உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    راجستھان: الور میں آٹھویں کی طالبہ سے آٹھ لوگوں نے کی اجتماعی آبروریزی، پھر وائرل کردیا ویڈیو

    راجستھان: الور میں آٹھویں کی طالبہ سے آٹھ لوگوں نے کی اجتماعی آبروریزی، پھر وائرل کردیا ویڈیو ۔ علامتی تصویر ۔

    راجستھان: الور میں آٹھویں کی طالبہ سے آٹھ لوگوں نے کی اجتماعی آبروریزی، پھر وائرل کردیا ویڈیو ۔ علامتی تصویر ۔

    راجستھان کے الور ضلع میں واقع کشن گڑھ باس علاقہ میں آٹھویں جماعت میں پڑھنے والی 16 سال کی ایک نابالغ لڑکی کی اجتماعی آبروریزی کے بعد فحش ویڈیو بنانے کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Rajasthan | Alwar | Jaipur
    • Share this:
      الور: راجستھان کے الور ضلع میں واقع کشن گڑھ باس علاقہ میں آٹھویں جماعت میں پڑھنے والی 16 سال کی ایک نابالغ لڑکی کی اجتماعی آبروریزی کے بعد فحش ویڈیو بنانے کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ الزام ہے کہ آٹھ لوگوں نے اس لڑکی کی آبروریزی کی اور پھر ویڈیو بناکر بلیک میل کرکے روپے اینٹھنے کے ساتھ یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل کردیا ۔ متاثرہ نے اہل خانہ کی شکایت پر پولیس نے ان سبھی ملزمین کے خلاف پاکسو ایکٹ، اجتماعی آبروریزی اور آئی ٹی ایکٹ میں نامزد کیس درج کرکے جانچ شروع کردی ہے ۔

      اس معاملہ کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے اس کی جانچ کشن گڑھ باس کے ڈی ایس پی اتل اگرے کو سونپی گئی ہے ۔ اگرے نے بتایا کہ متاثرہ کی میڈیکل جانچ کرانے کے بعد آگے کی جانچ کی جارہی ہے ۔ پولیس نے اس معاملہ میں جائے واقعہ کا معائنہ کیا اور ملزمین کی گرفتاری کیلئے خصوصی ٹیمیں تشکیل دیدی گئی ہیں ۔ اگرے نے کہا کہ ملزمین کی شناخت ہوچکی ہے اور جلد ہی سبھی کو گرفتار کرلیں گے ۔

      متاثرہ نے اپنی شکایت میں بتایا کہ رجوٹ کے رہنے والے رفیق کے بیٹے ساحل نے 31 دسمبر 2021 کو اس کے بھائی کے فون پر اس کو کال کیا تھا ۔ اس دوران اس نے دھمکی دی کہ ان کے پاس اس کی فحش تصاویر ہیں اور اگر وہ نہیں آئی تو سبھی تصویریں سوشل میڈیا پر وائرل کردیں گے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: ایئرپورٹ پر مسافروں کو اپنی ایسی تصاویر بھیجنے لگی خاتون، دیکھ کر سبھی کے اڑ گئے ہوش!


      متاثرہ نے بتایا کہ اس کی دھمکی کے بعد وہ وہاں پہنچی تو وہاں آٹھ لڑکے موجود تھے ۔ ان لوگوں نے اس کو دھمکی دے کر زبردستی اس کے سارے کپڑے اتروا لئے اور فحش ویڈیو بنا لیا ۔ اس کے بعد انہوں نے کہا کہ وہ یہ فحش ویڈیو وائرل کردیں گے، جس سے تو کہیں بھی منہ دکھانے کے قابل نہیں رہے گی ۔

      متاثرہ نے پولیس کو دی اپنی شکایت میں بتایا کہ ان لوگوں نے میرا ویڈیو بنایا اور اس کے بعد سبھی نے باری باری سے میری آبروریزی کی ۔ میں کئی گھنٹوں تک وہاں سے بے ہوش پڑی رہی اور پھر کسی طرح اپنے گھر آئی ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: بیٹے اور اس کی معشوقہ کے پرائیویٹ لمحات نے چھین لیا پڑوسیوں کا سکون!


      متاثرہ کے مطابق ان سبھی ملزمین نے اس کو دھمکی دی کہ اگر کسی کو بھی یہ بات بتائی تو ویڈیو وائرل ہوجائے گا ، جس سے وہ ڈر گئی ۔ اس کے بعد ملزم اس کو بلیک میل کرکے دھیرے دھیرے روپے اینٹھنے لگے ۔ متاثرہ کا الزام ہے کہ ان لوگوں نے اس سے 50 ہزار روپے اینٹھ لئے ۔ اس کے ساتھ ہی تین جنوری اور چھ اپریل کو بھی بلاکر اس کی اجتماعی آبروریزی کی ۔

      اس درمیان ملزمین نے پچھلے دنوں متاثرہ سے ڈھائی لاکھ روپے کی مانگ کی، جس کو وہ پورا نہیں کرپائی تو ان لوگوں نے متاثرہ کا فحش ویڈیو وائرل کردیا ۔ لڑکی کا ویڈیو اہل خانہ کے پاس پہنچنے کے بعد اس معاملہ کا انکشاف ہوا اور انہوں نے لڑکی سے پوچھ گچھ کی تو اس نے پورا واقعہ بتایا ۔ متاثرہ نے پھر اہل خانہ کے ساتھ تھانہ پہنچ کر ملزمین کے خلف نامزد رپورٹ درج کروائی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: