உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    راجستھان میں بڑے نوٹوں کے بند ہونےسے عوام کی پریشانی بڑھی

    تصویر: رائٹرز

    تصویر: رائٹرز

    جے پور۔ مرکزی حکومت کے پانچ سو اور ہزار روپے کے نوٹوں کو بند کرنے کے اعلان کے بعد آج صبح عوام دودھ اور دیگر روزمرہ کے استعمال کا سامان خریدنے کےلئے پریشان ہوتی رہی۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      جے پور۔ مرکزی حکومت کے پانچ سو اور ہزار روپے کے نوٹوں کو بند کرنے کے اعلان کے بعد آج صبح عوام دودھ اور دیگر روزمرہ کے استعمال کا سامان خریدنے کےلئے پریشان ہوتی رہی۔صبح دودھ کی زیادہ تر ڈیریوں پر دودھ لینے گئے لوگوں سے ہزار اور پانچ سو کے نوٹ لینے سے منع کرنے کی وجہ سے لوگ پریشان رہے۔ حالانکہ کچھ ڈیریوں پر بڑے نوٹ بھی لیتے دیکھے گئے۔کشن پول بازار میں واقع ایک ڈیری کو چلانے والے پپو نے کہا کہ بڑے نوٹوں کو لینا پریشانی کا سبب بن سکتا ہے،اسے پہلے تو کھلے پیسے دینے کی پریشانی ہے اور ایسے میں بڑے نوٹ لینے پر اسے بینک میں جمع کرانے کےلئے گھنٹوں لائن میں کھڑے ہوکر انتظار کرنا پڑے گا۔


      کم و بیش یہی حال اجمیری گیٹ پر واقع پٹرول پمپ پر بھی دیکھنے کو ملا۔ صبح سویرے کالج اور دفتر کےلئے موٹر سائکل سے جانے والے لوگوں کو بے حد پریشانی ہوئی۔ بڑے نوٹوں کے بند ہونے کے اچانک اعلان پر ہرطرف بحث جاری ہے۔صبح رام نواس باغ میں سیر کرنے آئے بزرگ اور نوجوانوں میں کچھ نے اسے مناسب بتایا تو کچھ نے کہا کہ عوام کی پریشانیاں بڑھیں گی۔


      حکومت کے ذریعہ بڑے نوٹوں کو بند کرنے کے اعلان کے فوراً بعد کل رات کئی پٹرول پمپ پر لوگوں کی قطاریں لگ گئیں تو وہیں کھاتی پور میں واقع ایک اے ٹی ایم پر روپے نکالنے پر جھگڑا ہونے پر پولیس کو دخل دینا پڑا۔

      First published: