உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بی جے پی کے واحد مسلم امیدوار یونس خان بنیں گے سچن پائلٹ کے خلاف ٹرمپ کارڈ ؟ 

    بی جے پی کے واحد مسلم امیدوار یونس خان بنیں گے سچن پائلٹ کے خلاف ٹرمپ کارڈ ؟ 

    بی جے پی کے واحد مسلم امیدوار یونس خان بنیں گے سچن پائلٹ کے خلاف ٹرمپ کارڈ ؟ 

    راجستھان کی وسندھرا حکومت میں نمبر دو کی حیثیت رکھنے والے کابینی وزیر یونس خان کو ٹونک اسمبلی حلقہ سے انتخابی میدان میں اتارا گیا ہے۔ خان اسمبلی انتخابات 2018 میں بی جے پی کی طرف سے اتارے گئے واحد مسلم امیدوار ہیں۔

    • Share this:
      راجستھان کی وسندھرا حکومت میں نمبر دو کی حیثیت رکھنے والے کابینی وزیر یونس خان کو ٹونک اسمبلی حلقہ سے انتخابی میدان میں اتارا گیا ہے۔ خان اسمبلی انتخابات 2018 میں بی جے پی کی طرف سے اتارے گئے واحد مسلم امیدوار ہیں۔
      گزشتہ سات دنوں کے دوران بی جے پی کی جانب سے جاری چار فہرستوں میں ایک بھی مسلم امیدوار کو جگہ نہیں دی گئی ۔ نامزدگی داخل کرنے کے آخری دن پیر کو پانچویں اور آخر ی فہرست میں یونس خان کو ٹکٹ دیا گیا ۔ سات دن کی کشمکش کے بعد یونس خان کو ٹکٹ تو مل گیا ، لیکن اس کے پیچھے وزیر اعلی وسندھرا راجے کی ضد رہی یا سچن پائلٹ کے سامنے کسی اچھے امیدوار کو میدان میں اتارنے کی بی جے پی کی حکمت عملی ، کہنا مشکل ہے۔
      کانگریس ریاستی صدر اور وزیر اعلی عہدہ کے مضبوط دعویدار سچن پائلٹ کو گھیرنے کیلئے یونس خان کو بی جے پی کا ٹرمپ کارڈ بتایا جارہا ہے۔ یونس کو ٹونگ کیلئے پہلے اعلان شدہ امیدوار اجیت سنگھ مہتا کو ہٹاکر میدان میں اتارا گیا ہے۔ بی جے پی نے جھالراپٹن میں وسندھرا راجے کے خلاف کانگریس کی جانب سے اتارے گئے مانویندر سنگھ کے جواب میں یہ قدم اٹھایا ہے۔
      حالانکہ بی جے پی کے یونس خان کو ٹونک سے سچن پائلٹ کے سامنے جیت حاصل کرنا انتہائی مشکل کام ہوگا ۔ خاص طور پر ایسے وقت میں جب مسلم سماج کی متعدد تنظیموں نے کھلم کھلا کانگریس کی حمایت کا اعلان کر رکھا ہے۔
      First published: