ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

راجستھان بحران : سچن پائلٹ پر کراس ووٹنگ کیلئے 35 کروڑ روپے کا آفر دینے کا الزام ، ملا یہ جواب

سچن پائلٹ نے کہا کہ میری شبیہ خراب کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ میں الزامات سے دکھی ہوں ، لیکن حیران نہیں ۔

  • Share this:
راجستھان بحران : سچن پائلٹ پر کراس ووٹنگ کیلئے 35 کروڑ روپے کا آفر دینے کا الزام ، ملا یہ جواب
راجستھان بحران : سچن پائلٹ پر کراس ووٹنگ کیلئے 35 کروڑ روپے کا آفر دینے کا الزام ، ملا یہ جواب

راجستھان کے سیاسی بحران کو لے کر وزیر اعلی اشوک گہلوت کے حملے کے بعد سچن پائلٹ نے جوابی حملہ کیا ہے ۔ پائلٹ نے کہا کہ یہ پورا معاملہ انہیں بدنام کرنے اور پارٹی میں ان کے اعتماد کو مشتبہ بنانے کی سازش ہے ۔ پائلٹ نے کہا کہ پورے معاملہ کو نیا سیاسی رنگ دیا جارہا ہے تاکہ راجستھان میں کانگریس پارٹی کی پریشانیوں کی طرف سے پارٹی قیادت کی توجہ ہٹائی جاسکے ۔ انہوں نے کہا کہ اہم ایشوز سے توجہ ہٹا کر اب صرف میری شبیہ کو نقصان پہنچانے کیلئے یہ تانا بانا بنا جارہا ہے۔


راجستھان کی سیاست میں ابھی تک یہ صاف نہیں ہوپایا ہے کہ اونٹ کس کروٹ بیٹھے گا ۔ حالانکہ وزیر اعلی اشوک گہلوت کے ذریعہ ناکارہ ، نکما اور دھوکہ باز کہے جانے کے بعد سچن پائلٹ نے محاذ کھول دیا ہے ۔ سچن پائلٹ نے کہا کہ میری شبیہ خراب کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ میں الزامات سے دکھی ہوں ، لیکن حیران نہیں ۔ ساتھ ہی انہوں نے کانگریس سے بی جے پی میں لانے کیلئے 35 کروڑ روپے کی پیشکش کا الزام لگانے والے کانگریس ممبر اسمبلی کو لے کر کہا کہ وہ ممبر اسمبلی کے خلاف مناسب اور سخت قانونی کارروائی کریں گے ۔


آپ کو بتادیں کہ کانگریس ممبراسمبلی گرراج سنگھ ملنگا نے حکومت کو بغاوتی تیور دکھانے والے سابق پی سی سی چیف اور نائب وزیر اعلی سچن پائلٹ پر سنسنی خیز الزام لگایا ہے ۔ ملنگا نے کہا کہ سچن پائلٹ نے انہیں کانگریس سے بی جے پی میں لانے کیلئے 35 کروڑ روپے کی پیشکش کی تھی ، لیکن انہوں نے انکار کردیا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ واقعہ دسمبر اور پھر راجستھان راجیہ سبھا الیکشن سے پہلے پیش آیا ۔ ملنگا کے ان الزامات کے بعد سیاسی درجہ حرارت میں اب مزید شدت آگئی ہے ۔


اشوک گہلوت نے سادھا نشانہ

اس سے پہلے وزیر اعلی اشوک گہلوت نے سچن پائلٹ پر نشانہ سادھتے ہوئے کئی سنگین الزامات عائد کئے ۔ وزیر اعلی نے کہا کہ ایک چھوٹی خبر بھی نہیں پڑھی ہوگی کسی نے ، جس میں کہا گیا ہو کہ پائلٹ کو کانگریس ریاستی صدر کے عہدہ سے ہٹانا چاہئے ۔ ہم جانتے تھے کہ وہ نکما ہے ، ناکارہ ہے ، کچھ کام نہیں کررہا ہے ، صرف لوگوں کو لڑوا رہا ہے ۔ ساتھ ہی کہا کہ پائلٹ سات سال تک راجستھان کانگریس کے صدر رہے ، جو کہ بڑی بات ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 20, 2020 07:29 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading