First published: