ہوم » نیوز » No Category

نئی پہل : چیف قاضی راجستھان کے دفتر میں عائلی معاملوں میں دی جائے گی قانونی مدد

جے پور۔ مسلم معاشرے میں شوہر اور بیوی کے خاندانی معاملات کو عدالت جانے سے پہلے ہی حل کرنے کے لئے چیف قاضی راجستھان کی جانب سے ایک نئی پہل کی جا رہی ہے ۔

  • ETV
  • Last Updated: Sep 28, 2016 08:42 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
نئی پہل : چیف قاضی راجستھان کے دفتر میں عائلی معاملوں میں دی جائے گی قانونی مدد
جے پور۔ مسلم معاشرے میں شوہر اور بیوی کے خاندانی معاملات کو عدالت جانے سے پہلے ہی حل کرنے کے لئے چیف قاضی راجستھان کی جانب سے ایک نئی پہل کی جا رہی ہے ۔

جے پور۔ مسلم معاشرے میں شوہر اور بیوی کے خاندانی معاملات کو عدالت جانے سے پہلے ہی حل کرنے کے لئے چیف قاضی راجستھان کی جانب سے ایک نئی پہل کی جا رہی ہے ۔ اس اقدام کے تحت چیف قاضی دفتر میں قانونی مدد دی جائیگی ۔ اس کے لئے باقاعدہ ایک قانونی سیل چیف قاضی راجستھان دفتر میں قائم کیا جائیگا  ۔اس دوران آپسی بات چیت اور مشاورت سے گھروں کو ٹوٹنے سے بچانے کی کوشش یہ دفتر کریگا۔ اس  طرح  ایک طرف خاندانوں کو ٹوٹنے سے روکنے کی کوشش ہوگی  تو دوسری جانب  اس کا پورا ریکارڈ بھی  رکھا جائیگا  تاکہ مستقبل میں کیس کے بارے میں مدد مل سکے۔ امید کی جا رہی ہے کہ اس سے عدالتوں میں زیرالتوا كیس میں بھی کمی آئے گی ۔


ریاست میں مسلم خاندانوں میں ازدواجی معاملات میں ہونے والے جھگڑوں اور طلاق کی روک تھام کے لئے اب چیف قاضی راجستھان کی جانب سے کوشش کی جائیگی۔  اس کے لئے چیف قاضی دفتر میں قانونی سیل قائم ہوگا۔ اس لیگل سیل میں لوگوں کو قانونی معلومات اور مدد دی جائیگی ۔ مشاورت کے ذریعے وکیل اور ریٹائرڈ جج کوشش کریں گے کہ سمجھانے بجھانے کے ذریعے عائلی امور کو عدالت میں جانے سے پہلے ہی سلجھا لیا جائے ۔

اس مشاورت کے ذریعے لیگل سیل یہ کوشش بھی کرے گا کہ ایک بار میں تین طلاق کی روک تھام ہو اور شریعت کے مطابق دی گئی طلاق کا غلط استعمال نہ کیا جائے۔

First published: Sep 28, 2016 08:42 PM IST