Choose Municipal Ward
    CLICK HERE FOR DETAILED RESULTS
    ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

    سچن پائلٹ کا چھلکا درد ، کہا : راہل گاندھی کے استعفی کے بعد اشوک گہلوت مجھے نشانہ بنانے لگے

    Rajasthan Political Crisis : سچن پائلٹ (Sachin Pilot) نے کہا کہ گاندھی کنبہ کی نظر میں گرانے کیلئے راجستھان کے کچھ لیڈران ان افواہوں کو ہوا دے رہے ہیں کہ میں بی جے پی میں شامل ہونے جارہا ہوں ۔

    • Share this:
    سچن پائلٹ کا چھلکا درد ، کہا : راہل گاندھی کے استعفی کے بعد اشوک گہلوت مجھے نشانہ بنانے لگے
    سچن پائلٹ کا چھلکا درد ، کہا : راہل گاندھی کے استعفی کے بعد اشوک گہلوت مجھے نشانہ بنانے لگے

    راجستھان میں سیاسی رسہ کشی کے درمیان سچن پائلٹ  (Sachin Pilot) نے کہا ہے کہ وہ اب بھی کانگریسی ہیں اور بھارتیہ جنتا پارٹی (BJP) میں شمولیت اختیار کرنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے ۔ بتادیں کہ منگل کو پائلٹ کو ریاست کی کانگریس اکائی کے صدر اور حکومت میں نائب وزیر اعلی کے عہدہ سے ہٹا دیا گیا ۔ وہیں اسمبلی اسپیکر سی پی جوشی نے پائلٹ اور ان کے حامی ممبران اسمبلی کو نوٹس جاری کیا ہے ۔ اس کے ساتھ ہی کانگریس نے بھی باغی لیڈروں کو نوٹس جاری کرکے دو دن میں جواب مانگا ہے ۔ پارٹی اور حکومت میں عہدہ سے ہٹائے جانے کے بعد پائلٹ نے کہا کہ راہل گاندھی کے صدر کے عہدہ سے استعفی دینے کے بعد سے ہی ان کیلئے عزت نفس کی حفاظت کرنا مشکل ہوگیا تھا۔


    جب سچن پائلٹ سے پوچھا گیا کہ کیا راہل گاندھی  (Rahul Gandhi)  سے ان کی بات ہوئی ہے تو اس کے جواب میں انہوں نے کہا کہ راہل گاندھی اب کانگریس صدر نہیں ہیں ۔ ان کے جانے کے بعد گہلوت جی اور اے آئی سی سی میں ان کے دوست میرے خلاف متحد ہوگئے اور اس کے بعد سے ہی میرے لئے عزت نفس کی حفاظت کرنا مشکل ہوگیا ۔ پائلٹ نے کہا کہ کانگریس صدر سونیا گاندھی جی اور راہل گاندھی جی سے میری کوئی بات چیت نہیں ہوئی ہے ۔ پرینکا گاندھی جی نے مجھ سے فون پر بات کی ۔ یہ ایک ذاتی بات چیت تھی ۔ یہ بات چیت کسی نتیجہ پر نہیں پہنچی ۔


    بی جے پی میں شامل ہونے کے سوال پر سچن پائلٹ نے کہا کہ راجستھان کے کچھ لیڈران ان افواہوں کو ہوا دے رہے ہیں کہ میں بی جے پی میں شامل ہونے جارہا ہوں جبکہ یہ سچ نہیں ہے ۔ دونوں اہم عہدوں سے ہٹائے جانے کے بعد پائلٹ نے پہلی مرتبہ عوامی طور پر اتنا تفصیلی تبصرہ کیا ۔ مانا جارہا ہے کہ وہ جلد ہی اگلے قدم کے بارے میں کوئی فیصلہ کریں گے ۔


    غور طلب ہے کہ اشوک گہلوت حکومت کے خلاف بغاوتی تیور اپنانے والے پائلٹ اور ان کے ساتھی لیڈروں کے خلاف کانگریس نے منگل کو سخت کارروائی کی ۔ پائلٹ کو نائب وزیر اعلی کے عہدہ کے ساتھ ساتھ پارٹی کے صدر عہدہ سے بھی ہٹا دیا گیا ۔ دو حامی وزرا کو بھی ان کے عہدہ سے ہٹادیا گیا ۔
    Published by: Imtiyaz Saqibe
    First published: Jul 15, 2020 11:34 AM IST
    corona virus btn
    corona virus btn
    Loading