ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

راجستھان کے وزیر داخلہ کا مدارس کے خلاف متنازع بیان ، جمعیۃ نے کی شدید تنقید

جھنجھنو: جمعیت علمائے ہند کی راجستھان یونٹ نے ریاستی اسمبلی میں وزیر داخلہ گلاب چند کٹاریا اور سماجی انصاف و تفویض اختیارات کے وزیر ارون چترویدی کی طرف سے مدارس پر کئے جانے والے تبصرے ،تحقیقات اور کارروائی کےاعلان کی مذمت کی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 12, 2016 11:34 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
راجستھان کے وزیر داخلہ کا مدارس کے خلاف متنازع بیان ، جمعیۃ نے کی شدید تنقید
جھنجھنو: جمعیت علمائے ہند کی راجستھان یونٹ نے ریاستی اسمبلی میں وزیر داخلہ گلاب چند کٹاریا اور سماجی انصاف و تفویض اختیارات کے وزیر ارون چترویدی کی طرف سے مدارس پر کئے جانے والے تبصرے ،تحقیقات اور کارروائی کےاعلان کی مذمت کی ہے۔

جھنجھنو: جمعیت علمائے ہند کی راجستھان یونٹ نے ریاستی اسمبلی میں وزیر داخلہ گلاب چند کٹاریا اور سماجی انصاف و تفویض اختیارات کے وزیر ارون چترویدی کی طرف سے مدارس پر کئے جانے والے تبصرے ،تحقیقات اور کارروائی کےاعلان کی مذمت کی ہے۔

جمعیت کے ریاستی جنرل سکریٹری عبد الواحد کھتری نے آج یہاں صحافیوں سے کہا کہ مدارس کی تحقیقات اور کارروائي کرنے کا اعلان حکومت کی فاشسٹ ذہنیت کا مظہر ہے، جو قابل مذمت ہے۔ انہوں نے کہا کہ مدارس کا وجود مسلم کمیونٹی کے بنیادی مذہبی ضرورت کا حصہ ہے اور وقت وقت پر اس نظام كو بدنام کرنے کے ناپاک کوشش کی جارہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ مرکز اور ریاستی حکومتوں کی طرف سے گذشتہ برسوں میں کئی بار مدرسہ نظام کا سکیورٹی ایجنسیوں کے ذریعہ تحقیقات کرائی گئی۔ انہوں نے بتایا کہ سابق وزیر داخلہ لال کرشن اڈوانی نے پارلیمنٹ میں کہا تھا کہ کسی بھی مدرسے میں کوئی غیر قانونی سرگرمی نہیں پائی گئی۔ انہوں نے الزام لگاتے ہوئے کہا کہ مدارس کے خلاف یہ اعلان ریاستی حکومت کی دو سال کی ناکامیوں اور عوامی خواہشات کی تکمیل میں ناکامی سے توجہ ہٹانے کی ایک کوشش ہے۔

First published: Mar 12, 2016 11:34 AM IST