ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

راجستھان: سچن پائلٹ خیمے کو فی الحال راحت، ہائی کورٹ نے دیا موجودہ صورت حال برقرار رکھنے کا حکم

عرضی کو قبول کرنے کے بعد ہائی کورٹ نے اسپیکر کے نوٹس پر دائر عرضی پر اپنا فیصلہ سناتے ہوئے موجودہ صورت حال برقرار رکھنے کی ہدایت دی ہے۔

  • Share this:
راجستھان: سچن پائلٹ خیمے کو فی الحال راحت، ہائی کورٹ نے دیا موجودہ صورت حال برقرار رکھنے کا حکم
اشوک گہلوت، سچن پائلٹ کی فائل فوٹو

جئے پور۔ قانونی داو پیچ میں پھنسے راجستھان کے سیاسی بحران کے درمیان نوٹس عرضی میں سچن پائلٹ گروپ کی طرف سے مرکزی حکومت کو اس معاملہ میں فریق بنانے کی عرضی کو ہائی کورٹ نے قبول کر لیا ہے۔ اب اس میں مرکزی حکومت کا موقف بھی سنا جائے گا۔ عرضی کو قبول کرنے کے بعد ہائی کورٹ نے اسپیکر کے نوٹس پر دائر عرضی پر اپنا فیصلہ سناتے ہوئے موجودہ صورت حال برقرار رکھنے کی ہدایت دی ہے۔


نوٹس عرضی میں پائلٹ فریق کی طرف سے مرکزی حکومت کو اس معاملہ میں فریق بنانے کے لئے بدھ کو دائر کی گئی عرضی پر سماعت کے بعد عدالت نے اسے منظور کر لیا ہے۔ اس سے اب مرکزی حکومت بھی نوٹس عرضی میں فریق بن گئی ہے۔ اب اس معاملہ میں جواب دینے کے لئے مرکزی حکومت کے وکیل ہائی کورٹ سے وقت مانگ سکتے ہیں۔ وہیں، دوسری طرف ہائی کورٹ نے نوٹس عرضی پر موجودہ صورت حال کو برقرار رکھنے کی ہدایت دی ہے۔ اسے پائلٹ گروپ کے لئے بڑی راحت مانا جا رہا ہے۔ اس حکم کے بعد اب کوئی بھی فریق کوئی کارروائی نہیں کر پائے گا۔ پورا معاملہ سپریم کورٹ کے تحت رہے گا۔ ہائی کورٹ نے اسپیکر کے نوٹس کو اسٹے کر دیا ہے۔


اس سے پہلے کل یعنی جمعرات کو سپریم کورٹ نے راجستھان ہائی کورٹ کے حکم پر روک لگانے سے متعلق ریاستی اسمبلی اسپیکر کی اپیل ٹھکرا دی تھی۔حالانکہ عدالت نے یہ واضح کردیا تھا کہ کانگریس لیڈر سچن پائلٹ اور ان کے خیمے کے 18 ارکان سمبلی کے خلاف کارروائی کے معاملے میں ہائی کورٹ کا کوئی بھی فیصلہ سپریم کورٹ کے آخری فیصلے پر منحصر کرے گا۔ جسٹس ارون کمار مشرا،جسٹس بی آر گوئی اور جسٹس کرشن موراری کی بینچ نے اسمبلی اسپیکر سی پی جوشی کی جانب سے پیش سینئر وکیل کپِل سبل اور پائلٹ خیمے کی جانب سے پیش سینئر وکیل ہریش سالوے اور مکل روہتگی کی دلیلیں سننے کے بعد کہا تھا کہ وہ اس معاملے میں پیر کو تفصیلی سماعت کرے گی۔ اس دوران ہائی کورٹ کے منگل کے حکم پر روک نہیں لگے گی۔

Published by: Nadeem Ahmad
First published: Jul 24, 2020 11:56 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading