உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ملک کو دہلا دینے والے پریتی راٹھی تیزاب سانحہ میں انکر پوار کو ملی پھانسی کی سزا

    ممبئی میں باندرا ریلوے اسٹیشن پر ہوئے پریتی راٹھی کے قتل کیس میں ممبئی کی سیشن عدالت نے مجرم انکر پوار کو پھانسی کی سزا سنائی ہے۔ اس سے پہلے عدالت نے 6 ستمبر کو انکر پوار کو مجرم قرار دیتے ہوئے فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔

    ممبئی میں باندرا ریلوے اسٹیشن پر ہوئے پریتی راٹھی کے قتل کیس میں ممبئی کی سیشن عدالت نے مجرم انکر پوار کو پھانسی کی سزا سنائی ہے۔ اس سے پہلے عدالت نے 6 ستمبر کو انکر پوار کو مجرم قرار دیتے ہوئے فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔

    ممبئی میں باندرا ریلوے اسٹیشن پر ہوئے پریتی راٹھی کے قتل کیس میں ممبئی کی سیشن عدالت نے مجرم انکر پوار کو پھانسی کی سزا سنائی ہے۔ اس سے پہلے عدالت نے 6 ستمبر کو انکر پوار کو مجرم قرار دیتے ہوئے فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔

    • IBN7
    • Last Updated :
    • Share this:
      ممبئی : ممبئی میں باندرا ریلوے اسٹیشن پر ہوئے پریتی راٹھی کے قتل کیس میں ممبئی کی سیشن عدالت نے مجرم انکر پوار کو پھانسی کی سزا سنائی ہے۔ اس سے پہلے عدالت نے 6 ستمبر کو انکر پوار کو مجرم قرار دیتے ہوئے فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔ خیال رہے کہ 2 مئی 2013 کو ممبئی کے باندرہ ریلوے اسٹیشن پر ہریانہ کی رہنے والی 22 سالہ پریتی راٹھی پر انکر پوار نے تیزاب پھینک دیا تھا۔ اسپتال میں علاج کے دوران پریتی کی موت ہو گئی تھی۔ پریتی کے گھر والوں نے انصاف کا مطالبہ کرتے ہوئے مجرم کے لئے پھانسی کی سزا کا مطالبہ کیا تھا۔
      هريانہ کی رہنے والی پریتی کا بحریہ میں سلیکشن ہوا تھا ، جس کے بعد اس کا پڑوسی انکر اس کی کامیابی سے اتنا بوکھلاگیا کہ اس نے پریتی کا کریئر ختم کرنے کے لئے یہ سازش رچی۔ انکر صرف پریتی پر تیزاب پھینکنے کے لئے اسی ٹرین سے آیا ، جس میں پریتی سفر کر رہی تھی اور باندرا اسٹیشن پر وہ پریتی پر تیزاب پھینک کر فرار ہو گیا۔ پریتی اپنے والد کے ساتھ ممبئی میں اپنے کیریئر کی شروعات کرنے کیلئے گئی تھی۔ ہندوستان بحریہ میں جوائننگ کے لیے وہ اپنے والد کے ساتھ ممبئی گئی تھی ۔ جیسے ہی باندرا ریلوے اسٹیشن پر اتری ایک شخص نے اس پر تیزاب پھینک دیا۔ تقریبا ایک ماہ کے علاج کے بعد پریتی کی موت ہو گئی۔ اس واردات میں تیزاب کے چھینٹے پریتی کے والد پر بھی پڑے تھے۔ جب تک لوگ کچھ سمجھ پاتے ملزم فرار ہو چکا تھا۔
      اس تیزاب سانحہ نے پورے ملک کو ہلا کر رکھ دیا تھا۔ کیس ریلوے پولیس سے فوری طور پر ممبئی كرائم برانچ کو منتقل کر دیا گیا۔ جانچ کے کچھ ہی دنوں میں ممبئی کرائم برانچ کے حکام نے ہریانہ سے انکر پوار کو گرفتار کر لیا۔ جانچ میں پتہ چلا کہ پریتی راٹھی کے نیوی کے اسپتال کام لگنے سے ملزم انکر پوار بوکھلایا ہوا تھا۔
      اس معاملہ میں ممبئی پولیس نے 1322 صفحات کی چارج شیٹ بھی کورٹ میں دائر کی ۔ کورٹ نے ملزم کے خلاف 302 (قتل)، 326 (اے)، 326 (بی) تیزاب سے حملہ کرنے کے تحت ٹرائل چلایا۔
      First published: