ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

عالمی یوم حقوق انسانی پر چینی قونصلیٹ ممبئی کے باہر رضا اکیڈمی کا احتجاج

مرین ڈرائیو پولیس جائے وقوع پر پہنچ کر احتجاج کرتے ہوئے الحاج محمد سعید نوری اور ان کے ساتھیوں کو حراست میں لے لیا ، مگر رضا اکیڈمی کے رضا کارمسلسل نعرہ بازی کرتے رہے یہاں تک کہ پولیس وین میں بیٹھتے ہوئے بھی چین کے ظلم وستم کے خلاف نعرہ لگاتے رہے ۔

  • Share this:
عالمی یوم حقوق انسانی پر چینی قونصلیٹ ممبئی کے باہر رضا اکیڈمی کا احتجاج
عالمی یوم حقوق انسانی پر چینی قونصلیٹ ممبئی کے باہر رضا اکیڈمی کا احتجاج

ممبئی : دنیا بھر میں آج عالمی یومِ حقوق انسانی دن منایا جارہا ہے ۔ ساری دنیا کے انصاف پسند لوگ حقوق انسانی کے تحفظ کی بات تو کرتے توہیں ، مگر چین میں ہورہے ایغور مسلمانوں پر ظلم وتشدد نظر نہیں آتا ۔ رضا اکیڈمی کے سربراہ الحاج محمد سعید نوری نے رضا اکیڈمی کے ممبران کے ساتھ ممبئی چینی قونصلیٹ کے باہر زبردست احتجاج کیا ۔ رضا اکیڈمی کے رضا کاروں نے چینی ظلم وستم کے خلاف جم کر نعرہ بازی کی۔ شی جن پنگ مردہ باد ،چینی حکومت مردہ باد،چین تیری داداگری نہیں چلے گی، ہندوستان کی زمین خالی کرو ،ہم اپنے فوجیوں کا بدلہ لے کے رہیں گے ،ایغور مسلمانوں پر ظلم بند کرو ۔ رضا اکیڈمی کے سیکریٹری جنرل الحاج محمد سعید نوری نے بیان دیتے ہوئے کہا کہ آج حقوق انسانی دن کے موقع پر ہم چین کے خلاف ایغور مسلمانوں پر ہو رہے ظلم و ستم دنیا کے سامنے لانا چاہتے ہیں مگر افسوس اقوام متحدہ اور حقوق انسانی کے تحفظ کی ساری تنظیمیں خاموش ہیں ۔ کھلم کھلا چین ایغور مسلمانوں پر ظلم و ستم کے پہاڑ ڈھا رہا ہے ، جبراً جمعہ کے دن انہیں خنزیر کا گوشت کھانے پر مجبور کیا جاتا ہے ، مسلمانوں کو نماز ، روزہ، حتی کہ نام محمد رکھنے پر بھی پابندی لگا رکھی ہے ، مسلمان مردوں کو فوج گرفتار کر کے لے جاتی ہے اور ان کے عورتوں کی اجتماعی عصمت دری کی جاتی ہے ۔


انہوں نے دنیا کے امن وانصاف پسند ممالک کے سربراہان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ چینی حکومت اپنی تانا شاہی اور طاقت کے زور پر انسانیت پر بے پناہ مظالم ڈھا رہا ہے اس طرف آپ لوگوں کی توجہ مبذول کرانا چاہتا ہوں ۔ اقوام متحدہ تو خاموش تماشائی بنا ہوا ہے ، مگر آپ لوگ از راہ انسانیت چین میں ہو رہے ظلم و ستم کے خلاف آواز بلند کریں ۔ اسی درمیان مرین ڈرائیو پولیس جائے وقوع پر پہنچ کر احتجاج کرتے ہوئے الحاج محمد سعید نوری اور ان کے ساتھیوں کو حراست میں لے لیا ، مگر رضا اکیڈمی کے رضا کارمسلسل نعرہ بازی کرتے رہے یہاں تک کہ پولیس وین میں بیٹھتے ہوئے بھی چین کے ظلم وستم کے خلاف نعرہ لگاتے رہے ۔


پولیس انہیں حراست میں لے کر مرین ڈرائیو پولیس اسٹیشن لے گئی۔ پولیس اسٹیشن سب کے نام پتہ اور آدھار کارڈ نمبر لئے گئے ۔ تقریباً 45 منٹ حراست میں رکھا اور اس کے بعد سعید نوری سمیت ان کے سارے ساتھیوں کو چھوڑ دیا گیا ۔ اس احتجاج میں قاری عبدالرحمٰن ضیائی ،الحاج عمران دادانی ،مولانا عباس رضوی ،محمد ناظم خان ،حافظ جنیدعالم ،سمیت 6 لوگ تھے۔


مرین ڈرائیو پولیس اسٹیشن کے باہرنکلنے کے بعد میڈیا والوں نے الحاج محمد سعید نوری جنرل سیکریٹری رضا اکیڈمی سے سوال وجواب کئے ۔ انہوں نے کہا کہ آج رضا اکیڈمی کے اراکین 3 بجے چینی قونصلیٹ کے باہر چین میں ہو رہے ایغور مسلمانوں پر ظلم و ستم کے خلاف احتجاج کر رہے تھے ۔ چین مسلسل ہندوستان کو بھی آنکھیں دکھا رہا ہے اور انسانیت سوز مظالم ڈھا رہا ہے اس لیئے اس کے تانا شاہی کے خلاف ہم دنیا کے انصاف پسند ممالک کے لوگوں کو جگانا چاہتے ہیں اور اقوام متحدہ سمیت سارے حقوق انسانی تنظیموں کے سربراہوں سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ چین کے ظلم وستم کے خلاف سخت احتجا ج درج کرائیں ۔

انہوں نے کہا کہ پولیس نے اسی لئے ہم لوگوں کو حراست میں لیا اور ضروری لکھا پڑھی کے بعد ہم لوگوں کو گھر جانے کو کہا مگر ہم چین کے ظلم وستم کے خلاف خاموش نہیں بیٹھیں گے ۔ رضا اکیڈمی کا احتجاج ایغور مسلمانوں پر ہو رہے ظلم و ستم کے خلاف جاری رہے گا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Dec 10, 2020 09:15 PM IST