உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    آر بی آئی نے 13 بینکوں پر 27 کروڑ کا عائد کیاجرمانہ

    آر بی آئی کی جاری ریلیز کے مطابق عوامی شعبے کے بینک آف بڑودہ پر سب سے زیادہ پانچ کروڑ روپے کا جرمانہ عائد کیا گیا۔

    آر بی آئی کی جاری ریلیز کے مطابق عوامی شعبے کے بینک آف بڑودہ پر سب سے زیادہ پانچ کروڑ روپے کا جرمانہ عائد کیا گیا۔

    آر بی آئی کی جاری ریلیز کے مطابق عوامی شعبے کے بینک آف بڑودہ پر سب سے زیادہ پانچ کروڑ روپے کا جرمانہ عائد کیا گیا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      ممبئی : ریزرو بینک نے اپنے گاہکوں کو جانو (كےوائی سي) قوانین پر جاری کی گئی ہدایات کی خلاف ورزی کےمعاملے میں آج پرائیویٹ اور پبلک سیکٹر کے 13 بینکوں پر 27 کروڑ روپے کا جرمانہ عائد کیا ہے۔ ساتھ ہی اس سمت میں اسٹیٹ بینک سمیت آٹھ بینکوں کی سخت انداز میں سرزنش کرتے ہوئے ضروری اقدامات کرنے کی ہدایت دی ہے۔
      آر بی آئی کی جاری ریلیز کے مطابق عوامی شعبے کے بینک آف بڑودہ پر سب سے زیادہ پانچ کروڑ روپے کا جرمانہ عائد کیا گیا۔ اس کے علاوہ پنجاب نیشنل بینک اور سنڈیکیٹ بینک پر تین تین کروڑ، الہ آباد بینک پر دو کروڑ، کینرا بینک پر دو کروڑ، ایچ ڈی ایف سی بینک پر دو کروڑ، انڈس انڈ بینک پر دو کروڑ، اسٹیٹ بینک آف بیکانیر اینڈ جے پور پر دو کروڑ، یوکو بینک پر دو کروڑ، بینک آف انڈیا پر ایک کروڑ، کارپوریشن بینک پر ایک کروڑ، آربی ایل بینک پر ایک کروڑ اور اسٹیٹ بینک آف میسور پر ایک کروڑ روپے کا جرمانہ عائد کیا ہے۔
      آربی آئی نے کہا کہ بینکنگ ریگولیشن ایکٹ 1949 کے تحت مرکزی بینک کی طرف سے كےوائی سي قوانین پر وقت وقت پر ہدایات جاری کئے جاتے رہے ہیں۔ ان کی خلاف ورزی کے معاملے میں 13 بینکوں پر جرمانا عائد کیا گیا ہے۔
      مرکزی بینک نے ملک کے سب سے بڑے تجارتی بینک اسٹیٹ بینک سمیت آٹھ دیگر بینکوں اکسس بینک، فیڈرل بینک، آئی سی آئی سی آئی بینک، كوٹك مہندرا بینک اور اورینٹل بینک آف کامرس، اسٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک، اور یونین بینک کو كےوائی سي اور غیر ملکی کرنسی کے مینجمنٹ ایکٹ (فیما ) کی دفعات کو سختی سے لاگو کرنے کے لئے ضروری اقدامات کرنے کی ہدایت دی ہیں۔
      First published: