ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

دسہرہ کے موقع پر آر ایس ایس سربراہ موہن بھاگوت بولے۔ اس بار ہندستان کے دھکے سے سہم گیا ہے چین

چینی دراندازی کا ذکر کرتے ہوئے بھاگوت نے کہا کہ ہندستان کی حکومت، انتظامیہ، فوج اور عوام نے اس جارحیت کے سامنے کھڑے ہو کر اپنے عزم اور بہادری کا تعارف کرایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم سبھی سے دوستی چاہتے ہیں لیکن ہماری دوستی کو کمزوری نہیں سمجھنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ چین اس بار ہندستان کے دھکے سے سہم گیا ہے۔

  • Share this:
دسہرہ کے موقع پر آر ایس ایس سربراہ موہن بھاگوت بولے۔ اس بار ہندستان کے دھکے سے سہم گیا ہے چین
آر ایس ایس سربراہ موہن بھاگوت

ناگپور۔ دسہرہ کے خاص موقع پر راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (RSS) کے ہیڈکوارٹر ناگپور میں سنگھ سربراہ موہن بھاگوت (Mohan Bhagwat) نے آج شستر پوجا کی۔ پوجا کے بعد موہن بھاگوت نے آر ایس ایس کارکنان سے خطاب کیا۔ موہن بھاگوت نے کہا ' کورونا وبا کے حوالے سے چین کا رول مشتبہ رہا، یہ تو کہا ہی جا سکتا ہے۔ لیکن اپنے معاشی اسٹریٹجک زور کے سبب اس نے ہندستان کی سرحدوں پر جس طرح سے انکروچمنٹ کرنے کی کوشش کی ہے وہ پوری دنیا کے سامنے واضح ہے'۔


بھاگوت نے کہا ' کورونا وبا سے ہندستان میں نقصان ہوا ہے۔ دنیا کے دیگر ملکوں کے مقابلے میں ہمارا ہندستان بحران کی اس صورت حال میں زیادہ اچھی طرح سے کھڑا ہوا دکھائی دیتا ہے۔ ہندستان میں اس وبا کی تباہی کا اثر بقیہ ملکوں سے کم دکھائی دے رہا ہے'۔



بغیر اپیل کے خدمت میں جٹے لوگ

سنگھ سربراہ نے کہا کہ کورونا دور میں ڈاکٹر، صفائی عملہ اپنے فرائض کی انجام دہی کے لئے خدمت میں جٹ گئے۔ لوگ بغیر اپیل کے خدمت میں مصروف ہو گئے۔ لوگ اپنی تو فکر کر رہے تھے، دوسروں کی بھی فکر کر رہے تھے۔ جو متاثرین تھے وہ اپنا دکھ درد بھول کر دوسروں کی خدمت میں لگ گئے، ایسی کئی مثالیں سامنے آئی ہیں۔


چینی فوج کے سامنے ڈٹ کر کھڑا رہا ہندستان

چینی دراندازی کا ذکر کرتے ہوئے بھاگوت نے کہا کہ ہندستان کی حکومت، انتظامیہ، فوج اور عوام نے اس جارحیت کے سامنے کھڑے ہو کر اپنے عزم اور بہادری کا تعارف کرایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم سبھی سے دوستی چاہتے ہیں لیکن ہماری دوستی کو کمزوری نہیں سمجھنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ چین اس بار ہندستان کے دھکے سے سہم گیا ہے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Oct 25, 2020 11:02 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading